کشمیروادی میں عیدالاضحیٰ منانے کےلئے پابندیوں میں دی جائےگی نرمی

ذرائع نے نیوز18 کوبتایا کہ مقامی انتظامیہ نے پابندیاں ہٹانےکولےکرتیاریاں شروع کردی ہیں۔ ایک سرکاری افسرنےکہا کہ مقامی انتظامیہ کافی حساس ہے، لیکن لوگوں کےلئےعید الاضحیٰ کی اہمیت کودھیان میں رکھتے ہوئےمنصوبہ بنایا جارہا ہے۔

Aug 07, 2019 10:32 PM IST | Updated on: Aug 07, 2019 10:35 PM IST
کشمیروادی میں عیدالاضحیٰ منانے کےلئے پابندیوں میں دی جائےگی نرمی

مقامی انتظامیہ نےعیدالاضحیٰ پرپابندیوں ہٹانےکولےکرتیاریاں بھی شروع کردی ہیں۔

دفعہ -370 ہٹانے سے پہلےہی جموں وکشمیر میں امن وامان بنائے رکھنے کےلئے حکومت نے کئی طرح کی پابندیاں لگا دی ہیں، جواب بھی نافذ ہیں۔ اب حکومت کشمیروادی کے لوگوں کوعیدالاضحیٰ منانے کےلئے پابندیوں میں نرمی برتنے پرغورکررہی ہے۔ ذرائع نے نیوز18 کوبتایا کہ مقامی انتظامیہ نے پابندیاں ہٹانےکولےکرتیاریاں شروع کردی ہیں۔ ایک سرکاری افسرنےکہا کہ مقامی انتظامیہ کافی حساس ہے، لیکن لوگوں کےلئےعید کی اہمیت کودھیان میں رکھتے ہوئے منصوبہ بنایا جارہا ہے۔

ڈوبھال ہرگھنٹے کررہے ہیں سیکورٹی انتظامات کا جائزہ

Loading...

افسرنےکہا کہ کوئی بھی قدم اٹھاتے وقت لوگوں کی سیکورٹی اورعید کے تیوہارکو دھیان میں رکھا جائے گا۔ پورے ملک میں 12 اگست کوعیدالاضحیٰ منائی جائے گی۔ اعلیٰ ذرائع کے مطابق، قومی سلامتی مشیر (این ایس اے) اجیت ڈوبھال (اجیت ڈوبھال) ہرگھنٹے سیکورٹی انتظامات کا جائزہ لے رہے ہیں۔ اتوارکوپابندیاں لگانے کے بعد سےاب تک کشمیر وادی کے کچھ علاقوں میں معمولی حادثے ہوئے ہیں۔

پارلیمنٹ نے منگل کودفعہ -370 ہٹانے پرلگائی تھی مہر

وزیرداخلہ امت شاہ نے پیرکوراجیہ سبھا میں دفعہ -370 کوہٹانے کے لئے ایک قرارداد پیش کیا۔ ساتھ ہی جموں وکشمیرکو مرکزکے زیرانتظام دو خطوں میں تقسیم کرنےکےلئےایک بل بھی پیش کیا۔ راجیہ سبھا میں لمبی بحث کے بعد دفعہ -370 کوہٹا کرریاست کی تشکیل نوکو منظوری دے دی گئی۔ اس کےاگلے دن منگل کولوک سبھا میں بھی اسے منظوری دیتے ہوئے صوبے کی تشکیل نو پرمہرلگا دی گئی۔

Untitled-25

آج شوپیاں پہنچ کرلوگوں سے ملے قومی سلامتی کے مشیر

قومی سلامتی کے مشیراجیت ڈوبھال دفعہ 370 ہٹنےکےبعد ان دنوں جموں وکشمیرمیں ہیں۔ اتنا ہی نہیں وہاں انہوں نے مقامی لوگوں سے بات چیت کرتے ہوئےان کے ساتھ کھانا بھی کھایا۔ جموں وکشمیرکوخصوصی ریاست کا درجہ دینے والے دفعہ 370 اوردفعہ 35 اے منسوخ کئے جانےکے بعد ڈوبھال یہاں پہنچے ہیں۔ ڈوبھال کےاس دورے کی تصویریں نیوز ایجنسی اے این آئی نے جاری کی ہیں۔ ڈوبھال یہاں شوپیاں پہنچے تھے۔ جہاں انہوں نے مقامی لوگوں سے ملاقات کی۔ ڈوبھال پیرکوہی جموں وکشمیرپہنچ گئے تھے۔ اس دورے میں انہوں نے ریاست کےگورنرستیہ پال ملک اورپولیس محکمہ کےافسران سے بات چیت کی۔

Jammu and kashmir.....

ڈوبھال نے کہا - سب لوگ آرام سے رہیں

اجیت ڈوبھال کےاس دورے کا ایک ویڈیوبھی اے این آئی نےجاری کیا ہے، جس میں وہ مقامی لوگوں سے چرچا کرتے نظرآرہے ہیں۔ ڈوبھال نےلوگوں سے دفعہ 370 اوردفعہ 35 اے پر تبادلہ خیال کیا۔ ڈوبھال نے پوچھا کیا لگ رہا ہےآپ لوگوں کو۔ اس پرجواب ملتا ہے' اچھا لگ رہا ہے'۔  ڈوبھال نےکہا کہ سب لوگ آرام سے رہیں۔ خدا جو بھی کرتا ہے بھلائی کےلئےکرتا ہے۔ نیک انسانوں کی دعاوں میں اثرہوتا ہے۔ آپ لوگ بالکل ممتحن رہئے۔ سب کچھ اچھا ہوگا۔

Loading...