ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

بی جے پی رکن پارلیمنٹ اننت کمار ہیگڑے کا متنازعہ بیان ، کہا ۔گاندھی جی کا ستیہ گرہ تھاڈرامہ

اننت کمار ہیگڑے نے مہاتما گاندھی کو کے 'مہاتما' کہلائے جانے پر بھی سوالات اٹھائے ہیں۔

  • Share this:
بی  جے پی رکن پارلیمنٹ  اننت کمار ہیگڑے کا متنازعہ بیان ، کہا ۔گاندھی جی کا ستیہ گرہ تھاڈرامہ
اننت کمار ہیگڑے نے مہاتما گاندھی کو کے 'مہاتما' کہلائے جانے پر بھی سوالات اٹھائے ہیں۔

بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ اور سابق مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڑے ایک بار پھر سرخیوں میں ہیں۔اننت کمار ہیگڑےنےمہاتماگاندھی کے ملک کی آذاد کے لئے گاندھی جی کے ذریعے کئے گئے ستیہ گرہ کوڈرامہ بتایاہے۔کرناٹک کےبنگلورومیں ایک پروگرام کےدوران ہیگڑے نےیہ متنازع بیان دیاہے۔انہوں نےکہاکہ اس وقت نام نہاد بڑےلیڈر وں نے ایک باربھی پولیس سےمارنہیں کھائی تھی۔ان بڑے لیڈروں نےانگریزوں کی اجازت کےبعدستیہ گرہ کاڈرامہ رچاتھا۔اننت کمار ہیگڑے نےمزید کہاکہ ستیہ گرہ کی وجہ سےانگریزوں نےبھارت نہیں چھوڑا۔بلکہ انگریزوں کےبھارت چھوڑنےکی وجہ انکی مایوسی تھی۔


اننت کمار ہیگڑے نے مہاتما گاندھی کو کے 'مہاتما' کہلائے جانے پر بھی سوالات اٹھائے ہیں۔ کرناٹک کےشما لی کرناک سے تعلق رکھنے والے لوک سبھا رکن نے اس ماضی میں ہندوستان کی آزادی کی جدوجہد کا حوالہ دیا۔ انہوں نے کہا ، 'پوری آزادی کی جدوجہد برطانوی حکومت کی اجازت اور حمایت سے کی گئی تھی۔ تحریک آزادی کے دوران ، کسی بھی نام نہاد رہنما نے پولیس کو ایک بار بھی نہیں مارا تھا۔ ایک بار بھی نہیں۔ گاندھی کی آزادی کی جدوجہد محض ایک بڑا ڈرامہ تھا۔


ہیگڑے اس پر باز نہیں آئے۔ انہوں نے مزید کہا ، 'دراصل ہندوستان کی آزادی کی جدوجہد کوئی حقیقی لڑائی نہیں تھی۔ یہ ہم آہنگی پر مبنی آزادی کی جدوجہد تھی

ہیگڑے نے کہا 'جب میں تاریخ پڑھتا ہوں تو ، میرا خون غصے سےکھولتا ہے۔ گاندھی جیسے لوگ جو ملک کو لیکر اس طرح کے ڈرامے کرتے تھے وہ ہمارے ملک میں مہاتما بن گئے۔ یہ کیسے ہوسکتا ہے؟ '
First published: Feb 03, 2020 11:34 AM IST