ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

یوگی آدتیہ ناتھ کے بعد اکھاڑا پریشد نے بھی کر دیا حیدرآباد کے نام بدلنے کا مطالبہ

یو پی کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی طرف سے حیدرآباد کا نام بدل کر بھاگیہ نگر کرنے کے بیان پراب سیاست مذید تیز ہوگئی ہے۔ شہروں کے نام بدلنے کی اس سیاست میں اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد بھی کود گئی ہے۔ اکھاڑا پریشد نے حیدرآباد کا نام بدلنے کے یوگی آدتیہ ناتھ کے حالیہ بیان کی پرزور حمایت کرتے ہوئے حیدرآباد کانام بدل کر بھاگیہ نگر کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

  • Share this:
یوگی آدتیہ ناتھ کے بعد اکھاڑا پریشد نے بھی کر دیا حیدرآباد کے نام بدلنے کا مطالبہ
اکھاڑا پریشد نے بھی کر دیا حیدرآباد کے نام بدلنے کا مطالبہ

الہ آباد: یو پی کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی طرف سے حیدرآباد کا نام بدل کر بھاگیہ نگر کرنے کے بیان پراب سیاست مذید تیز ہوگئی ہے۔ شہروں کے نام بدلنے کی اس سیاست میں اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد بھی کود گئی ہے۔ اکھاڑا پریشد نے حیدرآباد کا نام بدلنے کے یوگی آدتیہ ناتھ کے حالیہ بیان کی پرزور حمایت کرتے ہوئے  حیدرآباد کانام  بدل کر بھاگیہ نگر کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد کے صدر مہنت نریندر گری کا کہنا ہے کہ یوگی حکومت نے اسی  طرح الہ آباد کا نام بدل کر پریاگ راج اور فیض آباد کا نام بدل کر ایودھیا کیا تھا۔ اب اسی  پالیسی پر عمل کرتے ہوئے حید ر آباد کا بھی  نام  بدل کربھاگیہ نگر کیا جانا چاہئے۔


یو پی کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی طرف سے حیدرآباد کا نام بدل کر بھاگیہ نگر کرنے کے بیان پراب سیاست مذید تیز ہوگئی ہے۔ شہروں کے نام بدلنے کی اس سیاست میں اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد بھی کود گئی ہے۔
یو پی کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی طرف سے حیدرآباد کا نام بدل کر بھاگیہ نگر کرنے کے بیان پراب سیاست مذید تیز ہوگئی ہے۔ شہروں کے نام بدلنے کی اس سیاست میں اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد بھی کود گئی ہے۔


مہنت نریندر گری کا دعویٰ ہے کہ ملک کے قدیم شہروں کے ناموں کو مغلوں کے زمانے میں بدل دیا گیا تھا، لہٰذا اب وقت آگیا ہے کہ مغلوں  کے دیئے گئے ناموں  کو ختم کرکے پرانے ناموں کو از سر نو بحال کیا جائے۔ واضح رہے کہ یوگی آدتیہ ناتھ کے اقتدار میں آنے کے بعد اکھاڑا پریشد نے الہ آباد  اور فیض آباد کا نام بدلنے کا مطالبہ کیا تھا۔ یوگی حکومت نے اکھاڑا پریشد کے اس مطالبے کو فوری طور سے تسلیم کرتے ہوئے الہ آباد کا نام  بدل کر پریاگ راج اور فیض آباد کا نام ایودھیا کرنے کا اعلان کیا تھا۔ جلد ہی  یوگی حکومت نے دونوں تاریخی شہروں الہ آباد اور فیض آباد کا  نام  بدل کر پریاگ راج کرنے سے متعلق آرڈینینس جاری کر دیا تھا۔


یوگی حکومت نے دونوں تاریخی شہروں الہ آباد اور فیض آباد کا نام بدل کر پریاگ راج کرنے سے متعلق آرڈینینس جاری کر دیا تھا۔حالانکہ یوگی حکومت کے اس فیصلے کو بعض سماجی تنظیموں کی جانب سے الہ آباد ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں چیلنج کیا گیا ہے۔
یوگی حکومت نے دونوں تاریخی شہروں الہ آباد اور فیض آباد کا نام بدل کر پریاگ راج کرنے سے متعلق آرڈینینس جاری کر دیا تھا۔حالانکہ یوگی حکومت کے اس فیصلے کو بعض سماجی تنظیموں کی جانب سے الہ آباد ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں چیلنج کیا گیا ہے۔


حالانکہ یوگی حکومت کے اس فیصلے کو بعض سماجی تنظیموں کی جانب سے الہ آباد ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں چیلنج کیا گیا ہے، لیکن ابھی تک اس معاملے  میں عدالت کے حتمی فیصلے کا انتظار ہے۔ اس وقت ریاست کے بستی  شہر، غازی پور، شاہجہاں پور اور غازی آباد  جیسے شہروں کے نام بدلنے کی بات بھی کہی جا رہی ہے۔ شہر بدلنے کی اس سیاست میں اکھاڑا پریشد یوگی آدتیہ ناتھ کی پوری حمایت کرتا نظرآ رہا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 30, 2020 11:55 PM IST