உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دو لڑکیوں کو کار میں بٹھاکر لڑکا کرنے لگا یہ خطرناک کام، اچانک پھر ہوا یہ، جان کر اڑجائیں گے ہوش

    وائرل ہو رہا یہ ویڈیو سولن کا بتایا جا رہا ہے۔ اس میں تیز رفتار کار میں کرتب دکھانا اس شخص کو مہنگا پڑ گیا۔ بتایا جا رہا ہے کہ چلتی کار میں باہر جھولنے کی وجہ سے کار کا توازن بگڑ گیا۔

    وائرل ہو رہا یہ ویڈیو سولن کا بتایا جا رہا ہے۔ اس میں تیز رفتار کار میں کرتب دکھانا اس شخص کو مہنگا پڑ گیا۔ بتایا جا رہا ہے کہ چلتی کار میں باہر جھولنے کی وجہ سے کار کا توازن بگڑ گیا۔

    وائرل ہو رہا یہ ویڈیو سولن کا بتایا جا رہا ہے۔ اس میں تیز رفتار کار میں کرتب دکھانا اس شخص کو مہنگا پڑ گیا۔ بتایا جا رہا ہے کہ چلتی کار میں باہر جھولنے کی وجہ سے کار کا توازن بگڑ گیا۔

    • Share this:
      حادثے تو کبھی بھی ہو سکتے ہیں۔ ان پر انسانوں کا بس نہیں چلتا۔ لیکن ان حادثات کو کم کرنے کے لیے ضروری ہے کہ انسان توجہ دے۔ اگر تھوڑا سا بھی دھیان جائے تو ان حادثات سے بچا جا سکتا ہے۔ ایسے کئی حادثات کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر شیئر کی جاتی ہیں جن میں غفلت کے باعث بڑے حادثات ہوتے دیکھے گئے ہیں۔ حال ہی میں اس طرح کی لاپرواہی کی وجہ سے پیش آنے والے ایک سڑک حادثے کا ویڈیو کافی وائرل ہوا تھا۔

      تیزی سے وائرل ہونے والی اس ویڈیو میں سفید رنگ کی کار بے قابو ہو کر ڈیوائیڈر سے ٹکراتی نظر آئی۔ حادثہ اس میں بیٹھے شخص کی وجہ سے پیش آیا۔ دراصل، ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ گاڑی کی ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھا شخص دروازہ کھول کر باہر لٹک رہا تھا۔ وہ گاڑی سے باہر  سڑک پر اپنا جسم  نکال کر جھول رہا تھا۔ اس دوران اچانک کار نے اپنا کنٹرول کھو دیا  اور ڈیوائیڈر سے ٹکرا گئی۔



      Haunted Railway Stations: دنیا کے 10بھوتیا ریلوے اسٹیشن، جن کی کہانی آپ کو کردے گی حیران

      Jet Airways کی تیاری مکمل، اب پائلٹوں کی بھرتی کررہی ہے کمپنی، جانئے کب سے شروع ہوگی پرواز

      وائرل ہو رہا یہ ویڈیو سولن کا بتایا جا رہا ہے۔ اس میں تیز رفتار کار میں کرتب دکھانا اس شخص کو مہنگا پڑ گیا۔ بتایا جا رہا ہے کہ چلتی کار میں باہر جھولنے کی وجہ سے کار کا توازن بگڑ گیا۔ اسے سنبھالنے کے لیے ڈرائیور نے کار کو ڈیوائیڈر پر چڑھا دیا۔ یہ دوسری طرف کھڑی گاڑیوں سے ٹکراتی چلی گئی۔ کار  چندی گڑھ کی بتائی جا رہی ہے۔ واقعہ کے وقت کار کی پچھلی سیٹ پر دو لڑکیاں بھی بیٹھی تھیں۔ اس میں سبھی کو معمولی چوٹیں آئی ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: