ہوم » نیوز » وطن نامہ

اگلے 48 گھنٹوں میں پھر آ سکتا ہے طوفان،اب تک 100 لوگوں کی موت

اگلے 48 گھنٹوں میں پھر آ سکتا ہے طوفان،اب تک 100 لوگوں کی موت ہو گئی ہے۔

  • News18.com
  • Last Updated: May 03, 2018 06:18 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اگلے 48 گھنٹوں میں پھر آ سکتا ہے طوفان،اب تک 100 لوگوں کی موت
راجستھان کے بیکانیر میں موسم بدلنے کے بعد ایسا تھا نظارہ

نئی دہلی۔ شمالی ہندوستان کے کئی علاقوں میں بدھ کی دیر رات آئے آندھی اور طوفان سے زبردست نقصان ہوا ہے۔ اترپردیش اور راجستھان میں بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی ہے۔ راجستھان اور یوپی میں 79 کی موت کی تصدیق کی گئی ہے۔ اتر پردیش میں مجموعی طور پر 47 افراد جاں بحق ہوئے ہیں، جس میں آگرا میں سب سے زیادہ 36 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ راجستھان میں 32 افراد کی موت کی تصدیق ہوئی ہے۔ یو پی حکومت نے اگلے 48 گھنٹوں کے لئے الرٹ جاری کیا ہے۔


یوپی میں آندھی طوفان  کی وجہ سے 156 سے زیادہ مویشیوں کی بھی موت ہوئی ہے۔


وزیر اعظم نریندر مودی نے اس حادثے پر اظہار غم کرتے ہوئے ٹویٹ کیا ہے ۔انہوں نے لکھا ہے کہ "دھکی ہوں مہلوکین کے اہل خانہ کیلئے تعزیت کا اظہار کرتا ہوں،زخمیوں کی صحت یاب ہونے کی دعا کرتا ہوں"۔


اس معاملے میں راجستھان کی وزیر اعلی وسندھرا راجے نے ٹویٹ کر اطلاع دی کہ انہوں نے حکام اور وزیروں کو متاثرہ علاقوں میں بچاؤ اور راحت کے کام شروع کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ انہوں نے لکھا ہے کہ صورت حال کو قابو میں کرنے کے لئے مقامی ملازمین راحتی کام میں مصروف ہو گئے ہیں۔ اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے بھی متعلقہ اضلاع میں بھاری نقصان کے لئے معاوضہ جاری کرنے کا حکم دیا ہے۔



اتر پردیش کے آگرہ میں آنے والے کھیرا گڑھ ،فتح آباد ،پنہاٹ اور اچھنیرا میں آندھی طوفان سے سب سے زیادہ نقصان پہنچا ہے۔یہاں 100 سے زیادہ لوگ زخمی بتائے جا رہے ہیں۔تیز رفتار آندھی۔طوفان سے کھیتوں میں کٹے پڑے گیہوں کی فصل کو بھی کافی نقصان پہنچا ہے۔

فوٹو :نیوز 18

 

آندھی ۔طوفان سے بھاری تباہی اور ہلاکتوں پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کانگریس چیف سکریٹری اشوک گہلوت نے اپنی سال گرہ کی پارٹی رد کر دی ہے۔گہلوت نے ٹویٹ کر کے مرنے والے لوگوں اور ان ک اہل خانہ کیلئے اظہار تعزیت کیا ہے۔

راجستھان سے بوانی سنگھ اور یوپی سے اجیت سنگھ کے انپٹ کے ساتھ
First published: May 03, 2018 06:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading