ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

شراب کی فروخت کی اجازت، تو عبادت گاہوں میں عبادت کی بھی اجازت دی جائے: مجلس اتحادالمسلمین رکن اسمبلی کا مطالبہ

مجلس اتحاد المسلمین کے رکن اسمبلی فاروق شاہ نے حکومت مہاراشٹر سے مطالبہ کیا ہے کہ شراب کی فروخت کی اجازت دی گئی ہے تو مذہبی عبادت گاہوں میں بھی سوشل ڈِسٹنسنگ کے ساتھ عبادت کرنےکی اجازت دی جائے۔

  • Share this:
شراب کی فروخت کی اجازت، تو عبادت گاہوں میں عبادت کی بھی اجازت دی جائے: مجلس اتحادالمسلمین رکن اسمبلی کا مطالبہ
مجلس اتحاد المسلمین کے رکن اسمبلی فاروق شاہ نےحکومت مہاراشٹر سے یہ بڑا مطالبہ کیا ہے۔

ممبئی: مہاراشٹر کے دھولیہ سے مجلس اتحاد المسلمین کے رکن اسمبلی فاروق شاہ نےحکومت مہاراشٹر سے مطالبہ کیا ہے کہ شراب کی فروخت کی اجازت دی گئی ہے تو مذہبی عبادت گاہوں میں بھی سوشل ڈِسٹنسنگ کے ساتھ عبادت کرنے کی اجازت دی جائے۔ فاروق شاہ نے وزیراعلیٰ مہاراشٹر سے تحریری طور پر مطالبہ کیا ہے۔


مجلس اتحاد المسلمین کے رکنِ اسمبلی فاروق شاہ نے وزیراعلیٰ سے تحریری مطالبے کے دوران واضح کیا کہ ملک اور ریاست میں کورونا بیماری کےخلاف احتیاطی تدابیر کے طور پر 24 مارچ 2020 سے ریاست میں لاک ڈاؤن کا اعلان کیا گیا ہے۔  اس کے نتیجے میں، ریاست میں ضروری خدمات کے علاوہ، تمام خدمات، دوکانیں، نجی و سرکاری اداروں اور دیگر سہولیات کو مکمل طور پر بندکردیا گیا ہے۔ اسی طرح مندر، مساجد اور دیگر تمام مذہبی عبادت گاہوں کو بھی  بند رکھنے کا حکم دیا ہے۔


لاک ڈاؤن کے تیسرے میں 4 مئی 2020 سے شراب کی دکانیں کھولنے کی اجازت دی گئی ہے۔ فائل فوٹو
لاک ڈاؤن کے تیسرے میں 4 مئی 2020 سے شراب کی دکانیں کھولنے کی اجازت دی گئی ہے۔ فائل فوٹو


لاک ڈاؤن کے اگلے مرحلے میں 4 مئی 2020 سے ہماری ریاست مہاراشٹر میں شراب کی دکانیں کھولنےکا حکم دیا گیا ہے۔اس فیصلے پرجس طریقہ سے عمل درآمد کیا جارہا ہے، اس پر تبصرہ کرنے سے گریزکرتے ہوئے، میں اس خط میں عاجزی سے درخواست کرتا ہوں کہ حکومت 'سوشل ڈیسٹنسنگ’ پر عمل کو برقرار رکھتے ہوئے تمام مذاہب کو اپنی اپنی عبادت گاہوں میں عبادت کرنےکی اجازت دی جائے۔ اس طرح کا ایک مطالباتی میمورنڈم شہرکے رکن اسمبلی ڈاکٹر فاروق شاہ صاحب کی جانب سے وزیر اعلیٰ اُدھو ٹھاکرے کو دِیا گیا ہے۔
First published: May 09, 2020 04:27 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading