کراس ووٹنگ کرنے والے الپیش ٹھاکراوردھول سنگھ بی جے پی میں شامل

گجرات بی جے پی کےصدرجیتوواگھانی نےدونوں لیڈروں کوپارٹی کی رکنیت دے کرانہیں شامل کیا۔ بھارت ماتا کی جے اوروندے ماترم کا نعرہ لگاتے ہوئے الپیش ٹھاکرنے بی جے پی کی رکنیت حاصل کی۔

Jul 18, 2019 11:16 PM IST | Updated on: Jul 18, 2019 11:16 PM IST
کراس ووٹنگ کرنے والے الپیش ٹھاکراوردھول سنگھ بی جے پی میں شامل

الپیش ٹھاکرکو ریاستی صدر جیتوبھائی واگھانی نے بی جے پی کی رکنیت دلائی۔

گاندھی نگر: گجرات میں کانگریس کے سابق ایم ایل اے اور سابق قومی سکریٹری اوربہار معاملوں کے پارٹی انچارچ رہے الپیش ٹھاکر آج برسراقتدار بی جے پی میں شامل ہوگئے۔

ان کے ساتھ ہی بغاوت کرکے کانگریس چھوڑنے والے ایک دیگر سابق ایم ایل اے دھول سنگھ جھالا بھی بی جے پی کے ریاستی ہیڈ کوارٹرشری کمل میں برسراقتدار پارٹی میں شامل ہوگئے۔

گجرات بی جے پی کے صدر جیتو واگھانی نے دونوں لیڈروں کو پارٹی کی رکنیت دے کر انہیں شامل کیا۔ الپیش ٹھاکر سال 2017 کے اکتوبر میں راہل گاندھی کے سامنے کانگریس میں شامل ہوئے تھے۔ وہ رادھن پورحلقہ سے کانگریس کے ٹکٹ پر ایم ایل اے منتخب ہوئے تھے۔  دھول سنگھ جھالا بائڈ حلقہ سے ایم ایل اے تھے۔

Loading...

گزشتہ 10 اپریل کو انہوں نے کانگریس پرانہیں اوران کے ٹھاکر برادری کو دھوکہ دینے کا الزام لگاتے ہوئے سبھی عہدوں سے استعفیٰ دے دیا تھا ۔ لیکن اس کےباوجود وہ ایم ایل اے کےعہدہ پرتھے۔5 جولائی کو راجیہ سبھا کی دوسیٹوں پرہوئے ضمنی انتخابات میں بی جے پی کے حق میں کراس ووٹنگ کرنے کےبعد الپیش اورجھالا نے اسمبلی کی رکنیت سے استعفی دے دیا تھا۔ الپیش چھتریہ ٹھاکرسینا نامی تنظیم کےصدربھی ہیں جبکہ جھالا بھی اس سے منسلک ہیں۔ تنظیم کی کورکمیٹی نےگزشتہ 15 جولائی کو ہی دونوں کو بی جے پی میں شامل ہونےکی تجویزپراپنی رضامندی کا اظہار کیا تھا۔

Loading...