ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

اسد الدین اویسی نے ظاہر کیا اندیشہ، ’اب شری کرشن جنم بھومی پر بھی پُرتشدد مہم شروع کرے گا آر ایس ایس

مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اور رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے (Asaduddin Owaisi) ٹوئٹ کیا، ’جس بات کا خوف تھا وہی ہو رہا ہے۔ بابری مسجد سے متعلق فیصلوں کی وجہ سے آر ایس ایس کے لوگوں کے ارادے اور بھی مضبوط ہوگئے ہیں۔

  • Share this:
اسد الدین اویسی نے ظاہر کیا اندیشہ، ’اب شری کرشن جنم بھومی پر بھی پُرتشدد مہم شروع کرے گا آر ایس ایس
اسد الدین اویسی نے ظاہر کیا اندیشہ، ’اب شری کرشن جنم بھومی پر بھی پُرتشدد مہم شروع کرے گا آر ایس ایس

نئی دہلی: اترپردیش کے متھرا (Mathura) میں شری کرشن جنم استھان احاطہ (Shri Krishna Janmsthan) میں واقع شاہی عید گاہ (Idgah) مسجد کو ہٹاکر متعلقہ زمین واپس اس کے مالک شری کرشن جنم استھان ٹرسٹ کو سونپے جانے کی گزارش والی عرضی جمعہ کو سماعت کے لئے منظور کرلی گئی ہے۔ اس پر آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (AIMIM) کے سربراہ اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) نے راشٹریہ سیوم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) پر تنقید کی ہے۔


اسد الدین اویسی نے متنازعہ بیان دیتے ہوئے ٹوئٹ کیا، ’جس بات کا خوف تھا وہی ہو رہا ہے۔ بابری مسجد سے متعلق فیصلوں کی وجہ سے آر ایس ایس کے لوگوں کے ارادے اور بھی مضبوط ہوگئے ہیں۔ یاد رکھئے، اگر آپ اور ہم ابھی بھی گہری نیند میں رہیں گے تو کچھ سال بعد آر ایس ایس اس پر بھی ایک پُرتشدد مہم شروع کرے گا اور کانگریس بھی اس مہم کا ایک اٹوٹ حصہ بنے گی’۔ انہوں نے لوگوں سے سنگھ پریوار سے محتاط رہنے کو کہا ہے۔




اسد الدین اویسی نے کہا، ’پوجا مقام ایکٹ 1991، پوجا کے مقام کو بدلنے سے منع کرتا ہے۔ وزارت داخلہ کو اس ایکٹ کا انتظامی حقوق سونپا گیا ہے، اس کا ردعمل عدالت میں کیا ہوگا؟ شاہی عید گاہ ٹرسٹ اور شری کرشن جنم استھان سیوا سنگھ نے اکتوبر 1968 میں اس تنازعہ کو حل کیا۔ اب اسے دوبارہ منظم ہوکر کیوں کریں’؟ واضح رہے کہ لکھنو کی وکیل رنجنا اگنی ہوتری اور 6 دیگر لوگوں نے پیرکو ضلع جج سادھنا ٹھاکر کی عدالت میں یہ عرضی سپریم کورٹ کے وکیل ہری شنکر جین اور وشنو جین کے ذریعہ داخل کی تھی۔ اس پر سماعت کرنے کے بعد فیصلہ محفوظ رکھ لیا گیا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 18, 2020 12:00 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading