ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

ممتا بنرجی کی فکر میں اضافہ کریں گے اویسی، بنگال الیکشن میں جیت کے لئے بہار کے اراکین اسمبلی کو میدان میں اتارا

West Bengal Assembly Election 2021: اے آئی ایم آئی ایم صدر اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) نے اتوار کو پارٹی کے 8 لیڈروں کو مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کے لئے آبزرور مقرر کیا۔

  • Share this:
ممتا بنرجی کی فکر میں اضافہ کریں گے اویسی، بنگال الیکشن میں جیت کے لئے بہار کے اراکین اسمبلی کو میدان میں اتارا
ممتا بنرجی کی فکر میں اضافہ کریں گے اویسی، بنگال الیکشن میں جیت کے لئے بہار کے اراکین اسمبلی کو میدان میں اتارا

نئی دہلی: مغربی بنگال اسمبلی انتخابات 2021 (West Bengal Assembly Election 2021) کے لئے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اور حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی (Asaduddin Owaisi) نے پارٹی کے 8 لیڈروں کو آبزرور مقرر کیا ہے۔ اے آئی ایم ائی ایم (AIMIM) کی طرف سے جن لیڈروں کو ذمہ داری دی گئی ہے، ان میں تلنگانہ کے نام پلی سے رکن اسمبلی ظفر حسین معراج اور قانون ساز کونسل کے رکن مرزا ریاض الحسن ایفندی کو کولکاتا اور جنوبی بنگال کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ مرشدآباد، بیربھوم اور ناڈیا کے لئے بہار کے امور سے رکن اسمبلی اور ریاستی صدر اخترالایمان، بہار کے اے آئی ایم آئی ایم یوتھ صدر عادل حسین کو آبزرور نامزد کیا گیا ہے۔


وہیں شمالی، جنوبی دناج پور، کوچ بہار اور علی پور دوار کے لئے بہار کے جوکی ہاٹ سے رکن اسمبلی شاہنواز عالم، بہار کے کوچا دھمان سے پارٹی رکن اسمبلی حاجی محمد اظہر آصفی کو آبزرور کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ مالدہ علاقے کے لئے بہار کے بینسی سے اے آئی ایم آئی ایم رکن اسمبلی سید رکن الدین احمد اور بہار کے بہادر گنج سے رکن اسمبلی انظر نعیمی کو آبزرور مقرر کیا گیا ہے۔ اسدالدین اویسی کی پارٹی کی طرف سے نامزد کئے گئے اراکین اسمبلی کو دیکھیں، تو زیادہ تر ان کی پارٹی کے حال ہی میں منتخب اراکین اسمبلی ہیں۔


مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میں اسدالدین اویسی کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم جتنی سرگرم ہوگی، اتنا ہی ممتا بنرجی فکر مند ہوسکتی ہیں۔
مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میں اسدالدین اویسی کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم جتنی سرگرم ہوگی، اتنا ہی ممتا بنرجی فکر مند ہوسکتی ہیں۔


مجلس اتحاد المسلمین نے 2020 میں ہوئے بہار اسمبلی انتخابات میں پہلی بار شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پانچ سیٹوں پر جیت حاصل کی اور ہندی پٹی کے ریاست میں شاندار موجودگی درج کرائی۔ بہار میں ملی کامیابی کے بعد اسدالدین اویسی نے مغربی بنگال، آسام اور اترپردیش جیسے سیاسی طور پر اہم ریاستوں میں بھی الیکشن لڑنے کا اعلان کیا ہے۔ مغربی بنگال میں 2021 کی گرمیوں کی شروعات میں اسمبلی انتخابات ہوں گے اور اویسی کی نظر ریاست کے مسلم رائے دہندگان پر ہے، جہاں ان کا ووٹ شیئر 30 فیصد کے قریب ہے۔

2011 کے اسمبلی انتخابات میں لیفٹ کے اقتدار کو زمین دوز کرتے ہوئے اقتدار میں وراجمان ہوئی ممتا بنرجی کے خلاف بی جے پی نے مورچہ کھول رکھا ہے۔ ممتا پر 2016 کے اسمبلی انتخابات نتائج کو دہرانے کا چیلنج ہے، لیکن ان کی پارٹی کے بڑے لیڈروں نے پالا بدل کر بی جے پی کا ہاتھ تھامنا شروع کردیا ہے۔ مکل رائے، شوبھندو ادھیکاری کے بعد ترنمول کانگریس سے بی جے پی میں آرہے لیڈروں کے ضمن میں گزشتہ ہفتہ کو ترنمول کانگریس کے 5 لیڈروں نے دہلی میں امت شاہ سے ملاقات کرکے بی جے پی کا دامن تھاما۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jan 31, 2021 11:26 PM IST