ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

امت شاہ نے کہا- ممتا بنرجی کی تنگ نظری نے ریاست کو مرکزی اسکیموں سے محروم کردیا

کورونا بحران اور امفان طوفان کی تباہی کے درمیان مغربی بنگال میں پہلی ورچوئیل ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے آج ممتا حکومت کی سخت تنقید کرتے ہوئے انتخابی بگل بجا دیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 09, 2020 04:52 PM IST
  • Share this:
امت شاہ نے کہا- ممتا بنرجی کی تنگ نظری نے ریاست کو مرکزی اسکیموں سے محروم کردیا
امت شاہ نے کہا- ممتا بنرجی کی تنگ نظری نے ریاست کو مرکزی اسکیموں سے محروم کردیا

کولکاتا: کورونا بحران اور امفان طوفان کی تباہی کے درمیان مغربی بنگال میں پہلی ورچوئیل ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے آج ممتا حکومت کی سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پورے ملک میں جمہوری روایات مضبوط ہورہی ہے، مگر مغربی بنگال واحد ریاست ہے جہاں سیاسی تشدد کے واقعات میں کمی آنے کے بجائے اضافہ ہورہا ہے اور یہاں جمہوریت نام کی کوئی چیز نہیں ہے۔ سال 2014 سے 2020 تک سیاسی تشدد میں مرنے والے پارٹی ورکروں کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ مہلوک پارٹی ورکروں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں کہ اور ان کے اہل خانہ کو یقین دلاتا ہوں کہ ان کے عزیزوں نے ”سونار بنگلہ“ کی تعبیر کیلئے اپنی جان قربان جو پیش کی ہیں، وہ رائیگاں نہیں جائے گی۔


امت شاہ نے اپنے خطاب کا آغاز کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے والے ہیروں کو خراج عقیدت اور امفان طوفان میں مرنے والوں کے اہل خانہ کے ساتھ اظہار تعزیت پیش کرتے ہوئے کیا۔ مرکزی وزیر داخلہ نے کہا کہ ممتا حکومت نے ’آیوشمان بھارت یوجنا“ سے بنگال کے عوام کو محروم کردیا جب کہ اس سے ملک بھر کے لاکھوں شہریوں نے فائدہ اٹھایا ہے۔ ممتا بنرجی نے اپنے انا کی وجہ سے ریاست کے لاکھوں شہریوں کو نقصان پہنچا ہے۔انہوں نے کہا کہ آج میں ریاست کے کروڑوں شہریوں کی طرف سے حکومت بنگال سے سوال کررہاں ہوں کہ آخر اس اسکیم کو نافذ کرنے سے انکار کیوں کیا گیا۔


امت شاہ نے آج ممتا حکومت کی سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پورے ملک میں جمہوری روایات مضبوط ہورہی ہے، مگر مغربی بنگال واحد ریاست ہے جہاں سیاسی تشدد کے واقعات میں کمی آنے کے بجائے اضافہ ہورہا ہے۔
امت شاہ نے آج ممتا حکومت کی سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پورے ملک میں جمہوری روایات مضبوط ہورہی ہے، مگر مغربی بنگال واحد ریاست ہے جہاں سیاسی تشدد کے واقعات میں کمی آنے کے بجائے اضافہ ہورہا ہے۔


امت شاہ نے کہا کہ بی جے پی بنگال میں اپوزیشن کی سیاست کیلئے کام نہیں کررہی ہے بلکہ 2021کے اسمبلی انتخاب میں کامیابی حاصل کرے گی اور اقتدار میں آتے ہی آیوشمان بھارت یوجنا اور دیگر مرکزی حکومت کی اسکیمیں جس سے ملک بھر لاکھوں شہری فائدہ اٹھارہے ہیں مگر بنگال کے عوام محروم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حلف برداری کی تقریب کے فوری بعد ریاست میں آیوشمان بھارت اسکیم کو نافذ کردیا جائے گا۔

ممتا جی بنگال کے عوام کو صحیح اور معیاری دوائیاں نہیں مل رہی ہے۔ آخر بنگال میں آیوشمان اسکیم کو نافذ کیوں نہیں کیا گیا۔ ممتا جی غریب عوام کے حقوق کے ساتھ سیاست نہیں کی جاتی ہے۔ امت شاہ نے دو دن قبل بہار میں اپنی پہلی ورچوئیل ریلی کی تھی اس کے بعد سوموار کو اڑیسہ میں اور اب بنگال میں ورچوئیل ریلی سے خطاب کیا ہے۔ اس موقع پر بنگال کے سینر لیڈران دلیپ گھوش، مکل رائے اور راہل سنہا بھی موجود تھے۔ امت شاہ نے کہا کہ پارٹی ورکروں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بنگال میں تبدیلی کی دستک ہوچکی ہے اور ہم پارٹی ورکروں کے خواب کو شاہکار کریں گی۔ مودی کی قیادت کی تعریف کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم نے تین طلاق بل کے ذریعہ مسلم خواتین کے ساتھ انصاف کیا ہے۔ کشمیر کو قومی دھارے میں شامل کرنے کیلئے 370 ایکٹ کو ہٹایا اور شہری ترمیمی ایکٹ کے ذریعہ لاکھوں ہندو رفیوجیوں کو ہندوستانی شہریت کی راہ ہموار کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مودی کی قیادت کی وجہ سے ملک مضبوط ہاتھوں میں ہے۔

امت شاہ نے دعوی کیا کہ ممتا بنرجی کی وجہ سے بنگال کے کسانوں کو مرکز کے منصوبے سے محروم کر دیا گیا ہے۔
امت شاہ نے دعوی کیا کہ ممتا بنرجی کی وجہ سے بنگال کے کسانوں کو مرکز کے منصوبے سے محروم کر دیا گیا ہے۔


امت شاہ نے دعوی کیا کہ ممتا بنرجی کی وجہ سے بنگال کے کسانوں کو مرکز کے منصوبے سے محروم کردیا گیا ہے غیر منظم سیکٹر سے وابستہ مزدوروں کے اکاؤنٹ میں دس دس ہزار روپے بھیجنے کے ترنمول کانگریس کے مطالبے کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگر ممتا بنرجی چاہیں تو بھی، مرکز دو دن کے اندر بنگال کے کاشتکاروں کے اکاؤنٹ میں رقم بھیجنے کے لئے تیار ہے۔ ریاست کے کسان ممتا بنرجی کی وجہ سے مرکز کے فوائد سے محروم ہیں۔ممتا بنرجی کی تنگ سیاست کی وجہ سے بنگال کے کسانوں کو مرکز کے منصوبے سے محروم کیا جارہا ہے۔

وزیر داخلہ انت شاہ نے کہا کہ ممتا حکومت نے ’آیوشمان بھارت یوجنا“ سے بنگال کے عوام کو محروم کردیا۔
وزیر داخلہ انت شاہ نے کہا کہ ممتا حکومت نے ’آیوشمان بھارت یوجنا“ سے بنگال کے عوام کو محروم کردیا۔


امت شاہ نے ریاست کے عوام سے اپیل کی کہ بنگال کی عظمت کو بحال کرنے کیلئے اسمبلی انتخاب میں بی جے پی کو ایک موقع دیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی جن ریاستوں میں بی جے پی اقتدار میں آئی ہے وہاں ترقیاتی کام بڑی پیمانے پر ترقیاتی کام ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بنگال میں بی جے پی کو ایک بار موقع دیں۔ بی جے پی سونار بنگلہ بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بنگال کو سیاسی تشدد سے پاک کیا جائے گا اور جموریت کو بحال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں بحران کے اس دور میں ریاست کے عوام کی مدد کرنے کے بجائے سیاست کررہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ راہل گاندھی حکومت کا ساتھ دینے کے بجائے حکومت کے خلاف پروپیگنڈہ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جن دھن یوجنا کے تحت 60 ملین غریب افراد کی زندگیوں کو تبدیل کردیا ہے۔ مرکزی حکومت نے کورونا بحران میں جندھن منصوبے کے کھاتوں میں 51 کروڑ روپے لوگوں کے اکاؤنٹ میں ڈالے ہیں۔
First published: Jun 09, 2020 04:49 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading