اپنا ضلع منتخب کریں۔

    مغربی بنگال میں بی جے پی 200سے زاید سیٹوں پر جیت حاصل کرکے حکومت بنائے گی: امت شاہ

    مغربی بنگال میں بی جے پی 200سے زاید سیٹوں پر جیت حاصل کرکے حکومت بنائے گی: امت شاہ

    مغربی بنگال میں بی جے پی 200سے زاید سیٹوں پر جیت حاصل کرکے حکومت بنائے گی: امت شاہ

    مغربی بنگال کے مشرقی مدنی پور میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے امیت شاہ نے آج کہا ہے کہ بنگال میں بی جے پی 200سے زاید سیٹوں پرجیت حاصل کرکے بنگال میں حکومت سازی کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی ہی بنگال کی ترقی کرسکتی ہے۔ امیت شا ہ نے کہا کہ آج بنگال کے عوام ممتا بنرجی کے خلاف ہیں۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      کولکاتا: مغربی بنگال کے مشرقی مدنی پور میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے امیت شاہ نے آج کہا ہے کہ بنگال میں بی جے پی 200 سے زاید سیٹوں پرجیت حاصل کرکے بنگال میں حکومت سازی کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی ہی بنگال کی ترقی کرسکتی ہے۔ امیت شا ہ نے کہا کہ آج بنگال کے عوام ممتا بنرجی کے خلاف ہیں۔ اس لئے بڑی تعداد میں لوگ میں بی جے پی میں شامل ہو رہے ہیں۔ کیوں انہیں یقین ہےکہ نریندر مودی کی قیادت میں ہی بنگال کی ترقی ہوسکتی ہے۔ امیت شاہ نے کہا کہ آج جولوگ ترنمول کانگریس چھوڑ کر بی جے پی میں شامل ہورہے ہیں ممتا بنرجی اور ترنمو ل کانگریس انہیں غدار کہہ رہی ہیں مگر کل تک کانگریس اور سی پی آئی ایم کے ممبران اور لیڈروں کو توڑ کرترنمول کانگریس میں شامل کرا رہی تھیں وہ کیا تھا۔ کیا وہ غداری نہیں تھی؟ امیت شاہ نے کہا کہ ایک دن ایسا آئے ترنمول کانگریس میں ممتا بنرجی کے علاوہ پارٹی میں کوئی نہیں رہے گا۔ امیت شا ہ نے کہا کہ شوبھندو ادھیکاری اور ان کے ساتھی جو ترنمول کانگریس ، سی پی ایم چھوڑکر بی جے پی میں شامل ہوئے ہیں میں ان کا تہہ دل سے استقبال کرتا ہوں۔
      اس سے قبل امیت شاہ نے ایک کسان کے گھر دوپہر کا کھانا کھایا۔ اس موقع پر بنگال بی جے پی کے لیڈران دلیپ گھوش ، مکل رائے اور دیگر لیڈران موجود تھے۔ مدنی پور میں جلسے خطاب کرتے ہوئے امیت شاہ نے کہا کہ ممتا بنرجی کی حکومت بدعنوانی میں ڈوبی ہوئے ہے ۔اس کی وجہ سے بنگال کے عواممتا بنرجی سے دور ہوچکی ہے ۔امیت شاہ نے کہاکہ ممتا بنرجی نے بنگال کو تشدد اور بدعنوانی کے علاوہ کچھ نہیں دیا ہے ۔ترنمول کانگریس کے ذریعہ سیاسی تشدد اور دھمکیوں سے کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ بی جے پی کے صدر جے پی نڈا کے قافلے پر حملہ ہوا ،ہمارے ورکروں پر حملہ ہورہے ہیں اور سیکڑوں کارکنان مارے گئےہیں مگر میں ممتا بنرجی سے کہنا چاہتا ہوں کہ آپ جتنا زیادہ تشدد کریں گے ، اتنا ہی بی جے پی مضبوط ہوکرسامنے آئے گی۔
      شوبھندو ادھیکاری نے کہا کہ بنگال کی معیشت خراب ہوچکی ہے ۔ترقیاتی کام ٹھپ ہوچکے ہیں اور مجھے امید ہے کہ 2021میں بی جے پی اقتدار میں آئے گی اور مودی کی قیادت میں بنگال کی ترقی ہوگی ۔ادھیکاری نے دعوی کیا کہ ترنمول کانگریس بی جے پی کی وجہ سے وجود میں آئی ہے۔انہوں نے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا ، "میں نے سب سے پہلے 2014 کے لوک سبھا انتخابات کے دوران امت شاہ سے ملاقات کی تھی۔انہوں نے کہا کہ بی جے پی قوم پرستی اور تکثریت پر یقین رکھتی ہے۔ ادھیکاری نے کہا کہ ترنمول کانگریس اندرونی اور بیرونی کے نام پر بنگال کے عوام کوتقسیم کرنا چاہتی ہے ۔ترنمول کانگریس کی تنگ نظر سیاست کبھی بھی کامیاب نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ جولوگ مجھے غدار کہتے ہیں وہ خود غدار ہے ۔ اگر بی جے پی نہ ہوتی تو ترنمول کانریس کبھی بھی وجود میں نہیں آتی۔
      اس موقع امیت شاہ نے کہا کہ بی جے پی کا ہرکارکن بنگالی فخر کی عزت کرتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ممتا بنرجی نے سیاسی دشمنی کی وجہ سے بنگال کی ترقی کو روک دیا۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں اور میڈیکل اسکیم کو عوام تک پہنچنے نہیں دیا گیا۔ ہمارے پاس بنگال کے لئے بہت سارے منصوبے ہیں۔ بی جے پی بنگال یونٹ کی ایک پوری ٹیم منشور پر کام کر رہی ہے۔ اس میں اضلاع اور دیہات کے مسائل شامل کیے جائیں گے۔ ہم اگلے پانچ سال تک بنگال کے عوام کے سامنے ترقی کا ایک بلیو پرنٹ رکھیں گے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: