ہوم » نیوز » وطن نامہ

وزیر اعظم مودی سے 124 امریکی پروفیسروں نے محتاط رہنے کی اپیل کی

و زیر اعظم نریندر مودی سے 124 امریکی پروفیسروں نے احتیاط برتنے کی اپیل کی ہے۔

  • News18
  • Last Updated: Aug 29, 2015 01:09 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
وزیر اعظم مودی سے 124 امریکی پروفیسروں نے محتاط رہنے کی اپیل کی
و زیر اعظم نریندر مودی سے 124 امریکی پروفیسروں نے احتیاط برتنے کی اپیل کی ہے۔

نئی دہلی۔ و زیر اعظم نریندر مودی سے 124 امریکی پروفیسروں نے احتیاط برتنے کی اپیل کی ہے۔ مودی ستمبر کے آخری ہفتہ میں اپنے ڈیجیٹل انڈیا مہم کے فروغ کے لئے سلیکان ویلی جانے والے ہیں۔


ذرائع کے مطابق، امریکی یونیورسٹیوں میں جنوبی ایشیا کے امور پر گہری نظر رکھنے والے پروفیسروں نے ایک بیان جاری کر کے سلیکان ویلی کی ٹاپ ٹیکنالوجی کمپنیوں کو مودی حکومت سے محتاط رہنے کی اپیل کی ہے۔ ان کمپنیوں میں گوگل، مائیکروسافٹ اور اڈوب شامل ہیں۔ خاص بات یہ ہے کہ ان تینوں کمپنیوں کے چیف ایگزیکٹیو افسران ہند نژاد ہیں ۔ ان کے نام بالترتیب سندر پچائی، ستیہ ندیلا اور شانتنو نرائن ہیں۔

اپیل میں کہا گیا ہے کہ کئی مواقع پر حقوق انسانی اور شہری حقوق کو پامال کرنے والی ایسی حکومت کے ساتھ کاروبار کرنے میں محتاط رہنا چاہئے۔ بیان پر دستخط کرنے والوں میں کولمبیا یونیورسٹی اور اسٹینفرڈ یونیورسٹی کے پروفیسرز شامل ہیں۔ بیان میں ہندستان کے رازداری سے متعلق قوانین پر اظہار تشویش کرتے ہوئے لکھا گیا ہے کہ ہمیں تشویش ہے کہ نوکرشاہی کے ساتھ عام لوگوں کے کاروبار میں شفافیت لانے کے اس پروجیکٹ کے امکان کو خطرہ ہے کیونکہ اکٹھا کی گئی معلومات کے تحفظ کے لئے ضروری سیف گارڈس نہیں ہیں۔ اس لئے اس کے غلط استعمال کا زیادہ امکان ہے۔


بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اسے " ڈیجیٹل انڈیا" کا نام دیا گیا ہے لیکن معلوم ہوتا ہے کہ نجی قسم کی جانکاری کے اکٹھا کئے جانے کو لے کر ہندستان میں اٹھنے والے اہم سوالوں کو نظرانداز کردیا گیا ہے۔
حالانکہ ان پروفیسروں نے مودی کے دورہ امریکہ اور سلیکان ویلی کے ساتھ ہندستان کے کاروباری امکان کو تلاش کرنے کے تئیں ان کے حق کی حمایت کی ہے لیکن اسی کے ساتھ گجرات فسادات میں ان کے مبینہ رول یاد دلانے کی کوشش بھی کی ہے۔
First published: Aug 29, 2015 01:07 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading