ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اکھاڑا پریشد نے وزیراعظم مودی کو خط لکھ کر مندروں کوکھولنےکا کیا مطالبہ، شراب کی دوکانیں کھل سکتی ہیں تو مندر کیوں نہیں؟

اکھاڑا پریشد نے پی ایم مودی سے یہ بھی مطالبہ کیا ہےکہ جس طرح لاک ڈاؤن کے دوران شراب کی دوکانیں کھول دی گئیں، کیا مندروں کو عوام کے لئے نہیں کھو لا جا سکتا؟

  • Share this:
اکھاڑا پریشد نے وزیراعظم مودی کو خط لکھ کر مندروں کوکھولنےکا کیا مطالبہ، شراب کی دوکانیں کھل سکتی ہیں تو مندر کیوں نہیں؟
اکھاڑا پریشد نے وزیراعظم مودی کو خط لکھ کر مندروں کوکھولنےکا کیا مطالبہ

الہ آباد: سادھو سنتوں کی نمائندہ تنظیم اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد نے ملک کے بڑے مٹھوں اور مندروں کو عوام کے لئے  فوری طور سے کھولنےکا مطالبہ کیا ہے۔ اکھاڑا پریشد نے وزیر اعظم نریندر مودی کو باقاعدہ خط لکھ کر مندروں کو کھولنے کی درخواست کی ہے۔ اکھاڑا پریشد کا کہنا ہے کہ دو مہینے کے طویل لاک ڈاؤن سے مٹھ اور  مندروں کو بھاری معاشی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔


اکھاڑا پریشد کا کہنا ہےکہ فنڈ کی شدید قلت کی وجہ سے مندروں کے اسٹاف کو تنخواہیں نہیں مل پا رہی ہیں اور مندروں کے رکھ رکھاؤ میں سنگین مشکلات کا سامنا ہے۔ اکھاڑا پریشد نے پی ایم مودی سے یہ بھی مطالبہ کیا ہےکہ جس طرح لاک ڈاؤن کے دوران شراب کی دوکانیں  کھول دی گئیں، کیا مندروں کو عوام کے لئے نہیں کھو لا جا سکتا؟ دوکانیں کھولنے کی اجازت  کے ساتھ ساتھ اب مندروں کے دروازے بھی عقیدت مندوں کے لئے کھولے جانے چاہئے۔


 مہنت نریندرگری نے مزید کہا ہےکہ ملک کے بڑے مندروں کے اسٹاف کی تنخواہیں گذشتہ دو ماہ سے رکی ہوئی ہیں۔

مہنت نریندرگری نے مزید کہا ہےکہ ملک کے بڑے مندروں کے اسٹاف کی تنخواہیں گذشتہ دو ماہ سے رکی ہوئی ہیں۔


اکھل بھارتیہ اکھاڑا پریشد نے پی ایم مودی کو لکھے خط میں اس بات کا دعویٰ کیا ہے کہ کورونا وائرس کا زور اب رفتہ رفتہ کمزرو ہو رہا ہے۔ ملک میں  روز مرہ کی زندگی بھی معمول پر آ رہی ہے۔خط میں کہا گیا ہے کہ جب ملک میں دیگر کا رو باری ادارے کھولےجا رہے ہیں تو مندروں کو بھی کھولنے کے بارے میں سنجیدگی سے غور ہونا چاہئے۔ اکھاڑا پریشد کے صدر مہنت نریندر گری کا کہنا ہے کہ اکھاڑا پریشد ملک کے سادھو سنتوں کے گیارہ اکھاڑوں کی نمائندہ تنظیم ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ اکھاڑا پریشد سے وابستہ تمام گیارہ اکھاڑوں کا متفقہ فیصلہ ہےکہ مٹھ اور مندروں میں روز مرہ کی  مذہبی سر گرمیوں کا آغاز ہونا چاہئے۔

مہنت نریندرگری نے مزید کہا ہےکہ ملک کے بڑے مندروں کے اسٹاف کی تنخواہیں گذشتہ دو ماہ سے رکی ہوئی ہیں۔ ان کا کہنا ہےکہ مندروں کے بند رہنے سے فنڈ کی آمد میں کافی کمی  واقع ہو ئی  ہے، جس کہ وجہ سے مندروں کا خرچ چلانا مشکل ہو گیا ہے۔ اکھاڑا پریشد نے خط میں اس بات کی بھی یقین دہانی کرائی ہے کہ  عقیدت مندوں کے لئے مندروں کو کھونے کی صورت میں  وزارت صحت کی گائڈ لائن اور سماجی فاصلوں کے اصول پر سختی کے ساتھ  عمل  کیا جائے گا۔
First published: May 21, 2020 06:41 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading