உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ریاستی وزیر رامیشور اوراوں نے مسلم اقلیت کے مسائل بہت جلد وزیراعلیٰ ہمینت سورین سے حل کرانے کی یقین دہانی کرائی

    ریاستی وزیر رامیشور اوراوں نے مسلم اقلیت کے مسائل بہت جلد وزیراعلیٰ ہمینت سورین سے حل کرانے کی یقین دہانی کرائی

    ریاستی وزیر رامیشور اوراوں نے مسلم اقلیت کے مسائل بہت جلد وزیراعلیٰ ہمینت سورین سے حل کرانے کی یقین دہانی کرائی

    رانچی میں جھارکھنڈ جمعیت القریش کے زیر اہتمام منعقد ایک روزہ سیمنار میں رامیشور اوراوں نے جھارکھنڈ کے وزیر مالیات ڈاکٹر رامیشور اوراوں نے مسلم اقلیت کے مسائل جلد حل کرانے کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ مسلم سماج کے ذریعہ جو مطالبہ کیا گیا ہے، وہ واجب ہے۔ اس کے لئے ہماری حکومت لگی ہوئی ہے۔

    • Share this:
    رانچی: جھارکھنڈ کے وزیر مالیات ڈاکٹر رامیشور اوراوں نے مسلم اقلیت کے مسائل جلد حل کرانے کی یقین دہانی ہے۔ رانچی میں جھارکھنڈ جمعیت القریش کے زیر اہتمام منعقد ایک روزہ سیمنار میں رامیشور اوراوں نے اس بات کی یقین دہانی کرائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم سماج کے ذریعہ جو مطالبہ کیا گیا ہے، وہ واجب ہے۔اس کے لئے ہماری حکومت لگی ہوئی ہے۔ ہم جلد ہی اقلیتوں کے مسائل اور قریش سماج کے مسائل کے متعلق وزیر اعلی ہیمنت سورین سے بات کریں گے اور اس مسائل کا حل تلاش کرنے کے لئے پوری کوشش کریں گے۔ انہوں نے یقین دلایا کہ ہماری حکومت اقلیتی کمیشن، فائنانس کمیشن، مدرسہ بورڈ،حج کمیٹی سمیت قریش سماج کےجو مطالبات ہیں اسے ہماری سرکار جلد پورا کرے گی۔ انہوں نے کورونا کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کئی منصوبوں کو پورا کرنے میں تاخیر ہوئی ہے۔
    اس موقع پر موجود سابق رکن پارلیمنٹ فرقان انصاری نے کہا کہ یہ پروگرام قریش سماج کے صدر مجیب قریشی کی سربراہی میں منعقدکیا گیا ہے، جس میں مختلف سماجی تنظیموں کو جوڑنے کی کامیاب کوشش کی گئی ہے اور ایسا ہونا بھی چاہئے، باہمی اختلافات نہیں ہونا چاہئے۔ وہیں جامتاڑا سے ممبر اسمبلی ڈاکٹر عرفان انصاری نے کہا کہ بی جے پی حکومت میں جس طرح سے موب لنچنگ ہوئی ہے، جس نے موب لیچنگ کی ہے، عرفان انصاری آپ کو یقین دلاتاہے کہ ہماری حکومت ان سب کو سزا دلانے کی کام کرے گی۔ ہماری حکومت ان خاندانوں کو معاوضہ فراہم کرنے کے لئے کام کرے گی جو موب لینچنگ کے شکارہوئے ہیں۔ قریشی سماج نے اپنی مانگوں کو رکھی ہے اسے ہم سرکار سے پورا کرنے کے لیے پوری کوشش کریں گے۔
    جھارکھنڈ ریاستی جمعیت القریش کے صدر مجیب قریشی نے کہا کہ حکومت نے جھارکھنڈ میں روزگار چلانے کے لئے ایک بھینس، کاڑا کے سلاٹر ہاؤس کا قیام حکومت نہیں کرا سکی ہے، جس کی وجہ سے اس روزگار سے وابستہ ایک بڑی آبادی افلاس (بھکمری) کے دہانے پر پہنچ گئی ہے۔ ہم سرکار سے مطالبہ کرتے ہیں کہ جلد یہاں سلاٹر ہاووس تعمیر کرایا جائے۔ اس موقع پر فرہاد قریشی، ارشاد خان، ایس ایم معین، عاشق قریشی، محمد عامر، فیروز قریشی، آزاد، زین القریشی، فاروق قریشی، حاجی معشوق، عالم خان، ریاض الدین قریشی، مقصود عالم، بلال خان، غلام غوث قریشی، صدام قریشی، اسجد خان، شفیق انصاری، عقیل الرحمان سمیت رانچی، جمشید پور ہزارہ باغ، چترا ،لوہردگا وغیرہ کے لوگ شامل تھے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: