உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مہاراشٹر سیاسی بحران: ادھو ٹھاکرے نے چھوڑ دیا سی ایم ہاوس، سامان لےکر ماتوشری پہنچے

    Maharashtra CM Uddhav Thackeray leaves from Versha: وزیر اعلیٰ کے سرکاری رہائش گاہ سے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے اپنی فیملی کے ساتھ نکل پڑے ہیں۔ ان کا سامان بھی نکالا جا رہا ہے۔ خبر کے مطابق، ان کا سامان ماتوشری میں بھیجا جا رہا ہے۔

    Maharashtra CM Uddhav Thackeray leaves from Versha: وزیر اعلیٰ کے سرکاری رہائش گاہ سے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے اپنی فیملی کے ساتھ نکل پڑے ہیں۔ ان کا سامان بھی نکالا جا رہا ہے۔ خبر کے مطابق، ان کا سامان ماتوشری میں بھیجا جا رہا ہے۔

    Maharashtra CM Uddhav Thackeray leaves from Versha: وزیر اعلیٰ کے سرکاری رہائش گاہ سے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے اپنی فیملی کے ساتھ نکل پڑے ہیں۔ ان کا سامان بھی نکالا جا رہا ہے۔ خبر کے مطابق، ان کا سامان ماتوشری میں بھیجا جا رہا ہے۔

    • Share this:
      ممبئی: مہاراشٹر میں تیزی سے بدل رہے سیاسی صورتحال کے درمیان وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے وزیر اعلیٰ کے سرکاری رہائش گاہ سے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے اپنی فیملی کے ساتھ پہنچ گئے ہیں۔ ان کا سامان بھی نکالا جا رہا ہے۔ خبرکے مطابق، ان کا سامان بھی ماتوشری پہنچ گیا ہے۔ اے این آئی کی خبر کے مطابق، مہاراشٹر کے وزیر اور وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے کے بیٹے آدتیہ ٹھاکرے، بھائی تیجس ٹھاکرے اور ماں رشمی ٹھاکرے بھی ورشا سے نکل کر ماتو شری پہنچ گئے ہیں۔

      وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے کا سامان بھی ان کی ذاتی رہائش گاہ ماتو شری پہنچا دیا گیا ہے۔ ویڈیو میں دیکھا جا رہا ہےکہ ایک گاڑی میں مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے سرکاری رہائش گاہ ورشا سے نکلے تھے۔ اس کے بعد آدتیہ ٹھاکرے اور تیجس ٹھاکرے اپنی ماں رشمی ٹھاکرے کے ساتھ دوسری گاڑی میں نکلے۔



      اس سے قبل مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے وزیر اعلیٰ آواس ورشا سے ہی لوگوں کو خطاب کیا تھا۔ انہوں نے باغی اراکین اسمبلی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر شیو سینک مجھے بولیں تو میں وزیر اعلیٰ کا عہدہ چھوڑنے کے لئے تیار ہوں۔ حالانکہ شیو سینا لیڈر سنجے راوت اب بھی دعویٰ کر رہے ہیں کہ ادھو ٹھاکرے وزیر اعلیٰ برقرار رہیں گے۔

      اس حادثہ کے درمیان وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے این سی پی سربراہ شرد پوار سے تقریباً ایک گھنٹے تک بات چیت کی۔ مانا جا رہا ہے کہ اس میٹنگ میں دونوں لیڈران نے اس بحران سے ابھرنے کے متبادل پر تبادلہ کیال کیا، جس میں ایکناتھ شندے کو وزیرا علیٰ کا عہدہ دینے پر بھی غور کیا گیا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: