உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کورونا کی ہدایات کے نام پر محرم اور عزاداری کی توہین ناقابلِ برداشت: آل انڈیا شیعہ حسینی کونسل

    کورونا کی ہدایات کے نام پر محرم اور عزاداری کی توہین ناقابلِ برداشت: آل انڈیا شیعہ حسینی کونسل

    کورونا کی ہدایات کے نام پر محرم اور عزاداری کی توہین ناقابلِ برداشت: آل انڈیا شیعہ حسینی کونسل

    روح الملت کے مطابق کورونا کی گائڈ لائن کے نام پر اتر پردیش کے ڈی جی پی کے تحریری بیان اور ہدایت نامے نے صرف اہل تشیع حضرات کے جذبات کو ہی مشتعل و مجروح نہیں کیا ہے بلکہ محرم کی تقدیس اور کربلا کی روح پر بھی ضرب کاری کی ہے۔

    • Share this:
    لکھنو: آل انڈیا شیعہ حسینی کونسل کے صدر معروف دانشور اور عالم دین علی ناصر سعید عبقاتی عرف آغا روحی نے اتر پردیش کے بدلتے منظر نامے کے حوالے سے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ اگر عوام کو تحفظ فراہم کرنے اور ریاست میں قیامِ امن کے لیے متعین کئے گئے افسران ہی غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کریں گے، تو ملک کے امن پسند اور جمہوریت میں یقین رکھنے والے لوگوں کے کئے مسائل مزید ابتر و پیچیدہ ہوجائیں گے۔

    روح الملت کے مطابق کورونا کی گائڈ لائن کے نام پر اتر پردیش کے ڈی جی پی کے تحریری بیان اور ہدایت نامے نے صرف اہل تشیع حضرات کے جذبات کو ہی مشتعل و مجروح نہیں کیا ہے بلکہ محرم کی تقدیس اور کربلا کی روح پر بھی ضرب کاری کی ہے۔ ہندوستان کی سب سے بڑی ریاست کے ڈائرکٹر جنرل پولس کی زبان اور طرز تحریر نے ان تمام لوگوں کو مایوس کیا ہے جو ملک اور بالخصوص اتر پردیش میں شیعہ سنی اور ہندو مسلم اتحاد کے حامی ہیں۔ اور اس اتحاد و اتفاق کے لیے اپنے جائز حقوق جذبوں اور خواہشوں کی قربانیاں بھی پیش کرتے رہے ہیں۔

    واضح رہے کہ اتر پردیش کے ڈی جی پی کی جانب سے کورونا کے نام پر جاری کی گئی اڈوائزری میں محرم کے دوران ادا کیے جانے والے عوامل کے تعلق سے جو کچھ تحریر کیا گیا تھا، اس کو لے کر علماء کرام اور عوام کی جانب سے سخت رد عمل کا اظہار کیا گیا ہے۔ کچھ علماء نے مطالبہ کیا ہے کہ ڈی جی پی کو معافی مانگنی چاہئے جبکہ کچھ لوگوں نے یہ الزام بھی عائد کیا کہ آئندہ الیکشن  میں مفاد حاصل کرنےکے لئے حکومت اپنی پرانی حکمت عملی کی طرف لوٹ رہی ہے اور ڈی جی پی کا یہ ہدایت نامہ اسی  منصوبہ بند حکمت عملی کا ایک شاخسانہ ہے۔

    مولانا آغا روحی کہتے ہیں کہ اقلیتوں میں اقلیت شیعہ مسلک کے لوگوں نے ہمیشہ آئینی اور دستوری قدروں کو ملحوظ رکھا ہے۔
    مولانا آغا روحی کہتے ہیں کہ اقلیتوں میں اقلیت شیعہ مسلک کے لوگوں نے ہمیشہ آئینی اور دستوری قدروں کو ملحوظ رکھا ہے۔


    مولانا آغا روحی کہتے ہیں کہ اقلیتوں میں اقلیت شیعہ مسلک کے لوگوں نے ہمیشہ آئینی اور دستوری قدروں کو ملحوظ رکھا ہے۔ گزشتہ دو سال کے عرصے میں ایام عزا کے دوران کورونا  اور لاک ڈاون سے متعلقہ ہدایات پر مکمل طور پر عمل کیا ہے اپنی اور برادران وطن کی زندگیوں کو محفوظ رکھنے اور حکومت و انتظامیہ کا ہر ممکن تعاون کرنے کی کوشش کی ہے اس کے باوجود بھی اگر اس انداز کے ہدایت نامے اور ورغلانے والے جملے سامنے آئیں گے  تو سوائے افسوس و مذمت کے کیا کیا جاسکتا ہے۔مولانا آغا روحی نے اتر پردیش کے ڈی جی پی مہودے کو  جاری کی گئی اڈوائزری کی زبان پر غور کرکے اسی صحیح کرنے اور محرم کے تعلق سے غلط فہمیاں دور کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

    مولانا سید عباس ناصر سعید عبقاتی نے بھی لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ حالات کی نزاکت اور کربلا کے آفاقی پیغام اور مشن کو سمجھتے ہوئے صبر و تحمل کا مظاہرہ کریں۔
    مولانا سید عباس ناصر سعید عبقاتی نے بھی لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ حالات کی نزاکت اور کربلا کے آفاقی پیغام اور مشن کو سمجھتے ہوئے صبر و تحمل کا مظاہرہ کریں۔


    اس موقع پر نو جوان عالم مولانا سید عباس ناصر سعید عبقاتی نے بھی لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ حالات کی نزاکت اور کربلا کے آفاقی پیغام اور مشن کو سمجھتے ہوئے صبر و تحمل کا مظاہرہ کریں۔ عزاداروں اورعزاداری  کے خلاف ایسے عوامل ہمیشہ سے ہوتے رہے ہیں لیکن عقیدت مندانِ اہل بیت نے نہ کبھی اپنی مذہبی قدروں سے سمجھوتا کیا ہے اور نہ اپنے ملک کے آئین و دستور کے خلاف کوئی قدم اٹھایا ہے ۔۔قومی امکان ہے کہ روح المت کے بیان کے بعد انتظامیہ کے اعلیٰ افسران و حکمران کی جانب سے اس باب میں مثبت پیش رفت کی جائے گی۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: