உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایمیزون کےعہدیدارتعاون نہ کرنے پرکارروائی کاکریں سامنا! ایم پی وزیرداخلہ نروتم مشراکا بیان

    تصویر: @drnarottammisra

    تصویر: @drnarottammisra

    مدھیہ پردیش کے بھنڈ میں پولیس نے گزشتہ ہفتے کہا کہ انہوں نے منشیات فروشوں کے ایک گروہ کا پردہ فاش کیا، جو وشاکپٹنم سے ایمیزون کے ذریعے گانجہ پہنچاتے تھے اور نقد ادائیگی کرتے تھے۔

    • Share this:
      مدھیہ پردیش حکومت نے جمعرات کو ایمیزون (Amazon) کے منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزیکٹیو آفیسر کے خلاف کارروائی کا انتباہ دیا ہے کہ اگر وہ ای کامرس ویب سائٹ کے ذریعے منشیات کی مبینہ فروخت سے متعلق معاملے میں تعاون نہیں کرتے ہیں تو کارروائی کا سامنا کرسکتے ہیں۔

      ریاست کے وزیر داخلہ نروتم مشرا (Narottam Mishra) نے کہا کہ ’’یہ ایک بہت سنگین معاملہ ہے کہ ایمیزون کو گانجہ (چرس) کی نقل و حمل کے لیے استعمال کیا گیا ہے۔ ہم نے کمپنی کے حکام کو فون کیا لیکن وہ تعاون نہیں کر رہے۔ اگر وہ تعاون نہیں کریں گے تو ہم انہیں گرفتار کر لیں گے اور ایسی سرگرمی کی اجازت نہیں دیں گے۔ لہذا ہم نے کمپنی کے حکام سے تحقیقات میں تعاون کرنے کی درخواست کی ہے ورنہ ہم ان کے خلاف کارروائی کریں گے‘‘۔

      ایمیزون (Amazon)  فائل فوٹو
      ایمیزون (Amazon) فائل فوٹو


      مدھیہ پردیش کے بھنڈ میں پولیس نے گزشتہ ہفتے کہا کہ انہوں نے منشیات فروشوں کے ایک گروہ کا پردہ فاش کیا، جو وشاکپٹنم سے ایمیزون کے ذریعے گانجہ پہنچاتے تھے اور نقد ادائیگی کرتے تھے۔

      مشرا نے کہا کہ ایمیزون کے ساتھ فروخت کنندہ کے طور پر رجسٹرڈ ایک کمپنی نے 12 مقامات پر چرس کی سپلائی کی۔ اگر ایمیزون کے اہلکار قصوروار پائے گئے تو ہم ان کے خلاف سخت کارروائی کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وشاکھاپٹنم سے گانجے کی نقل و حمل کے معاملے میں تین افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ مشرا نے کہا کہ چرس کو پیک کیا گیا تھا اور اسٹیویا کی پتیوں کے ساتھ ہی گزر گیا تھا۔

      مشرا نے کہا کہ مدھیہ پردیش حکومت آن لائن شاپنگ سائٹس کے لیے قواعد وضع کرے گی تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ پلیٹ فارم کا غلط استعمال نہ ہو سکے۔ ایمیزون کے وکیل سمنت نارنگ (Sumant Narang) نے اس معاملے پر تبصرہ کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ معاملہ زیر تفتیش ہے۔

      مشرا نے کامیڈین ویر داس کو امریکہ میں ان کے ایکولوگ کے لیے ہندوستان کی مبینہ توہین کے لیے بھی نشانہ بنایا۔ مشرا نے کہا کہ وہ داس کو مدھیہ پردیش میں پرفارم کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ ’’اگر وہ اپنے کیے پر معافی مانگتا ہے تو ہم اس پر دوبارہ غور کریں گے۔‘‘

      انہوں نے مزید کہا کہ کچھ مسخرے ہیں جو ہندوستان کی شبیہ کو خراب کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ کپل سبل اور دیگر کانگریسیوں نے ان کی حمایت کی۔ یہ راہول گاندھی ہیں جنہوں نے بیرون ملک ہمارے ملک کو بدنام کیا اور سابق وزیر اعلیٰ کمل ناتھ جو عظیم ہندوستان کو بدنام ہندوستان کہہ رہے ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: