میڈیکل چھوڑ کر آرٹس کو کیا منتخب ، اب عرشی نے انگلش لٹریچر میں حاصل کیا گولڈ میڈل ، بنی ایک مثال

احساس کمتری ،خراب مالی حالت ودیگر وجوہات کی بنیاد پر مسلم لڑکیوں میں تعلیمی پسماندگی کا گراف کچھ زیادہ ہی پایا جاتا ہے۔

Mar 02, 2018 08:43 PM IST | Updated on: Mar 02, 2018 08:43 PM IST
میڈیکل چھوڑ کر آرٹس کو کیا منتخب ، اب عرشی نے انگلش لٹریچر میں حاصل کیا گولڈ میڈل ، بنی ایک مثال

آکولہ : احساس کمتری ،خراب مالی حالت ودیگر وجوہات کی بنیاد پر مسلم لڑکیوں میں تعلیمی پسماندگی کا گراف کچھ زیادہ ہی پایا جاتا ہے۔ تاہم آکولہ کی عرشی دوکاڑیاں نامی مسلم بچی نے امراوتی یونیورسٹی میں گولڈ میڈل حاصل کر کے لڑکیوں کیلئے ایک نئی مثال قائم کی ہے۔ عرشی کو گاڑگے بابا یونیورسٹی میں انگلش لٹریچر میں سب سے زیادہ نمبرات حاصل کرنے کیلئے گولڈ میڈل سے نوازا گیا ہے۔

ایم بی بی ایس میں نمبر ملنے کے باوجود عرشی نے آرٹس میں داخلہ لیا تھا۔ اب عرشی سائیکلوجی سے ایم اے کر اپنا کرئیر بنانا چاہتی ہے۔ عرشی بطور مصنف بھی اپنی شناخت بنانا چاہتی ہے۔ ملک کے ناموررسالوں اورآن لائین کوئیز میں عرشی اپنی موجودگی درج کراچکی ہے ، جس کیلئے عرشی کو یوور کوٹ نامی ویب سائٹ کی جانب سے اعزاز سے بھی نوازا جاچکا ہے۔ عرشی مسلم لڑکیوں کو بھی تعلیم کے میدان میں اپنے جوہر دکھانے اپیل کررہی ہیں ۔

قابل ذکر ہے کہ عرشی کے والد پیشہ سے ایک وکیل ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ عرشی اپنے پسند کے شعبہ میں تعلیم حاصل کرے اور اپنا مستقبل سنوارے۔ لیکن اسلامی تعلیمات کو بھی اپنی زندگی میں عملی نمونہ بنائے۔

Loading...

Loading...