امرپالی کیس : سپریم کورٹ نے این بی سی سی سے بچے ہوئے گھروں کو بیچنے کا پوچھا طریقہ

سپریم کورٹ نے امرپالی کے گھر خریداروں سے بقایا رقم جمع کرنے کے لئے یوکو بینک کو اپنی ویب سائٹ پر فارمیٹ اپ لوڈ کرنے کیلئے کہا ہے تاکہ اس میں خریدار اپنی بقایا رقم جمع کر سکیں۔

Sep 11, 2019 09:55 PM IST | Updated on: Sep 11, 2019 09:55 PM IST
امرپالی کیس : سپریم کورٹ نے این بی سی سی سے بچے ہوئے گھروں کو بیچنے کا پوچھا طریقہ

سپریم کورٹ آف انڈیا ۔ فائل فوٹو

سپریم کورٹ نے ریئل اسٹیٹ امرپالی گروپ کی ادھوری اسکیموں کو مکمل کرنے کا ذمہ اٹھانے والے نیشنل بلڈنگ کنسٹرکشن کارپوریشن (این بی سی سی ) اور گھر خریداروں سے یہ مشورہ دینے کیلئے کہا ہے کہ گروپ کے بچے ہوئے فلیٹوں کو کس طرح فروخت کیا جا سکتا ہے۔

کورٹ نے بینکوں سے قرض لے کر فلیٹ خریدنے والوں کے بچاؤ کے لئے بینکوں کو نوٹس جاری کیا ہے۔ سپریم کورٹ نے امرپالی کے گھر خریداروں سے بقایا رقم جمع کرنے کے لئے یوکو بینک کو اپنی ویب سائٹ پر فارمیٹ اپ لوڈ کرنے کیلئے کہا ہے تاکہ اس میں خریدار اپنی بقایا رقم جمع کر سکیں۔

Loading...

کورٹ نے بینک کو نوٹس جاری کرکے پوچھا کہ جن خریداروں نے قرض لے کر فلیٹ خریدا ہے ان کی بچی ہوئی قرض کی رقم جاری کرنے کے لئے راحت کے کیا اقدامات کئے جا سکتے ہیں؟ ۔ کورٹ نے بھونیشور اور رائے پور کی اتھارٹی سے بھی امرپالی زمین خرید نے کے معاملہ میں اب تک جمع رقم اور متعلقہ زمین کے استعمال کی رپورٹ طلب کی ہے۔ امرپالی کی اب بھی 2300 کروڑ کی جائیداد فروخت کی جانی باقی ہے۔

Loading...