உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    EXCLUSIVE:حجاب تنازعہ، سی اے اے سے لے کر یوپی الیکشن جیسے سبھی اہم ایشوز پر امت شاہ کی بے باک رائے ، صرف News18 پر

    EXCLUSIVE:حجاب تنازع، سی اے اے سے لے کر یوپی الیکشن جیسے سبھی اہم ایشوز پر امت شاہ کی بے باک رائے ، صرف News18 پر

    EXCLUSIVE:حجاب تنازع، سی اے اے سے لے کر یوپی الیکشن جیسے سبھی اہم ایشوز پر امت شاہ کی بے باک رائے ، صرف News18 پر

    amit shah exclusive interview with news18: ملک کی پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات ، پولرائزیشن کی سیاست ، حجاب تنازع، سی اے اے کا معاملہ ، کورونا کی بدحواسی ، دہشت گردی ، سی اے اے ، یونیفارم سول کوڈ ، یوگی آدتیہ ناتھ کے وزیر اعلی بننے کو لے کر تذبذب جیسے کئی اہم ایشوز ہیں ، جن پر اس وقت پورے ملک میں بحث چل رہی ہے ۔ ان سبھی معاملات پر Network18 کے ایم ڈی اور گروپ ایڈیٹر ان چیف راہل جوشی نے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ سے EXCLUSIVE بات چیت کی ۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے ان سبھی معاملات پر اپنی بے باک رائے رکھی ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : ملک کی پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات ، پولرائزیشن کی سیاست ، حجاب تنازعہ، سی اے اے کا معاملہ ، کورونا کی بدحواسی ، دہشت گردی ، سی اے اے ، یونیفارم سول کوڈ ، یوگی آدتیہ ناتھ کے وزیر اعلی بننے کو لے کر تذبذب جیسے کئی اہم ایشوز ہیں ، جن پر اس وقت پورے ملک میں بحث چل رہی ہے ۔ ان سبھی معاملات پر Network18 کے ایم ڈی اور گروپ ایڈیٹر ان چیف راہل جوشی نے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ سے EXCLUSIVE  بات چیت کی ۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے ان سبھی معاملات پر اپنی بے باک رائے رکھی ۔ انٹرویو میں وزیر داخلہ نے حجاب معاملہ پر پہلی مرتبہ بولتے ہوئے کہا کہ اسکول کے ڈریس کوڈ کو سبھی مذاہب کے لوگ مانیں ۔ انہوں نے کہا کہ فی الحال یہ معاملہ کورٹ میں ہے ۔ کورٹ جو فیصلہ دے ، اس کو ماننا چاہئے ۔ پڑھئے امت شاہ کا پورا انٹرویو ۔ اس کے علاوہ آپ نیوز18 پر رات میں دیکھ بھی سکتے ہیں ۔

      سوال : یوپی میں 300 پلس کا نعرہ دینے کے پیچھے ارادہ کیا ؟

      جواب : میں پورے اترپردیش کا دورہ کرکے آپ کے سامنے بیٹھا ہوں ۔ اترپردیش میں اکثریت کے ساتھ بی جے پی کی سرکار بنے گی ۔ یوگی جی کی قیادت میں عوام کا دل جیتنے میں بی جے پی کامیاب ہوئی ہے ۔ جیت کی باونڈری بی جے پی کیلئے عوام لگائیں گے ۔

      سوال : سروے میں 230 سے 260 سیٹ کے درمیان بی جی کومل رہی ہیں ؟

      جواب : کئی مرتبہ پرسیپشن بہت اہم رہتا ہے ۔ سارے سروے کرنے والے اپنی کریڈیبیلیٹی کو جوڑتے ہیں ۔ سروے میں عوام جو بتاتے ہیں وہ سچ ہو، ضروری نہیں ہے ۔

      سوال : آپ کون سے بڑے ایشوز کے ساتھ عوام کے درمیان گئے ؟

      جواب : گزشتہ تین انتخابات سے یوپی کے عوام بی جے پی کے ساتھ ہیں ۔ اس مرتبہ سب سے بڑا مدعا لا اینڈ آرڈر اور غریب کی فلاح و بہبود ہے ۔ لوگوں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنا اس مرتبہ ہمارا مدعا ہے ۔ بی جے پی نے ایڈمنسٹریٹیو میں بڑی تبدیلیاں کی ہیں ۔ پچھلی سرکاریں ذات پات کی بنیاد پر چلی تھیں ۔ سرکاروں میں ذات پات کا کام ہوتا تھا ۔

      سوال : بی جے پی کیلئے سب سے بڑا مدعا لا اینڈ آرڈر ہے ؟

      جواب : پہلے ایف آئی آر نہیں ہوتی تھی ، اب ایف آئی آر ہوتی ہے ۔ ایس پی سرکار میں ایک مذہب خاص کو چھوٹ ملتی تھی ۔ میرٹھ سے لوگ نقل مکانی کرنے پر مجبور تھے ۔ کروڑوں کی زمین غنڈے قبضہ کرکے بیٹھ گئے تھے ۔ یوگی سرکار میں 72 فیصد ڈکیتی میں کمی آئی ہے ۔ لوٹ میں 62 فیصد ، آبروریزی میں 50 فیصد کی کمی آئی ہے ۔ اعظم ، عتیق احمد ، مختار ایک ساتھ جیل میں ہیں ۔ پہلے جو پریشان کرتے تھے ، وہ آج جیل میں روٹی توڑ رہے ہیں ۔ پہلے ہر ضلع میں مافیا ہوتے تھے ، آج ایک بھی ضلع میں باہوبلی نہیں ہے ۔ ہم نے تقریبا دو ہزار کروڑ کی املاک مافیاوں سے چھڑائی ہیں ۔

      سوال : وزیر اعظم نے کہا کہ ایس پی ۔ بی ایس پی کے راج میں دہشت گردوں کو چھوڑ دیا جاتا تھا ؟

      جواب : ایس پی اور بی ایس پی کے وقت 11 معاملات میں ڈھیل دی گئی تھی ۔ 11 معاملات میں یو اے پی اے لگا تھا ، وہ واپس لئے گئے ہیں ۔ انتخابات میں ایس پی ۔ بی ایس پی کو عوام کو اے دینا ہوگا ، پوٹا اور یو اے پی اے ہٹاکر کس کی مدد کی ؟ صرف ووٹ بینک کیلئے ایسا کیا گیا ؟ کانگریس کے دور اقتدار میں بھی بہت معاملات آئے تھے ۔ دہشت گردی کے معاملات میں ذات پات والی پارٹیوں کا رویہ خراب رہا ہے ۔

      سوال : یوگی جی نے 80۔ 20 کا ذکر کیا ، کیا ہندو بنام مسلم ہے ؟

      جواب : میں نہیں مانتا کہ ہندو ۔ مسلم کا تقسیم ہے ۔ پولرائزیشن ضرور ہورہا ہے ، لیکن غریب ، کسان بھی پولرائز ہو رہا ہے ۔ کسان کلیان ندھی کا پیسہ مل رہا ہے ۔

      سوال : ہندو مسلمان پولرائزیشن نہیں دیکھ رہے ہیں؟

      جواب : ووٹ بینک کے حساب سے ہم نہیں دیکھتے ہیں ۔ جن کا حق ہے ، ان کے ساتھ سرکار پر ہم چلتے ہیں ۔ وزیر اعظم کی ہر اسکیم کا لوگوں کو فائدہ مل رہا ہے ۔ پہلے دو کروڑ 62 لاکھ گھروں میں بیت الخلا نہیں تھے ، ہم نے یو پی میں ایک کروڑ 41 لاکھ گھروں میں بجلی پہنچائی ہے ۔ اس کے علاوہ دو کروڑ 68 لاکھ ایل ای ڈی بلب تقسیم کئے گئے ، 15 کروڑ غریبوں کو دو سال سے مفت راشن دی ، 42 لاکھ لوگوں کو گھر دینے کا کام ہوا ۔ اب 2024 تک ہر شخص کو گھر دینے کا ہدف ہے ۔

      سوال : بی جے پی مسلمانوں کو ٹکٹ کیوں نہیں دیتی ؟

      جواب : مسلمانوں کے ساتھ وہی رشتہ ہے ، جو سرکار کا ہونا چاہئے ۔ الیکشن میں کون ووٹ دیتا ہے ، وہ بھی تو دیکھنا پڑتا ہے ۔

      سوال : مسلموں کو ٹکٹ نہ دینا سیاسی مجبوری ہے ؟

      جواب : یہ سیاسی آداب ہے ۔ سرکار آئین کی بنیاد پر چلتی ہے ۔ سرکار کو ملک کے عوام منتخب کرتے ہیں ۔

      سوال : کیرانہ میں نقل مکانی کا مدعا آج ہے؟

      جواب : نقل مکانی کا مدعا آج بھی ہے ۔ کیرانہ جو آئے ہیں وہ امن و سکون سے جی رہے ہیں ۔ انہیں اب نقل مکانی نہیں کرنی پڑ رہی ہے ۔ یوپی میں سیاست کا کریمنلائزیشن ہوا تھا ۔ ایڈمنسٹریشن پولیٹیسائزڈ ہوگئی تھی ۔ بی جے پی سرکار میں اب سیاست کا کریمنلائزیشن نہیں ہوا ہے ۔ یوپی کے عوام کو کنبہ پروری ، ذات پات کی سیاست سے نجات ملی ہے ۔ یوگی سرکار نے یوپی کو آٹھویں سے دوسری بڑی معیشت بنایا ہے ۔ یوپی میں بے روزگاری کی شرح 17.3 فیصد تھی ، جو آج 4.1 فیصد ہے ۔ ایک کروڑ 61 لاکھ نوکریوں اور روزگار کے نئے مواقع ملے ہیں ۔

      سوال : اکھیلیش کہتے ہیں کہ بی جے پی مدعوں سے بھٹک رہی ہے؟

      اکھیلیش یادو اعداد و شمار کے ساتھ اے دیں تو اچھا ہوگا ۔ ہم مدعوں سے بھٹکے ہیں ، یا وہ مدعوں سے بھٹکے ہیں؟ کورونا کے دوران دنیا بھر میں مہنگائی بڑھی ہے ، ہندوستان میں بھی اس کا اثر دیکھنے کو ملا ۔ مودی حکومت نے مہنگائی بہت قابو میں کرنے کا کام کیا ہے ۔ کورونا کے بعد عالمی طور پر مہنگائی بڑھی ہے ۔

      سوال : حجاب تنازع پر آپ کی کیا رائے ہے؟

      جواب : اسکول کے ڈریس کوڈ کو سبھی مذاہب کے لوگ مانیں ۔ معاملہ کورٹ میں ہے ، کورٹ جو فیصلہ دے ، اس کو ماننا چاہئے ۔ میرا ذاتی ماننا ہے کہ اسکولوں میں بچوں کو مذہب سے اوپر رکھنا چاہئے ۔ اگر اس میں سازش ہے تو مخالفین کی منشا کامیاب نہیں ہوگی ۔

      سوال : جینت چودھری کو ساتھ لانے کی آپ نے کارروائی کی ، اب کیا سوچ رہے ہیں؟

      جواب : بی جے پی واضح اکثریت سے جیتنے جارہی ہے ۔ میں نے اتنا کہا تھا کہ جینت غلط جگہ چلے گئے ہیں ۔

      سوال : جینت کیلئے بی جے پی کے راستے کھلے ہیں؟

      جواب : بی جے پی مکمل اکثریت کے ساتھ سرکار بنانے جارہی ہے ۔ جینت کے ساتھ کوئی مابعد انتخابات اتحاد کی ضرورت نہیں ہے ۔ ہماری پارٹی کا دو پارٹیوں کے ساتھ اتحاد ہے ۔ بی جے پی کو کسی کی ضرورت نہیں پڑنے والی ہے ۔ مودی جی کی غریبوں کی فلاح و بہبود کی اسکیموں نے تصویر بدل دی ہے ۔ یوپی کا الیکشن پوری طرح سے بی جے پی کے ساتھ ہے ۔ 70 سال تک غریب فلاح و بہبود کی سہولیت نہیں تھی ۔ پانچ سال میں غریب فلاح و بہبود کیلئے بہتر کام ہوئے ہیں ۔

      سوال : یہ الیکشن مذہب اور ذات سے اوپر اٹھ کر ہوگا؟

      جواب : اس سب کی کانگریس نے شروعات کی ۔ ایس پی ۔ بی ایس پی نے اس کو گہرائی دی ۔ یوپی میں ہمیں 2019 میں 65 لوک سبھا سیٹوں میں جیت ملی ۔ سیاست میں 1+1=2 نہیں ہوتا ، کئی مرتبہ 1+1=11 ہوجاتا ہے ۔

      سوال : ریاست اور مرکز کا الیکشن الگ ہوتا ہے؟

      جواب : 2014, 17, 19 میں اترپردیش کے عوام ایک راستے پر چلے ہیں ۔ یوپی کے عوام بی جے پی کے ساتھ آئے ہیں ۔ مجھے پورا بھروسہ ہے کہ 22 میں بی جے پی کی سرکار کو عوام قبول کریں گے ۔

      سوال : مایاوتی کو آپ کیسے دیکھتے ہیں، وہ سیاسی طور پر زیادہ سرگرم نہیں ہیں؟

      جواب : مایاوتی کی زمین پر اپنی گرفت ہے ۔ سیٹ پر کتنا کنورٹ ہوگا ، وہ معلوم نہیں ۔

      سوال : مایا وتی کا جاٹو ووٹ بینک نہیں کھسکے گا؟

      جواب : جاٹو ووٹ بینک مایا وتی کے ساتھ جائے گا ۔ مسلم ووٹ بھی بڑی تعداد میں مایا وتی کے ساتھ جائے گا ۔

      سوال : مایا وتی اور بی جے پی کا اتحاد ہوگا؟

      جواب : بی جے پی کو اتحاد کی ضرورت نہیں ہے ۔ بی جے پی مکمل اکثریت کے ساتھ سرکار بنانے جارہی ہے ۔ اچھا کام کرنے کیلئے سب کی حمایت چاہئے ۔ ایس پی کی بھی چاہئے ، اپوزیشن کی بھی چاہئے ۔ سرکار بنانے کیلئے کسی کی ضرورت نہیں پڑے گی ۔ سب سے غریب لوگ بی جے پی کے ساتھ جڑے ہیں ۔ متوسط طبقہ امن و سکون کے ساتھ جڑا ہوا ہے ۔ 86 لاکھ کسانوں کا قرض معاف کیا گیا ہے ۔ ہر سال کسان کے کھاتے میں چھ ہزار جاتے ہیں ۔ دو کروڑ کسانوں تک کسان کریڈٹ کارڈ ملا ہے ۔

      سوال : کسان آندولن کی وجہ سے کسانوں میں غصہ نہیں ہے ؟

      جواب : کسانوں کے درمیان پرسیشپن بنانے کی کوشش ہوئی ، لیکن کسان بی جے پی کے ساتھ ہیں ۔

      سوال : براہمن ووٹ بینک کو اکھیلیش یادو ساتھ لانا چاہتے ہیں ، اس کو کیسے دیکھتے ہیں؟

      جواب : میں اس کو مانتا ہوں کہ یہ مدعا سے بھٹکنا ہے ۔ ذات پات کی بات کرنا، مدعوں سے بھٹکا ہوتا ہے ، ہم تو غریب ، شہری ووٹر کی بات کرتے ہیں ۔ بی جے پی نے ذات کی بات نہیں کی ہے ۔

      سوال : الیکشن میں آپ اویسی فیکٹر کو کیسے دیکھتے ہیں؟

      جواب : اویسی جی ملک بھر میں دورہ کرتے ہیں ۔ زیادہ تر مسلمانوں کو ایڈریس کرتے ہیں ۔ اے آئی ایم آئی ایم کو وٹ بھی ملتا ہے ہر مرتبہ ، لیکن کسی ایک واقعہ کو لا اینڈ آرڈر کے ساتھ مت جوڑیئے ۔ لا اینڈ آرڈر کا مطلب تب ہوتا ، جب ہم کارروائی نہیں کرتے ۔ دو گھنٹے میں دونوں ملزموں کو پکڑ کر قانون کے حوالے کردیا ۔ ہم نے اویسی کو سیکورٹی دینے کا فیصلہ کیا ، سیکورٹی ہر ایک شخص کو ملنی چاہئے ، مسلمانوں میں اویسی کا کریز تو ہے ہی ۔

      سوال : کانگریس اور پرینکا کو آپ کیسے دیکھتے ہیں؟

      جواب : بنگال میں کانگریس کی زیرو سیٹیں آئی ہیں ۔ کانگریس کے مستقبل کی تصویر بنگال میں دکھی ہے ۔

      سوال : پنجاب کے وزیر اعلی چننی نے طنز کیا ہے کہ کسی بھی بھئیا کو یہاں نہیں آنے دیں گے سرکار بنانے کیلئے ؟

      جواب : کانگریس کی عادت ہے ہر جگہ الگ الگ بات کرنا ۔ صحت مند سماج کیلئے یہ ٹھیک نہیں ہے ۔ جس کو جہاں جانا ہے وہ وہاں جاسکتا ہے ۔ پرینکا اسٹیج پر تھیں ، وہ وہاں خوش ہورہی تھیں جبکہ یوپی میں احترام کی بات کرتی ہیں ۔

      سوال : راہل کا الزام ہے کہ چین اور پاکستان بی جے پی سرکار کی پالیسی کی وجہ سے ساتھ آگئے ؟

      جواب : راہل گاندھی جی کو ملک کی تاریخ معلوم نہیں ہے ۔ 1962 میں کیا ہوا تھا اور کانگریس کی غلطی کیا ہے ؟ چین نے جتنے بھی چیلنج کھڑے کئے ، ہر چیلنج کا منہ توڑ جواب دیا گیا ہے ۔ خواہ گلوان وادی کا معاملہ ہو ، خواہ مشرق میں ہو ہر جگہ جواب دیا ہے ۔ ہر جگہ ہندوستان نے اپنے موقف کو مضبوطی سے رکھا ہے ۔ ہندوستان کی سرحد اور ہندوستان کی خود مختاری کو بنائے رکھا ہے ۔ چین کے ساتھ مل کر راہل نے کیا گفتگو کی ؟

      سوال : کیا یوپی میں یوگی آدتیہ ناتھ ہی وزیر اعلی بنیں گے ؟

      جواب : یقینی طور پر یوگی کی قیادت میں الیکشن لڑ رہے ہیں ۔ یوگی آدتیہ ناتھ ہی وزیر اعلی بنیں گے ، خواہ جتنی سیٹیں آئیں ۔ 51 نئے کالج بنانے کا کام کیا ، اب 40 میڈیکل کالج بنے ہیں ۔ کین بیتوا لنک پر کام کرنے کا عزم کیا ہے ۔ یوپی میں ترقی کا نیا ماڈل تیار کرکے دیا ہے ۔ یوپی میں پانچ ایکسپریس وے بنانے کا کام ہورہا ہے ۔ یوپی میں انفراسٹرکچر کے ساتھ ترقی کا کام ہورہا ہے ۔

      سوال : پنجاب میں آپ کی اتحادی ساتھیوں کے ساتھ کیا صورت ہوگی ؟

      جواب : پنجاب کی صورتحال جیوتشی ہی بتاسکتا ہے ۔ پنجاب میں بی جے پی اتحاد کے ساتھ اچھی لڑائی لڑ رہی ہے ۔ پنجاب میں سیکورٹی ایک بہت بڑی پریشانی ہے ۔ مودی جی کو تقریر کرنے سے روکنا بڑا مدعا ہے ۔ بی جے پی کو کامیابی ملے گی ، کتنی ملے گی ، معلوم نہیں ۔

      سوال : چننی جی نے آپ کو ایک خط لکھا تھا جس کا آپ نے جواب دیا؟

      جواب : کسی بھی پارٹی کا علاحدگی پسندوں کے ساتھ ساز باز ٹھیک نہیں ہے ۔ کوئی بھی سرکار ایسی چیزوں کو ہلکے میں نہیں لے سکتی ۔ ہماری سرکار ضرور اس کی جانچ کرائے گی ۔ وزیر اعلی جب خط لکھتا ہے تو ہلکے میں لینے کا آپشن نہیں ہے ۔

      سوال : اتراکھنڈ میں کس کی سرکار بن رہی ہے؟

      جواب : یقینی طور پر اتراکھنڈ میں بی جے پی کی سرکار بن رہی ہے ۔ دھامی جی نے بہت کم وقت میں اچھا کام کیا ہے ۔ اتراکھنڈ میں ترقی کے معاملہ پر کام ہوئے ہیں ۔ غریب فلاح و بہبود اتراکھنڈ میں بھی بڑا مدعا ہے ۔

      سوال : تین وزیر اعلی بدلے ، کچھ لیڈروں نے چھوڑا، اس کا کوئی نقصان؟

      جواب : اس کا نقصان تو ہوتا ہی ہے ، لیکن بی جے پی نے اچھا کام کیا ہے ، اکثریت ملے گی ۔ منی پور میں بھی بی جے پی اچھے سے لڑ رہی ہے ۔ دہشت گردانہ واقعات کو کنٹرول کرنے کا کام ہوا ہے ۔ منی پور میں ترقی کے کام ہوئے ہیں ۔ پہلی مرتبہ پہاڑ کے لوگ تعریف کررہے ہیں ۔

      سوال : سی اے اے کب تک لاگو کریں گے؟

      جواب : کورونا کے بعد ہی سی اے اے پر غور کیا جاسکے گا ۔ کورونا کے فورا بعد سی اے اے پر فیصلہ کریں گے ۔ سی اے اے پر پیچھے ہٹنے کا کوئی سوال نہیں ہے ۔

      سوال : یونیفارم سول کوڈ پر آپ کی کیا رائے ہے ؟

      جواب : اتراکھنڈ کے وزیر اعلی نے سول کوڈ کو شامل کیا ہے ۔ اتراکھنڈ میں سرکار بننے کے بعد آگے کا فیصلہ کریں گے ۔ جامع گفتگو کے بعد فیصلہ کیا جائے گا ۔

      سوال : عمران خان نے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کو بیٹھ کر تنازع سلجھا لینا چاہئے؟

      جواب : کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے ، اس پر کیا گفتگو ہوسکتی ہے ۔ ملک کی سرکاروں کا فیصلہ ہے کہ کشمیر ہندوستان کا حصہ ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: