ہوم » نیوز » وطن نامہ

آسام : بی جے پی اور ساتھی پارٹیوں کے درمیان طے ہوا سیٹوں کا فارمولہ ، جانیں کس کو ملیں کتنی سیٹیں

Assam assembly election 2021: آسام اسمبلی انتخابات کو لے کر بی جے پی اور ساتھی پارٹیوں کے درمیان سیٹوں کی تقسیم کو لے کر اتفاق رائے قائم ہوگیا ہے ۔

  • Share this:
آسام : بی جے پی اور ساتھی پارٹیوں کے درمیان طے ہوا سیٹوں کا فارمولہ ، جانیں کس کو ملیں کتنی سیٹیں
آسام : بی جے پی اور ساتھی پارٹیوں کے درمیان طے ہوا سیٹوں کا فارمولہ ، جانیں کس کو ملیں کتنی سیٹیں

آسام اسمبلی انتخابات کو لے کر بی جے پی اور ساتھی پارٹیوں آسام گن پریشد اور یونائٹیڈ پیپلز پارٹی لبرل کے درمیان سیٹوں کی تقسیم کو لے کر اتفاق رائے قائم ہوگیا ہے ۔ ایسا کہا جارہا ہے کہ اے جی پی 26 اسمبلی سیٹوں پر اپنے امیدوار اتار سکتی ہے جبکہ یو پی پی ایل آٹھ سیٹوں پر الیکشن لڑسکتی ہے ۔ وہیں دیگر سیٹوں پر بی جے پی اپنے امیدوار میدان میں اتارے گی ۔


اس سے پہلے بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا کے گھر پر سیٹوں کی تقسیم کو لے کر اہم میٹنگ ہوئی ۔ اس میٹنگ میں آسام بی جے پی لیڈر اور سرکار میں وزیر ہیمنت بسوا سرما، آسام گن پریشد اور آسام بی جے پی کے سینئر لیڈران موجود تھے ۔ آسام کے موجودہ وزیر اعلی سربانند سونووال بھی میٹنگ میں موجود تھے ۔ مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ کی رہائش گاہ پر بھی بدھ کو اس سلسلے میں ایک اہم میٹنگ ہوئی تھی ، جس میں بی جے پی صدر جے پی نڈا ، آسام کے وزیر اعلی ، ریاستی بی جے پی صدر رنجیت داس ، اے جی پی کے صدر و ریاستی حکومت میں وزیر اتل بورا ، یو پی پی ایل کے سربراہ پرمود بورو اور بی جے پی لیڈر و وزیر ہیمنت بسوا سرما بھی موجود تھے ۔


بتادیں کہ آسام اسمبلی میں 126 سیٹیں ہیں ۔ ریاست میں 27 مارچ سے چھ اپریل کے درمیان تین مراحل میں ووٹنگ ہوگی ۔ پہلے مرحلہ کے تحت ریاست کی 47 اسمبلی سیٹوں پر 27 مارچ کو ، دوسرے مرحلہ کے تحت 39 سیٹوں پر ایک اپریل اور تیسرے و آخری مرحلہ کے تحت 40 اسمبلی سیٹوں پر چھ اپریل کو ہوگا ۔ نامزدگی کی آخری تاریخ نو مارچ ہے ۔


خیال رہے کہ 2016 میں بی جے پی کو 60 سیٹوں پر جیت ملی تھی ۔ گزشتہ اسمبلی انتخبات میں بوڈولینڈ پیپلز فرنٹ نے بی جے پی اور اے جی پی کے ساتھ اتحاد میں الیکشن لڑا تھا اور اس نے 12 سیٹوں پر جیت درج کی تھی ۔ اس مرتبہ الیکشن میں بی پی ایف نے کانگریس اور اے آئی یو ڈی ایف کے ساتھ اتحاد کیا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 04, 2021 11:49 PM IST