உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Assam Flood: مکیش امبانی اور اننت امبانی نے سی ایم ریلیف فنڈ میں دئے 25 کروڑ روپے، ہیمنت بسو سرما نے ادا کیا شکریہ

    Assam Flood: مکیش امبانی اور اننت امبانی نے سی ایم ریلیف فنڈ میں دئے 25 کروڑ روپے، ہیمنت بسو سرما نے ادا کیا شکریہ

    Assam Flood: مکیش امبانی اور اننت امبانی نے سی ایم ریلیف فنڈ میں دئے 25 کروڑ روپے، ہیمنت بسو سرما نے ادا کیا شکریہ

    Assam Flood News: سیلاب کی تباہی جھیل رہے آسام کی مالی مدد کرنے کیلئے ریاست کے وزیر اعلی ہیمنت بسو سرما نے ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ کے چیئرمین اور ایم ڈی مکیش امبانی اور ان کے بیٹے اننت امبانی کا شکریہ ادا کیا ہے ۔

    • Share this:
      گواہاٹی : سیلاب کی تباہی جھیل رہے آسام کی مالی مدد کرنے کیلئے ریاست کے وزیر اعلی ہیمنت بسو سرما نے ریلائنس انڈسٹریز لمیٹڈ کے چیئرمین اور ایم ڈی مکیش امبانی اور ان کے بیٹے اننت امبانی کا شکریہ ادا کیا ہے ۔ سرما نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ وزیر اعلی ریلیف فنڈ میں 25 کروڑ روپے کا عطیہ دے کر اس اہم وقت میں آسام کے لوگوں کے ساتھ کھڑے ہونے کیلئے مکیش امبانی اور اننت امبانی کا دل سے شکریہ ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم اس طرح کے کاموں کی سراہنا کرتے ہیں ۔ اس سے ہمارے سیلاب راحت بندوبست میں کافی بڑی مدد ملے گی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ادھو ٹھاکرے کا باغی لیڈروں کو جواب،ٹھاکرے کے بغیر شیوسینا کو نہیں چلایا جاسکتا


      اس درمیان افسران نے بتایا کہ آسام میں سیلاب کی صورتحال جمعہ کو بھی سنگین بنی رہی ۔ ریاست کے ۔۔۔ لاکھ لوگ سیلاب سے متاثر ہوئے ہیں ۔ افسران کے مطابق برہمپتر اور براک ندیاں اپنی ساتھی ندیوں کے ساتھ طغیان پر ہیں ۔ حالانکہ کچھ علاقوں میں سیلاب کا پانی کم ہونے لگا ہے ۔



      ریاست میں سیلاب کی وجہ سے گزشتہ 24 گھنٹے میں سات مزید لوگوں کی موت ہوجانے سے اس آفت میں اب تک مرنے والے لوگوں کی کل تعداد بڑھ کر 108 ہوگئی ہے ۔ آسام کی براک وادی کا انٹری گیٹ مانے جانے والے سلچر کے زیادہ تر علاقے زیر آب ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ریلائنس ریٹیل کے’’ٹرینڈز شاپنگ فیسٹول‘‘ کا آغاز


      اے ایس ڈی ایم اے نے کہا کہ سنگین طور سے متاثر اضلاع اور خاص طور پر کچھار ضلع ، جہاں سلچر واقع ہے ، میں اضافی وسائل کے ساتھ بچاو اورراحت کاموں میں تیزی لائی گئی ہے ۔ افسران کے مطابق راحت اور بچاو کے کام کیلئے این ڈی آر ایف کی آٹھ ٹیمیں ایٹانگر اور بھونیشور سے لائی گئی ہیں، جن میں کل 207 اہلکار ہیں جبکہ 120 اراکین والی فوج کی ایک ٹیم دیماپور سے نو کشتیوں کے ساتھ سلچر میں بچاو مہم کیلئے بھیجی گئی ہے ۔

      علاوہ ازیں سینٹرل ریزرو پولیس فورس اور ایس ڈی آر ایف کی دو ٹیمیں طیارہ کے ذریعہ کچھار کے لئے بھیجی گئی ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: