உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Aligarh Loudspeaker Issue:ہندو مہاسبھا نے سناتن بھون پر لگایا لاؤڈاسپیکر، کہا- پانچوں وقت چلے گا ہنومان چالیسہ

    اذان کی مخالفت میں ہندو مہاسبھا نے اٹھایا یہ قدم۔

    اذان کی مخالفت میں ہندو مہاسبھا نے اٹھایا یہ قدم۔

    قومی ترجمان اشوک پانڈے نے کہا کہ ہم کسی تنازع میں نہیں ہیں۔ بچپن سے دیکھتے آئے ہیں کہ جب صبح ہوتی تھی تو مندروں سے بھجن کی آوازیں آتی تھیں۔ وقتاً فوقتاً لوگوں نے اپنی عادت بدل لی ہے۔

    • Share this:
      Aligarh Loudspeaker Issue:ہندو مہاسبھا بھی اذان کے خلاف احتجاج میں لاؤڈ اسپیکر پر ہنومان چالیسہ تنازعہ میں شامل ہو گئی ہے۔ آج ہندو مہاسبھا کے قومی سکریٹری مہامنڈلیشور اناپورنا بھارتی اور قومی ترجمان اشوک پانڈے نے حامیوں کے ساتھ اپنے سناتن بھون کے دفتر میں لاؤڈ اسپیکر لگا کر ہنومان چالیسہ بجایا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      لڑکیوں کی شادی کی عمر بڑھانے کا بل، پارلیمانی کمیٹی کو اب تک مل چکے ہیں 95,000 ای میل


      مہامنڈیلشور انناپورنا بھارتی نے کہی متنازعہ بات
      ہندو مہاسبھا کی قومی سکریٹری مہامنڈیلشور اناپورنا بھارتی عرف ڈاکٹر پوجا شکون پانڈے نے کہا کہ آپ لاؤڈ اسپیکر کے معاملے کو دیکھ رہے ہیں۔ جس طریقے سے ایک مخصوص کمیونٹی کی طرف سے آئینی قواعد کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔ اذان ہمارے کانوں کو آلودہ کر رہی ہے۔ ہمیں پریشان کر رہی ہے. ایک تو ہماری برادری ہے کہ ہم قوانین کی تعمیل میں خاموش بیٹھے ہیں۔ آج ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ متعصبانہ رویہ قابل برداشت نہیں۔ ہم ہر پانچ گھنٹے بعد اپنی ہنومان چالیسہ بھی بجائیں گے۔ عقیدت کے بھجن بجائے جائیں گے۔ اس لیے ہم نے لاؤڈ اسپیکر لگائے ہیں۔ اب ہماری ذہنیت بھی ناپاک ہوتی ہے۔ صبح سیر کے لیے جاتی ہوں تو آواز کو لے کر ذاتی مسئلہ ہوتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      PM مودی آج گجرات کے موربی میں کریں گے ہنومان کے108 فٹ اونچے مجسمے کی نقاب کشائی




      ترجمان اشوک پانڈے نے کہی یہ بات
      ساتھ ہی قومی ترجمان اشوک پانڈے نے کہا کہ ہم کسی تنازع میں نہیں ہیں۔ بچپن سے دیکھتے آئے ہیں کہ جب صبح ہوتی تھی تو مندروں سے بھجن کی آوازیں آتی تھیں۔ وقتاً فوقتاً لوگوں نے اپنی عادت بدل لی ہے جس کا نتیجہ یہ ہے کہ ہم صبح کے وقت آلودہ ہوا اور اذان کی آلودہ آواز سنتے ہیں۔ یقیناً ہم چاہتے ہیں کہ اذان کی آواز بند کی جائے اور ہم نے تمام کارکنوں سے درخواست کی ہے کہ ہمارے تمام شری رام بھونوں میں لاؤڈ اسپیکر ہوں گے اور ہنومان چالیسہ پڑھایا جائے گا اور منتر پڑھے جائیں گے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: