آپریشن تھئیٹر میں ہوا کچھ ایسا کہ 13 مریضوں کو چھوڑ کر بھاگے ڈاکٹرس ، جان کر رہ جائیں گے حیران

آپریشن تھئیٹر میں علاج کے دوران اچانک ایسا واقعہ پیش آگیا کہ ڈاکٹرس سرجری چھوڑ کر جائے واقعہ سے فرار ہوگئے ۔

Nov 17, 2019 06:48 PM IST | Updated on: Nov 17, 2019 06:48 PM IST
آپریشن تھئیٹر میں ہوا کچھ ایسا کہ 13 مریضوں کو چھوڑ کر بھاگے ڈاکٹرس ، جان کر رہ جائیں گے حیران

علامتی تصویر

اترپردیش کے علی گڑھ میں ایک چونکانے والا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ آپریشن تھئیٹر میں علاج کے دوران اچانک ایسا واقعہ پیش آگیا کہ ڈاکٹرس سرجری چھوڑ کر جائے واقعہ سے فرار ہوگئے ، جس کی وجہ سے مریضوں کی حالت مزید خراب ہوگئی ۔ فوری طور پر علاج کیلئے دوسری جگہ کے ڈاکٹرس کو بلایا گیا اور اس کے بعد مریضوں کو بہتر علاج فراہم کرایا جاسکا ۔

اطلاعات کے مطابق یہ واقعہ علی گڑھ کے چھڑا کمیونیٹی ہیلتھ سینٹر میں پیش آیا ۔ یہاں نس بندی کیمپ لگایا گیا تھا ۔ پورے ضلع کی تقریبا 31 خواتین نے نس بندی کیلئے رجسٹریشن کرایا تھا ۔ بتایا جارہا ہے کہ پہلے مرحلہ میں ہفتہ کو 13 خواتین کو نس بندی کیلئے اسپتال میں بھرتی کرایا گیا تھا ۔ اس دوران ڈاکٹروں کی ٹیم نے سبھی خواتین کو بیہوش کرکے آپریشن کی کارروائی شروع کردی ، لیکن آپریشن کے دوران اچانک ایک خاتون کی طبیعت خراب ہوگئی ، جس سے ڈاکٹروں کے ہوش اڑگئے اور وہ فوری طور پر وہاں سے فرار ہوگئے ۔

Loading...

جب ضلع ہیڈکوارٹر میں سی ایم او کو اس واقعہ کی اطلاع ملی تو انہوں نے فوری طور پر نس بندی آپریشن کیلئے ضلع ہیڈکوارٹر سے ڈاکٹروں کی ایک دوسری ٹیم کمیونیٹی ہیلتھ سینٹر کیلئے روانہ کردی ، جہاں ٹیم نے خواتین کو دوبارہ بیہوش کرکے ان کی نس بندی کی ۔ اس درمیان خواین کے اہل خانہ نے کمیونیٹی ہیلتھ سینٹر پر ڈاکٹروں کی لاپروائی کو لے کر جم کر ہنگامہ کیا ۔

جائے واقعہ پر پہنچے پولیس اہلکاروں نے مشتعل لوگوں کو کسی طرح مطمئن کیا اور ان کے غصہ کو ٹھنڈہ کیا ۔ وہیں دوسری طرف سی ایم او ایم ایل اگروال نے آپریشن کے دوران میشن خراب ہوجانے کا اعتراف کیا ہے ۔

Loading...