کرنول: 24 گھنٹوں میں خوف کے ماحول میں طالبات نے ہاسٹل کردیا خالی ۔ کیا ہے پورا معاملہ۔جانیں یہاں

اے پی ماڈل ریزیڈنشل اسکول میں خوفناک ماحول پایا جاتا ہے کیونکہ اسکول میں بھوت ہونے کی افواہ جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی

Jul 15, 2019 03:26 PM IST | Updated on: Jul 15, 2019 03:39 PM IST
کرنول: 24 گھنٹوں میں خوف کے ماحول میں طالبات نے ہاسٹل کردیا خالی ۔ کیا ہے پورا معاملہ۔جانیں یہاں

علامتی تصویر

آندھراپردیش کے ضلع کرنول کے سی بیلاگل گاوں کے نواح میں واقع اے پی ماڈل ریزیڈنشل اسکول میں خوفناک ماحول پایا جاتا ہے کیونکہ اسکول میں بھوت ہونے کی افواہ جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی جس کے نتیجہ میں طالبات ہاسٹل چھوڑ کر اپنے گھروں کو واپس ہورہی ہیں۔بھوت کی خبرہفتہ کو پھیلنا شروع ہوئی اوردیکھتے ہی دیکھتے اندرون 24گھنٹے کئی پریشان لڑکیوں نے ایک کے بعد دیگرے ہاسٹل چھوڑ دیا۔ان طالبات نے اپنے والدین کو طلب کرتے ہوئے ان سے درخواست کی کہ ان کو گھرواپس لے جایا جائے۔اس ہائی اسکول میں 75طالبات ہیں۔ ہاسٹل کی عمارت پہاڑی علاقہ میں ہے۔

جمعہ کو 11ویں جماعت کی طالبہ نے نصف شب کو ڈراونی اور رونے کی آوازیں سنیں۔ہفتہ کی صبح اس نے اپنے والدین کو طلب کیا اور ان کے ساتھ اپنے گاوں واپس چلی گئی۔اس طالبہ نے اپنی سہیلیوں سے اس واقعہ کا تذکرہ کیا اور دیکھتے ہی دیکھتے یہ خبر ہاسٹل میں رہنے والی تمام طالبات تک پہنچ گئی جس کے ساتھ ہی کئی طالبات نے اپنے بیگ پیک کرلئے اور ہاسٹل کو چھوڑ دیا۔اتوار کو ہاسٹل کے احاطہ میں یہ والدین کی بڑی تعداد دیکھی گئی جو اپنی بیٹیوں کو لے جانے کے لئے آئے تھے۔

Loading...

اگرچہ کہ اسکول حکام نے طالبات کے خوف کو ختم کرنے کی کوشش کی اور ان کے والدین کو لڑکیوں کی سلامتی کی یقین دہانی کروائی تاہم والدین اپنی بیٹیوں کو گھر لے کر چلے گئے۔اسکول کے پرنسپال بی کشور نے کہا کہ ایک طالبہ کی جانب سے یہ افواہ پھیلائی گئی ہے۔اگرچہ کہ اسکول حکام کی جانب سے ان طالبات کو بھوت کے نہ ہونے کے تعلق سے قائل کروانے کی کوشش کی گئی تاہم طالبات اپنے آبائی مقامات کو واپس چلی گئیں۔اسی دوران جنا وگناناویدیکا کے سکریٹری جنرل ایس سریش نے کہا کہ طالبات کو اس طرح کی توہم پرستی کے تعلق سے بیدار کرنے کی ضرورت ہے۔

Loading...