گجرات میں فسادات کے بعد پہلی بار اتری فوج، تشدد میں اب تک 9 افراد ہلاک

احمدآباد۔ گجرات میں پٹیل کمیونٹی کے لئے ریزرویشن کے مطالبہ کو لے کرجاری تحریک کے بعد ہوئے تشدد میں اب تک 9 لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔

Aug 27, 2015 09:12 AM IST | Updated on: Aug 27, 2015 09:12 AM IST
گجرات میں فسادات کے بعد پہلی بار اتری فوج، تشدد میں اب تک 9 افراد ہلاک

احمدآباد۔ گجرات میں پٹیل کمیونٹی کے لئے ریزرویشن کے مطالبہ کو لے کرجاری تحریک کے بعد ہوئے تشدد میں اب تک 9 لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔ احمد آباد اور سورت میں سب سے زیادہ کشیدگی ہے۔

حالات سے نمٹنے کے لئے وہاں فوج تعینات کر دی گئی ہے۔ گجرات فسادات کے بعد گزشتہ 13 سالوں میں یہ پہلا موقع ہے جب ریاست میں فوج کو تعینات کرنا پڑا ہے۔

Loading...

اس سے پہلے کچھ لوگوں نے ریل کی پٹریاں اکھاڑ دیں اور کوئلہ سے لدی ایک مال گاڑی میں آگ لگانے کی کوشش کی۔  اب تک بھڑکے تشدد میں ایک پولیس اہلکار سمیت نو لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔

مرکز نے ریاست کی مدد کے لئے 6 ہزار جوان گجرات میں بھیجے ہیں۔ پٹیل ریزرویشن تحریک کے رہنما ہاردک پٹیل نے بھی سوشل میڈیا پر لوگوں سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی ہے۔

بدھ کو وزیر اعظم نریندر مودی نے بھی گجرات کے لوگوں سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی تھی لیکن اس اپیل کا کوئی اثر نہیں ہوا۔

تشدد کا سب سے زیادہ اثر احمد آباد، سورت، مہسانا، راجکوٹ، جام نگر اور پاٹن اضلاع میں ہوا ہے۔

 

Loading...