உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Assembly Election 2022 Voting:تین ریاستوں کی 165 سیٹوں پر ووٹنگ شروع، 1519 امیدواروں کی قسمت کا ہوگا فیصلہ

    تین ریاستوں میں ووٹنگ کی ہوئی شروعات۔

    تین ریاستوں میں ووٹنگ کی ہوئی شروعات۔

    Assembly Election 2022 Voting:اسمبلی الیکشن 2022 ووٹنگ: مغربی اتر پردیش کے نو اضلاع بجنور، سہارنپور، امروہہ، سنبھل، مرادآباد، رام پور، بریلی، بدایوں اور شاہجہاں پور میں ووٹنگ ہورہی ہے۔ ان تمام اضلاع کی 55 سیٹوں میں سے 25 سے زیادہ سیٹوں پر مسلم ووٹر فیصلہ کن رول میں ہیں۔ ساتھ ہی 20 سیٹوں پر دلت ووٹروں کا اثر 20 فیصد سے زیادہ ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی:ملک کی پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات (Assembly Election) ہو رہے ہیں۔ آج دوسرے مرحلے میں اتر پردیش اور اتراکھنڈ کے ساتھ گوا کی تمام اسمبلی سیٹوں کے لیے 55 سیٹوں کے لیے ووٹنگ کا آغاز ہوگیا ہے۔ آج ہونے والے انتخابات میں تین ریاستوں کی کل 165 سیٹوں کے لیے 1519 امیدوار میدان میں ہیں۔ جس میں یوپی کی 55 اسمبلی سیٹوں پر 586 امیدوار، اتراکھنڈ کی 70 سیٹوں پر 632 اور گوا کی 40 سیٹوں پر 301 امیدوار میدان میں ہیں۔ یوپی میں آج کل 2.2 کروڑ ووٹر اپنے حق رائے دہی کا استعمال کریں گے۔ اس کے ساتھ ہی گوا میں 11 لاکھ ووٹر اور اتراکھنڈ میں 81,43,922 ووٹر اپنے حق رائے دہی کا استعمال کررہے ہیں۔


      مغربی اتر پردیش کے نو اضلاع بجنور، سہارنپور، امروہہ، سنبھل، مرادآباد، رام پور، بریلی، بدایوں اور شاہجہاں پور میں ووٹنگ ہورہی ہے۔ ان تمام اضلاع کی 55 سیٹوں میں سے 25 سے زیادہ سیٹوں پر مسلم ووٹر فیصلہ کن رول میں ہیں۔ ساتھ ہی 20 سیٹوں پر دلت ووٹروں کا اثر 20 فیصد سے زیادہ ہے۔ ان تمام اضلاع میں SP-RLD کی پوزیشن مضبوط سمجھی جاتی ہے۔ کسانوں کے احتجاج کی وجہ سے بی جے پی کو ان سیٹوں پر گنے کے کسانوں کی ناراضگی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ دوسرے مرحلے میں آج 18 ملین مرد، 0.94 ملین خواتین اور 1269 تیسری جنس کے ووٹر اپنا ووٹ ڈالیں گے۔

      یوپی میں 23,404 ووٹنگ سینٹرس پر ہورہی ہے ووٹنگ
      یوپی میں ووٹنگ کے لیے 23,404 پولنگ اسٹیشن اور 12,544 پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں۔ الیکشن کمیشن نے پولنگ کی نگرانی کے لیے 51 جنرل مبصر، 9 پولیس مبصر اور 17 دیگر مبصر تعینات کیے ہیں۔ الیکشن کمیشن نے ریاستی سطح پر ایک سینئر نارمل آبزرور، ایک سینئر پولس آبزرور اور دو سینئر ایکسپینڈیچر آبزرور کو بھی تعینات کیا ہے۔ یہ لوگ پورے انتخابی عمل پر نظر رکھیں گے۔ اس کے ساتھ ہی ووٹنگ کا مشاہدہ کرنے کے لیے ہر ضلع کے 50 فیصد پولنگ بوتھس پر لائیو ویب ٹیلی کاسٹ کے انتظامات کیے گئے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: