ضمنی انتخاب میں بہارسے مہاراشٹرتک جیتی اسد الدین اویسی کی قیادت والی مجلس اتحاد المسلمین

مہاراشٹرکے مالیگاؤں وسط اسمبلی سیٹ پر مجلس اتحاد المسلمین کے امیدوارکے سامنے بی جے پی کے امیدوارکو صرف 1427 ووٹ ملے ہیں۔

Oct 24, 2019 06:07 PM IST | Updated on: Oct 24, 2019 06:07 PM IST
ضمنی انتخاب میں بہارسے مہاراشٹرتک جیتی اسد الدین اویسی کی قیادت والی مجلس اتحاد المسلمین

مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسدالدین اویسی: فائل فوٹو

نئی دہلی: اسدالدین اویسی کی پارٹی آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے حامیوں کوآج دوبڑی خوشخبری سننے کوملی۔ سب سے پہلی خوشخبری دوپہرکوبہارکے کشن گنج سےآئی تودوسری مالیگاؤں، مہاراشٹرسے۔ ضمنی انتخابات میں دونوں ہی اسمبلی سیٹوں پرمجلس اتحاد المسلمین کےامیدواروں کوجیت ملی ہے۔ حالانکہ مہاراشٹراسمبلی انتخابات  میں مجلس کو دوسیٹوں پرجیت ملی ہے۔

 مالیگاؤں وسط کی سیٹ جیت کربڑھائی تعداد

Loading...

مالیگاؤں وسط کی اسمبلی سیٹ سےآل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین نے محمد عبدالخالق کواپنا امیدواربنایا تھا۔ وہیں کانگریس کی طرف سے آصف شیخ کوٹکٹ دیا گیا تھا، لیکن آج ابتدائی رجحانات سے ہی عبدالخالق سبقت بنائے ہوئے تھے۔ اس جیت میں عبدالخالق کو116085 ووٹ ملے ہیں جبکہ کانگریس امیدوارآصف شیخ کو 77521 ووٹ ملے، لیکن دوسرے مقام پررہے ہیں۔ اس سیٹ پرعبدالخالق کوکل ووٹ کا 59.15 فیصد ووٹ ملے ہیں، جبکہ کانگریس امیدوارکو 39.50 فیصد ووٹ ملےہیں۔

مجلس اتحاد المسلمین نے لوک سبھا الیکشن میں بھی مہاراشٹرمیں ایک سیٹ پرجیت حاصل کی تھی، اورنگ آباد سیٹ سے امتیازجلیل رکن پارلیمنٹ منتخب ہوئے تھے۔ یہ پہلی بارتھا کہ اے آئی ایم آئی ایم نے لوک سبھا انتخابات میں مہاراشٹرمیں سیٹ جیتی تھی۔ اویسی کی پارٹی کے ووٹ فیصد میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ اتنا ہی نہیں پارٹی مہاراشٹرکی ناندیڑنگرپالیکا میں 11 سیٹیں جیت کرسیاسی پنڈتوں کوسوچنے پرمجبورکرچکی ہے۔

سیمانچل کی کشن گنج سیٹ جیت کرکھولاکھاتہ

بے شک آج کے ضمنی انتخابات میں مجلس اتحاد المسلمین نے کشن گنج اسمبلی سیٹ جیت کر بہارمیں اپنا کھاتہ کھول دیا ہے۔ لیکن جیت کی دستک تو2015 کے اسمبلی انتخابات اورلوک سبھا الیکشن 2019 میں ہی دے دی تھی۔ اسمبلی انتخابات میں دوسرے تولوک سبھا الیکشن میں مجلس اتحاد المسلمین کےامیدواراخترالایمان تین لاکھ ووٹوں کے ساتھ تیسرے مقام پر رہے تھے۔ آج بھی ابتدائی راؤنڈ میں قمرالہدیٰ کی حالت کچھ زیادہ اچھی نہیں تھی۔ پانچویں راؤنڈ تک وہ پچھڑتے ہوئے نظرآئے، لیکن اس کےبعد کے راؤنڈ میں انہیں جوسبقت ملی تو پھرانہوں نے پیچھے مڑکرنہیں دیکھا۔

Loading...