ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش اسمبلی میں آج ہوگافلور ٹیسٹ:کمل حکومت رہےگی برقراریاریاست میں کھل گاکمل؟

مدھیہ پردیش اسمبلی سکریٹریٹ کی جانب سے جاری کردہ ایجنڈے کے مطابق فلو رٹیسٹ کا وقت دوپہر 2 بجے مقرر کیا گیا ہے۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش اسمبلی میں آج ہوگافلور ٹیسٹ:کمل حکومت رہےگی برقراریاریاست میں کھل گاکمل؟
مدھیہ پردیش : کمل ناتھ حکومت رہی گی برقرار یا ریاست میں کھل جائیگا کمل؟ آج ہوسکتاہے فلور ٹیسٹ

بھوپال: سپریم کورٹ کے حکم کے بعد مدھیہ پردیش میں سیاسی درجہ حرارت میں اضافہ ہوگیاہے۔ ریاست میں سیاسی سرگرمیاں عروج پر ہیں۔ اسمبلی سکریٹریٹ نے دیر رات ایجنڈا جاری کردیاہے۔ کمل ناتھ حکومت کو آج ایوان میں اپنی اکثریت ثابت کرنی ہے۔ کانگریس اور بی جے پی دونوں نے اپنےارکان اسمبلی کو وہپ جاری کیا ہے۔مدھیہ پردیش اسمبلی سکریٹریٹ کی جانب سے جاری کردہ ایجنڈے کے مطابق فلو رٹیسٹ کا وقت دوپہر 2 بجے مقرر کیا گیا ہے۔


مدھیہ پردیش اسمبلی میں ارکان کی صورتحال


مدھیہ پردیش اسمبلی میں کل 230 نشستیں ہیں۔ ان میں سے 2 ارکان اسمبلی کی موت کی وجہ سے 2 نشستیں خالی ہیں۔ اس طرح سے ، کل 228 ارکان اسمبلی ہے ۔جن میں سے 22 باغی کانگریس کےارکان اسمبلی کا استعفی اسپیکر نے قبول کرلیا ہے۔ اس طرح سے ، اب 206 ارکان اسمبلی باقی ہیں۔ اپنی اکثریت ثابت کرنے کے لئے حکومت کو 104 ارکان اسمبلی کی ضرورت ہے ۔لیکن کانگریس کے پاس اس وقت صرف 92 ارکان ہے ۔ کمل ناتھ حکومت کی حمایت کرنے والے سماج وادی پارٹی ، بہوجن سماج وادی پارٹی اور آزاد امیدواروں کی کل تعداد 7 ہے ۔جس کے بعد یہ تعداد 99 تک پہنچ جاتی ہے۔ یعنی اکثریت سے 5 قدم دور ہے۔بی جے پی کے 107 ارکان اسمبلی ہیں۔ تاہم ، وہ صرف 106 ارکان کا دعوی کررہی ہیں۔ انہوں نے گورنر کے سامنے پریڈ میں 106 ارکان کوہی پیش کیاتھا۔ پارٹی نے اپنے رکن اسمبلی نارائن تریپاٹھی کا نام اس فہرست میں شامل نہیں کیا۔


سپریم کورٹ میں ہوئی تھی سماعت

یادرہے کہ سپریم کورٹ نے مدھیہ پردیش میں سیاسی بحران کے حل کے لئے جمعہ کو ہی اسمبلی میں فلور ٹیسٹ کرانے کا حکم دیا ہے۔جسٹس وائی چندر چوڑ اور جسٹس ہیمنت گپتا کی بنچ نے دو دن تک جاری رہنے والی مراتھن سماعت کے بعد جمعرات کو یہ حکم جاری کیا۔دیر شام تک سماعت کرنے کے بعد بنچ نے کچھ وقت کا وقفہ لیا۔ تقریباً چھ بجے عدالت حکم سنانے کے لئے بیٹھی۔

عدالت نے کہا کہ مدھیہ پردیش میں کل اسمبلی کا سیشن بلایا جائے گا اور شام پانچ بجے تک فلور ٹسٹ کا کام مکمل کرنا ہوگا۔عدالت نے پوری کارروائی کی ویڈیو ریکارڈنگ کرانے کا بھی حکم دیا ہے۔بنچ نے کہا کہ 16 باغی رکن اسمبلی اگر آنا چاہتے ہیں تو کرناٹک کے ڈائرکٹر جنرل آف پولیس اور مدھیہ پردیش کے ڈائرکٹر جنرل آف پولیس انہیں سکیورٹی فراہم کرائیں گے۔

یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ
First published: Mar 20, 2020 08:41 AM IST