ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

Cyclone Tauktae:طوفان’توک تائی‘ کی شدت میں مسلسل اضافہ،ہندوستانی بحریہ کی جانب سےمتاثرہ ریاستوں کی مدد

طوفان ’توک تائی‘کی شدت میں بے تحاشہ اضافہ ہوا ہے۔ حکام نے بتایا کہ 18 مئی کی صبح کو یہ طوفان گجرات کے ساحل کو چھوئے گا۔آئی ایم ڈی نے ٹویٹ کیا کہ لکشادیپ کے علاقے اور اس سے ملحقہ جنوب مشرقی اور مشرقی وسطی بحیرہ عرب پر طغیانی طوفان ’توک تائی‘ (Tauktae) میں شدت پیدا ہوگئی ہے۔

  • Share this:
Cyclone Tauktae:طوفان’توک تائی‘ کی شدت میں مسلسل اضافہ،ہندوستانی بحریہ کی جانب سےمتاثرہ ریاستوں کی مدد
طوفان ’تٰوتے' کی شدت میں مسلسل اضافہ

ہندوستانی محکمہ موسمیات (Meteorological Department) نے ٹویٹ کیا ہے کہ طوفان ’توک تائی‘ اس وقت لکشدیپ کے ساحل سمندر تک پہنچ گیا ہے۔ طوفان ’توک تائی‘ کی شدت میں بے تحاشہ اضافہ ہوا ہے۔ حکام نے بتایا کہ 18 مئی کی صبح کو یہ طوفان گجرات کے ساحل کو چھوئے گا۔آئی ایم ڈی نے ٹویٹ کیا کہ لکشادیپ کے علاقے اور اس سے ملحقہ جنوب مشرقی اور مشرقی وسطی بحیرہ عرب پر طغیانی طوفان ’توک تائی‘ (Tauktae) میں شدت پیدا ہوگئی ہے۔


چونکہ مغربی ساحل سمندری طوفان ساحل سے ٹکرانے کے لئے تیار ہے۔ اسی لیے ہندوستانی بحریہ نے ریاستی انتظامیہ کو تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔ نیوی کے ترجمان کے ایک ٹویٹ میں کہا گیا ہے کہ بحریہ کے بحری جہاز، طیارے، ہیلی کاپٹر، غوطہ خور اور تباہی سے متعلق امدادی ٹیمیں ریاستی انتظامیہ کو مکمل مدد فراہم کرنے پر کھڑی ہیں کیونکہ یہ طوفان ہندوستان کے مغربی ساحل کے قریب پہنچ رہا ہے‘‘۔



جمعہ کے روز آئی ایم ڈی حکام نے بتایا کہ یہ چکرواتی سرگرمی ساحل پٹی میں 16 اور 18 مئی کے درمیان بارش یا گرج چمک کے ساتھ بارش کرے گی۔ اس خطے کے کچھ مقامات پر پیر اور منگل کو شدید سے شدید بارش ہوئی ہے۔اس پیش گوئی کے پیش نظر گجرات کی تمام بندرگاہوں سے کہا گیا ہے کہ وہ ماہی گیروں کو سمندر میں جانے کے بارے میں متنبہ کریں۔

احمدآباد کے محکمہ موسمیات سنٹر کی اسسٹنٹ ڈائریکٹر منورما موہنتی نے بتایا کہ ’’ابھی تک اس بارے میں کوئی پیش گوئی نہیں آئی ہے کہ آیا یہ گجرات کے ساحل پر لینڈ لینڈ کرے گا اور کل ہی اس کی واضح تصویر سامنے آجائے گی‘‘۔

تاہم گجرات حکومت نے تمام ساحلی اضلاع کے کلکٹروں کو آگاہ کیا ہے کہ وہ لوگوں کی حفاظت کے لئے ضروری اقدامات کریں۔ اگرچہ مقامی حکام کو پہلے ہی ہدایت دی گئی تھی کہ وہ ماہی گیروں کو متنبہ کریں اور اگر وہ سمندر میں ہیں تو انہیں ساحل پر واپس لائیں۔ وہیں ساحل پر رہنے والوں کو احتیاطی تدابیر کے طور پر بحری جہاز میں جانے سے روک دیا گیا ہے جب تک کہ صورتحال بہتر نہ ہو۔


موہنتی نے کہا سمندری طوفان کو قریب آنے والے طوفان کے بارے میں آگاہ کرنے کے لئے گجرات کی تمام بندرگاہوں کو ’’دور دراز احتیاطی سگنل نمبر 2’ (Distant Cautionary Signal Number 2) لہرانے کو کہا گیا ہے۔ دریں اثنا نیشنل ڈیزاسٹر ریسپانس فورس (National Disaster Response Force) نے طوفان کے اثرات کے بعد ممکنہ اثرات سے نمٹنے کے لئے 53 ٹیموں کا انتخاب کیا ہے۔

این ڈی آر ایف کے ایک اعلی عہدے دار نے پہلے کہا ہے کہ کیرالہ، کرناٹک، تمل ناڈو، گجرات اور مہاراشٹرا کے ساحلی علاقوں میں بھی ایسی ہی ٹیمیں تعینات ہیں۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 15, 2021 02:04 PM IST