உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہندوستانی Missile گرتے ہی پاکستان میں مچ گیا تھا ہنگامہ، اٹھانے والا تھا یہ بڑا قدم!

    ہندوستانی Missile گرتے ہی پاکستان میں مچ گیا تھا ہنگامہ، اٹھانے والا تھا یہ بڑا قدم! ۔ فائل فوٹو ۔ عمران خان ۔

    ہندوستانی Missile گرتے ہی پاکستان میں مچ گیا تھا ہنگامہ، اٹھانے والا تھا یہ بڑا قدم! ۔ فائل فوٹو ۔ عمران خان ۔

    ہندوستانی پارلیمنٹ میں بدھ کو وزیر دفاع راجناتھ سنگھ (Defense Minister Rajnath Singh) نے نو مارچ کو انجانے میں ہوئی میزائل حادثہ کے بارے میں بتایا تھا کہ وہ روٹین رکھ رکھاو کے دوران تکنیکی خرابی کی وجہ سے فائر ہوگئی تھی ۔ اس سلسلہ میں جانچ جاری ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : ہندوستانی پارلیمنٹ میں بدھ کو وزیر دفاع راجناتھ سنگھ (Defense Minister Rajnath Singh) نے نو مارچ کو انجانے میں ہوئی میزائل حادثہ کے بارے میں بتایا تھا کہ وہ روٹین رکھ رکھاو کے دوران تکنیکی خرابی کی وجہ سے فائر ہوگئی تھی ۔ اس سلسلہ میں جانچ جاری ہے ۔ اس بیان کے بعد جمعرات کو امریکی نیوز ایجنسی بلومبرگ نے نامعلوم ذرائع کے حوالے سے دعوی کیا ہے کہ میزائل گرنے کی اطلاع ملتے ہی پاکستان  (Pakistan) نے ہندوستان پر جوابی حملہ کرنے کی تیاری کرلی تھی ۔ حالانکہ اس نے حملہ نہیں کیا ، لیکن میزائل داغنے کی پوری تیاری کرلی تھی ۔

      بلومبرگ کی ایک رپورٹ میں دعوی کیا گیا ہے کہ پاکستان نے جوابی حملے کی تیاری کرنے کے بعد حملہ نہیں کیا ۔ کچھ پاکستانی افسران کو شروعاتی اندازہ سے پتہ چل گیا تھا کہ کچھ گڑبڑ ہوگئی ہے اور غلطی کی وجہ سے میزائل چل گئی تھی ۔ رپورٹ کے مطابق ہندوستانی فضائیہ نے دہلی میں تقریبا 200 کلومیٹر دور ہریانہ کے امبالہ سے براہموس متوسط دوری کی کروز میزائل داغی تھی ، جو پاکستان کے میاں چننو علاقہ میں جاگری تھی ۔ اس میزائل نے کچھ رہائشی املاک کو نقصان پہنچایا ، لیکن کسی کی جان تلف نہیں ہوئی تھی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : 13 سالوں سے گردن کو ایک طرف جھکائے زندگی گزار رہی تھی پاکستانی بچی، 25 لاکھ روپے میں ملی نئی زندگی


      رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان نے پاکستان کو مطلع کرنے کیلئے دونوں فریقوں کے سینئر فوجی کمانڈروں کے درمیان براہ راست ہاٹ لائن کا استعمال نہیں کیا ، اس کی بجائے فضائیہ کے افسران نے فورا میزائل سسٹم کو بند کردیا تاکہ اس سے کوئی اور میزائل فائر نہ ہوجائے ۔ وزیر دفاع کے بیان کے بعد ہندوستانی فضائیہ اور وزارت دفاع نے الگ الگ اس پر بیان نہیں دیا ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : ڈنر کے دوران روسی صدر ولادیمیر پوتن نے کیا کچھ ایسا، ڈر سے کانپنے لگی تھی یہ ماڈل


      اس معاملہ میں امریکہ نے بھی ہندوستانی کی حمایت کی اور کہا کہ اس بات کا کوئی اشارہ  نہیں ہے کہ میزائل فائرنگ ایک غلطی کے علاوہ کچھ اور ہے ۔ محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے پیر کو کہا تھا کہ ہمار پاس کوئی اشارہ نہیں ہے کیونکہ آپ نے ہمارے ہندوستانی شراکت داروں سے بھی سنا ہے کہ یہ ایک حادثہ کے علاوہ کچھ بھی نہیں تھا ۔

      خیال رہے کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تعلقات 2019 کے بعد سے تاریخی نچلی سطح پر ہیں ۔ جب جموں و کشمیر کےپلوامہ میں ایک خودکش حملے میں فوجی اہلکار شہید ہوگئے تھے ، ہندوستان نے پاکستان کے بالاکوٹ میں فضائی حملے کرکے جواب دیا تھا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: