உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیجریوال نےکہا- لاک ڈاون کی سختی سے دہلی میں تھمنےلگا کورونا وائرس کا قہر

    اروند کیجریوال نےکہا- لاک ڈاون کی سختی سے دہلی میں تھمنےلگا کورونا کا قہر

    اروند کیجریوال نےکہا- لاک ڈاون کی سختی سے دہلی میں تھمنےلگا کورونا کا قہر

    دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نےکہا کہ دہلی میں ساتویں ہفتے میں 850 کیسز سامنے آئے تھے اور 21 افراد کی موت ہوئی تھی جبکہ آٹھویں ہفتے میں 622 نئے کیسز آئے اور 9 افراد کی موت ہوئی ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی: دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نےکہا کہ دہلی میں لاک ڈاؤن پر سختی سے عمل درآمد ہونے کے سبب کورونا کی وبا اب تھمنے لگی ہے اور حکومت کی جانب سے پلازما تھیریپی سے کئے جانے والے سنگین مریضوں کے علاج کے نتائج بھی مزیدحوصلہ افزا سامنے آرہے ہیں۔ اروند کیجریوال نے اتوار کوصحافیوں سےکہا کہ دہلی میں ساتویں ہفتے میں 850 کیسز سامنے آئے تھے اور 21 افراد کی موت ہوئی تھی جبکہ آٹھویں ہفتے میں 622 نئے کیسز آئے اور 9 افراد کی موت ہوئی ہے۔ ساتویں ہفتےکے مقابلے آٹھویں ہفتے میں کم مریض سامنے آئے ہیں۔ ایل این جے پی میں کل آنے والے ایک مریض کی حالت بےحد نازک تھی، لیکن پلازما دینے کے بعد ان کی طبیعت ٹھیک ہو رہی ہے۔

      وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نےکہا کہ آج تمام مذاہب کے افراد اپنا پلازما دے کر ایک دوسرے کی جان بچا رہے ہیں۔ مالک نے انسانوں کو پیدا کرنے میں کوئی تفریق نہیں کی۔ یہ تفریق ہماری پیدا کردہ ہے۔ اگر ملک میں تمام مذاہب کے لوگ یکجا ہو جائیں تو پوری دنیا ہندوستان کے آگے جھکنے کو مجبور ہو جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں کورونا سے سبق لینا چاہئے۔ اگر آپ کے دل میں کسی دوسرے مذہب کے شخص کے تئیں فرسودہ خیال پیدا ہو تو یہ سوچ لینا کہ کل اس کا پلازما آپ کی زندگی بھی بچا سکتا ہے۔

      وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نےکہا کہ آج تمام مذاہب کے افراد اپنا پلازما دے کر ایک دوسرے کی جان بچا رہے ہیں۔
      وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نےکہا کہ آج تمام مذاہب کے افراد اپنا پلازما دے کر ایک دوسرے کی جان بچا رہے ہیں۔


      وزیر اعلیٰ کیجریوال نےکہا کہ گذشتہ ایک ہفتہ، اس کے پہلے والے ہفتے سے اچھا گذرا ہے۔ گذشتہ ایک ہفتے میں اس کے پہلے والے ہفتے سے کم کیسز آئے ہیں۔ کم افراد کی موت ہوئی جبکہ زیادہ لوگ صحتیاب ہوکر اپنے گھروں کو گئے۔ کورونا جب سے شروع ہوا، اس کے ساتویں ہفتے میں 850 کیسز آئے تھے۔ یہ دیکھ کر ہم ایک بارکوگھبرا گئے تھے۔ ہم نےکہا بھی تھا کہ دہلی میں کورونا بہت تیزی سے پھیلتا ہے۔ ہفتہ در ہفتہ، دوگنا، 16 گنا بڑھتا جاتا ہے۔ دہلی میں ساتویں ہفتے میں 21 افراد کی موت ہوئی تھی اور گذشتہ (آٹھویں) ہفتے میں 9 افراد کی موت ہوئی ہے۔

      دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نےکہا کہ دہلی میں ساتویں ہفتے میں 850 کیسز سامنے آئے تھے اور 21 افراد کی موت ہوئی تھی جبکہ آٹھویں ہفتے میں 622 نئے کیسز آئے اور 9 افراد کی موت ہوئی ہے۔
      دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نےکہا کہ دہلی میں ساتویں ہفتے میں 850 کیسز سامنے آئے تھے اور 21 افراد کی موت ہوئی تھی جبکہ آٹھویں ہفتے میں 622 نئے کیسز آئے اور 9 افراد کی موت ہوئی ہے۔


      کیجریوال نےکہا کہ جمعہ کی رات وزارت داخلہ نے کچھ دوکانوں کو کھولنے کی اجازت دی ہے، دہلی حکومت اس فیصلے کو نافذ کررہی ہے۔ ضروری خدمات سے منسلک کِرانا، پھل اور سبزی وغیرہ کی دوکانیں حسب معمول کھیلں گی۔ انہوں نے واضح طور پرکیا کہ کنٹرول زون میں کوئی نرمی نہیں ہوگی۔ حکومت ان علاقوں کو کنٹرول زون قرار دیتی ہے، جہاں وائرس کےکیسز زیادہ سامنے آ رہے ہیں اور دارالحکومت میں فی الحال ایسے 92 زون ہیں۔ انہوں نےکہا دہلی حکومت میں کچھ وقت سے کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں کمی آئی ہے۔ گذشتہ ہفتے 622 مریض آئے۔ کافی تعداد میں مریض ٹھیک بھی ہوئے ہیں۔ موتیں کم ہوئی ہیں۔ دہلی میں کورونا کے 2625 مریض ہیں جبکہ 54 اموات ہوئی ہیں۔ وزیر اعلیٰ نےکہا کہ وہ خود ایک ایک مریض پر نظر رکھ رہے ہیں۔ ایک ایک شخص کی جان قیمتی ہے۔ مشکل وقت ہے اور ہر کسی کو مل کر، ساتھ چلنےکی ضرورت ہے۔ اتنی محنت سےکورونا وائرس پر قابو پانے میں جو مدد ملی ہے، اسے آگے بھی برقرار رکھنا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: