உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    انتخابی تشہیر کے درمیان اروندکجریوال نے کھیلا ایودھیا تیرتھ یاترا کارڈ

    انتخابی تشہیر کے درمیان اروندکجریوال نے کھیلا ایودھیا تیرتھ یاترا کارڈ

    انتخابی تشہیر کے درمیان اروندکجریوال نے کھیلا ایودھیا تیرتھ یاترا کارڈ

    وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ دہلی حکومت نے یاتریوں کو روانہ کرنے کے لیے اسٹیشن پر ایک پروگرام منعقد کیا تھا۔ مرکزی حکومت نے پروگرام کی اجازت دینے سے انکار کر دیا تھا۔ میں مرکزی حکومت کو بتانا چاہتا ہوں کہ اس قسم کا رویہ ٹھیک نہیں ہے۔

    • Share this:
    دہلی کا صفدر جنگ ریلوے اسٹیشن  آج 'ہمارا شرون کمار کیجریوال' کے نعروں سے گونج اٹھا۔ 'مکھیہ منتری تیرتھ یاترا' اسکیم کے تحت ایودھیا درشن کے لئے دہلی سے یاتریوں کی پہلی ٹرین کی روانگی کا۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال خود ریلوے اسٹیشن گئے اور ایودھیا درشن کے لیے جانے والی دہلی کے بزرگوں کی ٹرین کو ہری جھنڈی دکھائی۔ وزیر اعلیٰ نے مسافروں سے بات کی اور دہلی حکومت کی طرف سے مسافروں کے لئے کئے گئے انتظامات کا جائزہ لیا۔ اس دوران یاترا پر جانے والے یاتریوں میں زبردست جوش و خروش کا ماحول تھا اور انہوں نے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو دل سے دعا کی۔  وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ دہلی حکومت نے یاتریوں کو روانہ کرنے کے لئے اسٹیشن پر ایک پروگرام منعقد کیا تھا۔

    مرکزی حکومت نے پروگرام کی اجازت دینے سے انکار کر دیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ میں مرکزی حکومت کو بتانا چاہتا ہوں کہ اس قسم کا رویہ ٹھیک نہیں ہے۔ بڑھاپے میں کسی کو سفر کا موقع ملے تو اس کی خوشی کی کوئی انتہا نہیں رہتی۔ مجھے یاتریوں سے ملنا اور انہیں خوش دیکھنا بہت اچھا لگتا ہے، ان کی دعا چاہتا ہوں۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال کی ہدایت پر دہلی حکومت کی وزیر اعلی یاترا اسکیم کے تحت آج دہلی سے یاتریوں کی پہلی کھیپ ایودھیا درشن کے لئے روانہ ہوئی جس میں تقریباً ایک ہزار لوگ شامل تھے۔ ٹرین صفدرجنگ ریلوے اسٹیشن سے دہلی سے مسافروں کے ایک کھیپ کو لے کر روانہ ہوئی،جسے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کیا۔ پہلے یاتریوں کو بس کے ذریعے ریلوے اسٹیشن لایا گیا، جہاں دہلی حکومت کی جانب سے یاتریوں کو رخصت کرنے کے لیے ریلوے اسٹیشن پر ایک پروگرام منعقد کیا گیا۔

    دہلی حکومت کی اس اسکیم کے تحت ایودھیا کے درشن کے لیے جانے والے بزرگوں میں زبردست جوش و خروش دیکھا گیا اور انھوں نے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو دل کی گہرائیوں سے دعائیں دیں۔
    دہلی حکومت کی اس اسکیم کے تحت ایودھیا کے درشن کے لیے جانے والے بزرگوں میں زبردست جوش و خروش دیکھا گیا اور انھوں نے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو دل کی گہرائیوں سے دعائیں دیں۔


    دہلی حکومت کی اس اسکیم کے تحت ایودھیا کے درشن کے لیے جانے والے بزرگوں میں زبردست جوش و خروش دیکھا گیا اور انھوں نے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو دل کی گہرائیوں سے دعائیں دیں۔ اس دوران یاتریوں نے ہمارا شرون کمار ’’کیجریوال‘‘ کے نعرے لگائے۔ اس دوران وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے کہا کہ ایک طرح سے ہمارے والدین، ہمارے بہت سے بزرگ بھگوان شری رام چندر جی کے درشن کرنے آج ایودھیا گئے ہیں۔ یہ بہت اچھی بات ہے اور خوشی کی بات ہے۔ میں ان سب لوگوں سے ملنے آیا ہوں۔ سب بہت خوش ہیں۔ بڑھاپے میں کسی کو سفر کا موقع ملے تو اس کی خوشی کی کوئی انتہا نہیں ہوتی۔ ہر کوئی ایودھیا درشن کے لیے جا رہا ہے۔ وہاں سے وہ دہلی اور دہلی کے لوگوں کے لیے دعائیں لے کر آئیں گے۔  مجھے سب سے ملنا اور سب کو خوش دیکھنا پسند ہے۔ کورونا کی وجہ سے ہم اپنے یاتریوں کے منصوبے کے تحت لوگوں کو یاتریوں پر بھیجنے کا عمل رک گیا تھا ، اب کورونا کچھ کم ہو گیا ہے۔ اسی لیے ہم نے یاترا دوبارہ شروع کی ہے، جس کے تحت آج پہلی ٹرین ایودھیا گئی ہے۔ اب ٹرین دیگر یاترا مقامات رامیشورم، پوری، ہریدوار، رشی کیش، اجمیر شریف سمیت ہر جگہ جائے گی۔ اس یاترا میں تقریباً ایک ہزار لوگ جا رہے ہیں۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ٹویٹ کیا اور کہا، "دہلی حکومت نے یاتریوں کو روانہ کرنے کے لیے اسٹیشن پر ایک پروگرام کا اہتمام کیا تھا۔ مرکزی حکومت نے پروگرام کی اجازت دینے سے انکار کر دیا تھا۔ اب میڈیا کو بھی یاتریوں سے بات کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔ میں مرکزی حکومت کو بتانا چاہتا ہوں کہ اس قسم کا رویہ ٹھیک نہیں ہے۔  خیر خدا آپ کو خوش رکھے۔"

    کیجریوال نے مسافروں سے بات کی، سسٹم کا جائزہ لیا
    وزیر اعلی اروند کیجریوال نے بطور شرون کمار ایودھیا کو وزیر اعلیٰ یاترا اسکیم کی سفری فہرست میں شامل کرکے نہ صرف اپنے دہلی کے بزرگوں کے لیے ایودھیا جانے کی راہ ہموار کی بلکہ مسافروں کو ایودھیا بھیجنے کے لیے خود صفدرجنگ ریلوے اسٹیشن بھی آئے۔ اس دوران وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ہر بوگی میں بیٹھے یاتریوں سے بات کی اور ان کی خیریت کی دعا کی۔  وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے مختلف بوگیوں میں گئے اور کچھ دیر بزرگوں سے بات کی۔ ٹرین میں بیٹھے ہوئے یاتریوں کا جوش و خروش دیکھنے کے قابل تھا کہ وہ اپنے درمیان وزیر اعلی اروند کیجریوال کو دیکھ سکیں اتنے قریب سے۔ اس دوران بزرگوں نے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کے سر پر ہاتھ رکھ کر انہیں آشیرواد دیا۔ اس دوران وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے یاتریوں کے لیے دہلی حکومت کی طرف سے کیے گئے تمام انتظامات کا بھی جائزہ لیا۔ وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے بزرگوں کے ساتھ یاترا پر جانے والے متعلقہ افسران کو بھی ہدایت دی کہ وہ ان کی سہولیات کا پورا خیال رکھیں۔ بزرگوں نے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو بہت دعا دیں۔ اس کے ساتھ ان کے حق میں زبردست نعرے بازی بھی کی گئیں۔
    دہلی کے بزرگ جنوری میں کرتار پور صاحب اور ویلنکنی کی یاترا پر جائیں گے
    چیف منسٹر تیرتھ یاترا یوجنا کے تحت دہلی کے بزرگ جنوری میں کرتارپور صاحب اور ویلنکنی کی یاترا پر جائیں گے۔ اب چیف منسٹر تیرتھ یاترا یوجنا کے تحت 15 یاتری مقامات کی سیر کی جاسکتی ہے۔  ابھی حال ہی میں وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کی ہدایت پر ویلنکنی اور کرتارپور صاحب یاتریوں کو بھی اس میں شامل کیا گیا ہے۔ دہلی سے ویلنکنی زیارت گاہ جانے والے مسافروں کو دہلی حکومت کی طرف سے اے سی تھری ٹائر ٹرین میں سیٹ فراہم کی جائے گی۔ اس کے ساتھ ہی دہلی کے یاتریوں کو ڈیلکس اے سی بس کے ذریعے کرتار پور صاحب بھیجنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ مسافروں کی پہلی کھیپ AC بس کے ذریعے دہلی سے کرتارپور صاحب کے لیے 05 جنوری 2022 کو روانہ ہوگی اور دہلی سے ویلنکنی یاترا کے لیے مسافروں کو لے جانے والی پہلی ٹرین 07 جنوری 2022 کو روانہ ہوگی۔ قابل ذکر ہے کہ کووڈ-19 کی وجہ سے چیف منسٹر یاترا اسکیم کو روک دیا گیا تھا۔ اس دوران 15 ہزار لوگوں نے یاترا کے لیے درخواستیں دی تھیں لیکن سفر پر پابندی کی وجہ سے یہ لوگ اس اسکیم کا فائدہ نہیں اٹھا سکے۔ اب ایسے درخواست گزاروں کو ان کے رجسٹرڈ موبائل پر ایس ایم ایس بھیجا جائے گا۔ اگر وہ ایودھیا جانے کے خواہشمند ہیں، تو انہیں دہلی-ایودھیا-دہلی روٹ کا انتخاب کرنے کے لیے ای-ڈسٹرکٹ پورٹل پر اپنی درخواستوں میں ترمیم کرنی ہوگی۔ نیز، انہیں ویکسینیشن کی دونوں خوراکوں کی رسید کا سرٹیفکیٹ اپ لوڈ کرنے کے آپشن کے بارے میں بھی مطلع کیا جائے گا۔  دہلی حکومت اس اسکیم کے تحت سفر کے دوران تمام اے سی ٹرینوں اور اے سی بسوں میں مسافروں کے ساتھ ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کی ایک ٹیم بھیجے گی۔
    کیجریوال حکومت اب تک 35 ہزار سے زیادہ بزرگوں کی یاترا کر چکی ہے
    دہلی حکومت کی مہتواکانکشی مکھی منتری تیرتھ یاترا یوجنا کا آغاز وزیر اعلی اروند کیجریوال نے 12 جولائی 2019 کو کیا تھا۔ اس اسکیم کے تحت دہلی حکومت دہلی کے بزرگ شہریوں کو یاترا کے لیے مفت سفری پیکج فراہم کرتی ہے۔  فی اسمبلی کے حساب سے 1100 رہائشی سالانہ اس سہولت سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ اس اسکیم کے تحت تمام ودھان سبھا سمیت ہر سال کل 77,000 یاتریوں پر جاسکتے ہیں۔  اس کے باقاعدہ آغاز کے بعد سے، دہلی کے 35080 بزرگوں نے اس اسکیم کے تحت یاترا کی ہے۔
    کون درخواست دے سکتا ہے؟
    کوئی بھی شخص جو دہلی کا رہائشی ہے اور اس کی عمر 60 سال یا اس سے زیادہ ہے اس اسکیم (MMTY) کے تحت درخواست دے سکتا ہے۔ اس کے علاوہ، 21 سال سے زیادہ عمر کے ایک اٹینڈنٹ کو بھی بزرگ شہری لے جا سکتے ہیں۔ اہلیت کی شرائط کو پورا کرنے والا کوئی بھی شخص اپنی زندگی میں صرف ایک بار اس اسکیم سے فائدہ اٹھا سکتا ہے۔
    کہاں اپلائی کریں؟
    اسکیم کے تحت فوائد حاصل کرنے کے لیے درخواست دہلی حکومت کے ای-ضلع پورٹل پر جمع کی جا سکتی ہے۔ مستفید ہونے والوں کو دستیابی سے مشروط اے سی تھری ٹائر اور ڈیلکس اے سی بسوں میں سفر کرنے کی سہولت دی جائے گی۔ اس کے علاوہ مسافروں کو اے سی ہوٹلوں میں بھی ٹھہرایا جاتا ہے۔
    منصوبہ کے تحت راستہ
    1. دہلی-امرتسر-واہگہ بارڈر-آنند پور صاحب-دہلی 2. دہلی-اجمیر شریف -پشکر-دہلی 3. دہلی-رامیشورم-مدورائی-دہلی 4. دہلی-جگن ناتھ پوری-کونارک-بھونیشور-دہلی 5. دہلی-ویشنو دیوی-جموں-دہلی 6. دہلی-تروپتی بالاجی-دہلی 7. دہلی-متھرا-ورنداون-آگرہ-فتح پور سیکری-دہلی 8. دہلی-ہریدوار-رشیکیش-نیلکنٹ-دہلی 9.Delhi-Dwarkadhish-Somnath-Delhi 10. دہلی-شرڈی- شانی شنگلا پور- ترمبکیشور- دہلی 11. دہلی-اجین-اومکاریشور-دہلی 12. دہلی-گیا- وارانسی- دہلی 13۔نئی دہلی-ایودھیا-نئی دہلی 14.Delhi-Velankanni-Delhi 15. دہلی-کرتارپور صاحب-دہلی

    قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے  نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: