ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کا بڑا الزام- حکومت گرانے کے لئے کانگریس اراکین اسمبلی کو 15 کروڑ روپئے آفر کر رہی ہے بی جے پی

کانگریس کے دو درجن اراکین اسمبلی نے الزام لگایا ہے کہ بی جے پی (BJP) ریاست کی اشوک گہلوت (Ashok Gehlot) حکومت کو گرانے کی سازش کر رہی ہے۔ کانگریس کے ان اراکین اسمبلی نے مشترکہ بیان میں یہ الزام لگایا ہے۔

  • Share this:
راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کا بڑا الزام- حکومت گرانے کے لئے کانگریس اراکین اسمبلی کو 15 کروڑ روپئے آفر کر رہی ہے بی جے پی
راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کا بی جے پی پر بڑا الزام

جے پور: راجستھان (Rajasthan) میں سیاسی رسہ کشی کے درمیان وزیراعلیٰ اشوک گہلوت نے بی جے پی پر بڑا الزام لگایا ہے۔ اشوک گہلوت نے ہفتہ کو بی جے پی پر کانگریس حکومت (Congress Govt) کو گرانے کی سازش کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن جماعت بی جے پی کانگریس کے اراکین اسمبلی کو 15 کروڑ روپئے تک کا آفر کر رہی ہے۔ اشوک گہلوت نے کہا کہ کووڈ بحران (Coronavirus Pandemic) کے دوران جہاں حکومت لوگوں کے لئے کام کر رہی ہے۔ وہیں بی جے پی ریاست کی منتخب حکومت اور لوگوں کے لئے پریشانی کھڑی کر رہی ہے۔ بی جے پی مسلسل ہماری حکومت کو گرانے کی کوشش کر رہی ہے۔


اشوک گہلوت نے کہی یہ بات


اشوک گہلوت نے کہا کہ کرناٹک اور مدھیہ پردیش میں بی جے پی نے خریدوفروخت کے ذریعہ ہی ہماری حکومت گرائی ہیں۔ انہوں نےکہا، اسی ضمن میں بی جے پی نے ہمارے کچھ اراکین اسمبلی کو 15 کروڑ روپئے اور دیگر طرح کی لالچ دی ہے اور ایسا مسلسل ہو رہا ہے۔ اشوک گہلوت نے کہا کہ بی جے پی نے راجیہ سبھا الیکشن کے لئے گجرات میں بھی اراکین اسمبلی کی خرید وفروخت کی تھی اور اب ایسا ہی وہ کچھ راجستھان میں کر رہے ہیں۔ وہیں اراکین اسمبلی کی خریدوفروخت کے معاملے میں راجستھان پولیس کی ایس اوجی تین اراکین اسمبلی خوش ویر سنگھ جوجاور، سریش ٹاک اور اوم پرکاش ہڈلا کے کردار کی جانچ کرے گی۔ تینوں ہی اراکین اسمبلی ہیں۔ راجیہ سبھا الیکشن میں تینوں اراکین اسمبلی نے کانگریس کی حمایت کی تھی۔ واضح رہے کہ راجستھان میں کانگریس کے پاس 200 سیٹوں میں سے 107 سیٹیں ہیں۔ وہیں کانگریس کو 12 اراکین اسمبلی کی بھی حمایت حاصل ہے۔


کانگریس کے دو درجن اراکین اسمبلی نے لگایا الزام

اس سے قبل، کانگریس کے دو درجن اراکین اسمبلی نے الزام لگایا ہے کہ بی جے پی (BJP) ریاست کی اشوک گہلوت (Ashok Gehlot) حکومت کو گرانے کی سازش کر رہی ہے۔ کانگریس کے ان اراکین اسمبلی نے جمعہ کی دیر شب جاری مشترکہ بیان میں یہ الزام لگایا ہے۔ یہ بیان اسمبلی میں چیف وہپ ڈاکٹر مہیش جوشی اور ڈپٹی چیف وہپ مہندر چودھری کے دستخط سے جاری کیا گیا ہے۔

اشوک گہلوت نے کانگریس حکومت گرانے کی سازش کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن جماعت بی جے پی کانگریس کے اراکین اسمبلی کو 15 کروڑ روپئے تک کا آفر کر رہی ہے۔
اشوک گہلوت نے کانگریس حکومت گرانے کی سازش کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن جماعت بی جے پی کانگریس کے اراکین اسمبلی کو 15 کروڑ روپئے تک کا آفر کر رہی ہے۔


بی جے پی کی اعلیٰ قیادت سازش میں شامل

کانگریس اراکین اسمبلی نے مشترکہ بیان میں الزام لگایا ہے کہ بی جے پی خرید وفروخت اور دیگر ہتھکنڈوں سے ریاست کی عوامی فلاح وبہبود والی حکومت کو گرانے کی سازش کر رہی ہے۔ ان اراکین اسمبلی نے اسے بی جے پی کا مبینہ غیرجمہوری اور بدعنوان اخلاق قرار دیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے ’ہمارے پاس واضح اطلاعات ہیں کہ بی جے پی کی اعلیٰ قیادت اس سازش میں شامل ہے، جو کانگریس کے اراکین اسمبلی اور حامی اراکین اسمبلی اور دیگر سے رابطہ کرکے انہیں طرح طرح کی لالچ دے کر گمراہ کرنے کی کوشش کر رہی ہیں’۔

بیان میں دیئے گئے ہیں 24 اراکین اسمبلی کے نام

مشترکہ بیان میں 24 اراکین اسمبلی کے نام دیئے گئے ہیں، جن میں لاکھ سنگھ، جوگیندر سنگھ اوانا، مکیش بھاکر، اندرا مینا، وید پرکاش سولنکی اور سندیپ یادو سمیت کئی کے نام شامل ہیں۔ قابل ذکر ہے کہ یہ بیان ایسے وقت میں جاری کیا گیا ہے، جبکہ راجستھان پولیس کے ایس او جی نے ریاست میں اراکین اسمبلی کی خریدو فروخت اور منتخب حکومت کو غیر مستحکم کرنے کے الزامات میں جمعہ کو ایک معاملہ درج کیا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 11, 2020 03:28 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading