உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Amravati Murder Case:عدالت نے ملزمین کوNIAکی حراست میں بھیجا، ایجنسی کا دعویٰ-سبھی دہشت گرانہ سرگرمیوں میں ہیں شامل

    امراوتی کیمسٹ قتل معاملے کے ملزمین کو این آئی اے کی تحویل میں بھیجا گیا۔

    امراوتی کیمسٹ قتل معاملے کے ملزمین کو این آئی اے کی تحویل میں بھیجا گیا۔

    ایجنسی نے ملزمین کو یہاں این آئی اے کیسیز کے خصوصی جج اے کے لاہوتی کے سامنے پیش کیا اور ان کی 15 دن کی تحویل طلب کی۔ این آئی اے نے کہا کہ ملزمان کے خلاف ثبوت موجود ہیں کہ وہ دہشت گردانہ سرگرمیوں میں ملوث تھے۔

    • Share this:
      Amravati Murder Case:ممبئی کی ایک عدالت نے امراوتی قتل کیس میں گرفتار سات لوگوں کو 15 جولائی تک قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے) کی تحویل میں بھیج دیا ہے۔ اس سے پہلے تمام ملزمین کو مشرقی مہاراشٹر کے امراوتی شہر سے ممبئی لایا گیا تھا۔ کہا جا رہا ہے کہ امراوتی میں کیمسٹ امیش کولہے کا بی جے پی کی سابق ترجمان نوپور شرما کی حمایت کرنے پر قتل کر دیا گیا تھا۔ امیش کولہے کا 21 جون کی رات دکان سے گھر لوٹتے وقت قتل کر دیا گیا تھا۔

      ابتدائی طور پر کیس کی تحقیقات کرنے والی پولیس نے دعویٰ کیا تھا کہ امیش کولہے کو کچھ واٹس ایپ گروپس میں پوسٹ شیئر کرنے پر قتل کیا گیا تھا جس میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی معطل رہنما نوپور شرما کے پیغمبر اسلام کے بارے میں متنازعہ ریمارکس کی حمایت کی گئی تھی۔

      NIAکا دعویٰ-سبھی دہشت گردانہ سرگرمیوں میں ہیں شامل
      اب اس کیس کی تحقیقات این آئی اے نے اپنے ہاتھ میں لے لی ہے۔ ایجنسی نے ملزمین کو یہاں این آئی اے کیسیز کے خصوصی جج اے کے لاہوتی کے سامنے پیش کیا اور ان کی 15 دن کی تحویل طلب کی۔ این آئی اے نے کہا کہ ملزمان کے خلاف ثبوت موجود ہیں کہ وہ دہشت گردانہ سرگرمیوں میں ملوث تھے۔ عدالت نے دلائل سننے کے بعد ملزم کو آٹھ دن کی این آئی اے حراست میں بھیج دیا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      مغربی بنگال: TMC کے 3 کارکنان کاگولی مارکر قتل، علاقے میں بڑی تعدادمیں پولیس اہلکار تعینات

      یہ بھی پڑھیں:
       دہلی میں تشدد: کینڈل مارچ کر رہی بھیڑ ہوئی بے قابو، پولیس پر پتھراو، گاڑیوں میں توڑ پھوڑ

      بتا دیں کہ ادے پور قتل کیس سے ایک ہفتہ قبل امراوتی میں امیش کولہے کا قتل کر دیا گیا تھا۔ ادے پور میں کنہیا لال نامی درزی کا قتل کر دیا گیاتھا۔ ملزم نے قتل کی ویڈیو بنا کر وائرل کر دی۔ کنہیا لال کو بی جے پی کی معطل لیڈر نوپور شرما کے متنازعہ ریمارکس کی حمایت کرنے پر قتل کیا گیا تھا۔ راجستھان پولس نے اس معاملے میں مرکزی ملزم سمیت 4 لوگوں کو گرفتار کیا تھا۔ این آئی اے بھی اس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: