اشون کے جال میں پھنسا ویسٹ انڈیز، ہندوستان کو ملی ایشیا سے باہر وراٹ جیت

ہندوستان نے ویسٹ انڈیز کو پہلے کرکٹ ٹیسٹ کے چوتھے ہی دن اتوار کو اننگز اور 92 رنز سے شکست دیکر چار میچوں کی سیریز میں ایک صفر کی سبقت حاصل کرلی

Jul 25, 2016 10:18 AM IST | Updated on: Jul 25, 2016 10:18 AM IST
اشون کے جال میں پھنسا ویسٹ انڈیز، ہندوستان کو ملی ایشیا سے باہر وراٹ جیت

اینٹيگا : اسٹار آف اسپنر روی چندرن اشون (83 رن پر سات وکٹ) کی خطرناک گیند بازی سے ہندوستان نے ویسٹ انڈیز کو پہلے کرکٹ ٹیسٹ کے چوتھے ہی دن اتوار کو اننگز اور 92 رنز سے شکست دیکر چار میچوں کی سیریز میں ایک صفر کی سبقت حاصل کرلی۔  ہندستان کے آٹھ وکٹ پر 566 رنز پر اننگز کے خاتمے کے اعلان کے جواب میں ویسٹ انڈیز کی پہلی اننگز 243 رنز پر سمٹ گئی تھی اور اسے فالوآن کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ ویسٹ انڈیز کی دوسری اننگز بھی 231 رن سے آگے نہیں بڑھ سکی ۔

ویسٹ انڈیز کو سمیٹنے میں اشون کا بڑا کردار رہا جنہوں نے 83 رنز دے کر سات وکٹیں حاصل کیں۔ اشون کو پہلی اننگز میں 43 رنز دے کر کوئی وکٹ نہیں ملا تھا لیکن دوسری اننگز میں انہوں نے لنچ تک پانچ وکٹ اور چائے کے وقفہ کے بعد دو وکٹ لے کر کیریبیائی اننگز نمٹا دی۔ اشون نے پہلی اننگز میں شاندار سنچری جڑتے ہوئے 113 رنز کی عمدہ اننگز کھیلی تھی۔

ویسٹ انڈیز نے صبح ایک وکٹ پر 21 رن سے آگے کھیلنا شروع کیا اور لنچ تک ایک اور وکٹ گنوایا لیکن میزبان ٹیم نے لنچ کے بعد چھ وکٹ اور چائے کے وقفہ کے بعد دو وکٹ گنوا دیے۔ اشون نے لنچ کے بعد گرے چھ وکٹ میں پانچ وکٹ نکالے اور پھر چائے کے وقفہ کے بعد باقی دو وکٹ لے کر ہندستان کو ویسٹ انڈیز میں پہلی بار اننگز سے جیت دلا دی۔ ویسٹ انڈیز کی دوسری اننگز میں مارلین سیموئلز نے 50، كارلوس بریتھویٹ نے ناٹ آؤٹ 51 اور دویندر بشو نے 45 رنز بنائے۔ اشون کے سات وکٹ کے علاوہ فاسٹ بولر ایشانت شرما، امیش یادو اور امت مشرا نے ایک ایک وکٹ لیا۔

اس سے پہلے ہندستان کی پہلی اننگز کے آٹھ وکٹ پر 566 رن کے جواب میں ویسٹ انڈیز کی پہلی اننگز کل 243 رنز پر سمٹ گئی تھیں اور اسے فالوآن کھیلنے پر مجبور ہونا پڑا۔  پہلی اننگز میں ویسٹ انڈیز کی جانب سے کریگ بریتھویٹ نے سب سے زیادہ 74 رنز بنائے جبکہ شین ڈارچ نے اہم لمحات میں ناٹ آؤٹ 57 اور کپتان جیسن ہولڈر نے 36 رنز کی اننگز کھیلی لیکن اپنی ٹیم کو فالو آن سے بچانے میں کوئی بھی کھلاڑی کامیاب نہیں ہو سکا۔ بریتھویٹ نے 218 گیندوں میں سات چوکے، ڈارچ نے 79 گیندوں میں دس چوکے اور ہولڈر نے 52 گیندوں میں پانچ چوکے اور ایک چھکا اڑایا۔

Loading...

میچ میں ڈبل سنچری جڑنے والے ہندستانی ٹیسٹ کپتان وراٹ کوہلی (200) اور روی چندرن اشون کے 113 رنز کی مدد سے آٹھ وکٹ پر 566 رنز بنا کر پہلی اننگز کا اعلان کرنے کے بعد ٹیم انڈیا نے بولنگ میں بھی کمال کا مظاہرہ کیا اپنی ٹیم کو فتح دلائی ۔  ہندستان نے 10 سال بعد ویسٹ انڈیز کو اسی کے گھر میں فالوآن پر مجبور کیا ہے۔ اس سے پہلے 2006 میں گراس آئلیٹ میں کیریبیائی ٹیم فالوآن کھیلنے پرمجبور ہوئی تھی۔ ویسے اب تک یہ ٹیم تمام ٹیموں کے خلاف گھر میں آٹھ بار فالوآن کر چکی ہے۔

فالوآن کرتے ہوئے ویسٹ انڈیز کی جانب سے دوسری اننگز میں كارلوس بریتھویٹ نے سب سے زیادہ ناقابل تسخیر51 رنز بنائے۔ انہوں نے 82 گیندوں میں تین چوکے اور دو چھکے لگائے۔ مارلین سیموئلز نے بھی نصف سنچری بنائی اور 85 گیندوں میں 11 چوکوں کی مدد سے 50 رنز بنائے۔ دویندر بشو نے 74 گیندوں میں چھ چوکے اور ایک چھکا اڑاتے ہوئے 45 رن اور اوپنر راجندر چندریكا نے 108 گیندوں میں پانچ چوکوں کے سہارے 31 رن بنائے۔

میزبان ٹیم کے پانچ کھلاڑی دہائی کے ہندسے تک بھی نہیں پہنچ سکے۔بشو اور كارلوس نے نویں وکٹ کے لیے 24.1 اوور میں 95 رنز جوڑے جو مہمان ٹیم کی دوسری اننگز میں سب سے بڑی شراکت رہی۔ اس سے پہلے چندركا اور سیموئلز نے تیسرے وکٹ کے لئے 22 اوور میں 67 رن کی شراکت کی تھی۔

Loading...