ہوم » نیوز » وطن نامہ

ہم کیسے مانیں پاکستان نے پاک مقبوضہ کشمیر میں بند کئے دہشت گرد کیمپ: آرمی چیف

پاکستان کہتا آرہا ہے کہ اب اس کے یہاں کوئی دہشت گرد کیمپ نہیں چل رہا ہے۔ بالاکوٹ میں ہندستان کی ایئر اسٹرائک کے بعد تو اس نے پاک مقبوضہ کشمیر میں بھی سبھی دہشت گرد کیمپ بند کرائے جانے کی بات کہی ہے۔

  • Share this:
ہم کیسے مانیں پاکستان نے پاک مقبوضہ کشمیر میں بند کئے دہشت گرد کیمپ: آرمی چیف
فوجی سربراہ بپن راوت

بالاکوٹ میں ہندستان کی ایئر اسٹرائک کے بعد پاکستان اب دنیا بھر کو یہ بتانے میں مصروف ہے کہ اس کی زمین پر کوئی بھی دہشت گرد کیمپ نہیں چل رہا ہے۔ دنیا بھر میں اپنی زمین پر دہشت گردی کو پلنے کی چھوٹ دینےوالے پاکستان نے دعویٰ کیا تھا کہ اس نے اپنی زمین پر دہشت گرد کیمپ بند کرا دئے ہیں۔ حالانکہ ہندستانی فوج نے اسےپڑوسی ملک کا دکھاوا اور دھوکہ مانا ہے۔ جب آرمی چیف جنرل بپن راوت سے اس سے جڑے سوال کئے گئے تو انہوں نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گرد کیمپ بند کئے ہیں یا نہیں اس کی حقیقی جانچ کرنے کا کوئی طریقہ نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم اپنی سرحدوں کی نگرانی جاری رکھیں گے۔ جس کا مطلب صاف ہے کہ ہندستان اپنےحفاظتی نظام کو پاکستان کے دعوؤں کے باوجود بھی ہلکا یا کم نہیں کرے گا۔ پاکستان نے کئی مرتبہ کہا ہے کہ اس کی سرزمیں پر ٹیرر کیمپ نہیں ہیں لیکن جب امریکہ اور ہندستان بنانے کی بات کہتے ہیں تو پاکستان سخت ایکشن لینے کا دکھاوا کرنے لگتا ہے۔

آرمی چیف نے کہا کہ دراندازی میں کمی آئے گی تو مانیں گے پاکستان نے لگام لگائی ہے

پیر کو آرمی چیف نے کہا ہے کہ دہشت گرد بند ہورہے ہیں یانہیں، ہمارے لئے ا کی حقیقی جانچ کرنا کافی مشکل ہے۔ دراصل پاکستان میں ایک۔دو دہشت گرد کیمپ نہیں ہیں۔ پاک مقبوضہ کشمیر م یں پاکستان نے دہشت گردوں کے کئی کیمپ کو تحفظ دے رکھا ہے۔

مولانا مسعود اظہر اور حافظ سعید جیسے بڑے دہشت گردوں کو تحفظ دینے سے یہ بات صاف ہے۔ ممبئی حملے کے ماسٹر مائنڈ حافظ سعید کو پاکستان کے شہروں میں گھوم۔گھوم کر ریلیاں کرتے دیکھا جاسکتا ہے۔ وہ پاک مقبوضہ کشمیر میں بھی آتا جاتا رہتا ہے۔

آرمی چیف بپن راوت نے یہ بھی کہا ہے ہم زمین پر اسکے نتیجے دیکھنے کا انتظار کریں گے۔ یہ ہماری زمین پر بڑی سطح مین دراندازی میں کمی آنے سے طے ہوگا کہ دہشت گردوں کوفوج اور اقتصادی مدد دینے پر لگام لگائی ہے۔
First published: Jun 10, 2019 09:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading