உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اٹل بہاری واجپئی نے ایسے کرایا پوکھرن ٹیسٹ ، دنیا کو بتایا : ہندوستان کوکسی کا ڈر نہیں !۔

    اٹل بہاری واجپئی ۔ فائل فوٹو ۔

    اٹل بہاری واجپئی نے لال بہادر شاستری کی طرف سے دئے گئےنعرے "جے جوان جے کسان "میں الگ سے "جے وگیان "بھی جوڑا ۔

    • Share this:
      اٹل بہاری واجپئی نے لال بہادر شاستری کی طرف سے دئے گئےنعرے "جے جوان جے کسان "میں الگ سے "جے وگیان "بھی جوڑا ۔ ملک کی سلامتی کو لے کر انہیں سمجھوتہ کسی بھی طرح سے منظور نہیں تھا ، اس لئے انہوں نے دنیا کی پروا کئے بغیر راجستھان کے پوکھرن میں نیوکلیائی ٹیسٹ ( 1998 ) کیا ۔ اس ٹیسٹ کے بعد امریکہ ، کناڈا ، جاپان اور یوروپی یونین سمیت کئی ممالک نے ہندوستان پر کئی طرح کی پابندیاں بھی لگادیں ، لیکن ان کی سیاسی قوت ارادی نے ان حالات میں بھی انہیں "اٹل "بنائے رکھا ۔ پوکھرن ٹیسٹ واجپئی کے سب سے بڑے فیصلوں میں سے ایک تھا ۔
      واجپئی کو اس بات کا احساس تھا کہ امریکہ نیوکلیائی ٹیسٹ کی بھنک لگی تو دباو بنائے گا ۔ امریکہ کو بھنک نہ لگے ، اس کیلئے ٹیسٹ سے وابستہ انجینئرس کو بھی فوج کی وردی میں وہاں بھیجا گیا ۔ ان کی حکمت عملی کامیاب ثابت ہوئی ۔ انہوں نے امریکہ کی سی آئی اے کو کانوں کان خبر نہیں ہونے دی اور ملک کو دنیا کے کچھ چنندہ نیوکلیائی ممالک میں شامل کروا دیا ہے ۔
      نیوکلیائی ٹیسٹ کے بعد واجپئی نے کہا : میں اس بات کو واضح کردینا چاہتا ہوں کہ ہندوستان ہمیشہ امن کا پجاری ملک رہا ہے اور رہے گا ۔ پوکھرن ٹیسٹ کے اگلے سال واجپئی 21 فروری 1999 کو پاکستان کے دورہ پر گئے ۔
      وہاں ہیرو شیما اور ناگا ساکی پر گرائے گئے نیوکلیائی بم پر لکھی گئی "ہیروشیما کی پیڑا "نام کی اپنی نظم پر انہوں نے کہا کہ جب پوکھرن میں ایٹمی ٹیسٹ کرنے کا فیصلہ ہوا تو لوگوں نے مجھے میری ہی نظم کی یاد دلائی تھی ، میں ہیروشیما گیا تھا ، میں نے ناگاساکی کا منظر دیکھا تھا ، وہاں بم گرایا گیا ، اس کی ضرورت نہیں تھی ، وہاں لڑائی ختم ہوگئی تھی ، دوست ملک جیت گئے تھے ، وہ اپنے دفاع کیلئے چلایا گیا ایٹمی ہتھیار نہیں تھا ، آج بھی وہ لوگ بھگت رہے ہیں ۔

      Atal Bihari Vajpayee, Life of Atal Bihari Vajpayee, Former Prime Minister of India, Bharat Ratna, BJP, Pokhran nuclear test, पोखरण परमाणु परीक्षण, APJ Abdul Kalam, एपीजे अब्दुल कलाम, Bhartiya Janta Party, Atal Bihari Vajpayee News, NDA,Atal Bihari Vajpayee Relation between other political parties leader, अटल बिहारी वाजपेयी, भारत के पूर्व प्रधान मंत्री, भारत रत्न, बीजेपी, भारतीय जनता पार्टी, अटल बिहारी वाजपेयी समाचार, एनडीए, अटल बिहारी वाजपेयी अन्य राजनीतिक दलों के नेता के बीच संबंध
      اٹل نے کہا کہ میری نظم کا عنوان "ہیرو شیما کی پیڑا "ایک شاعر کے دل کا درد تھا ، اس لئے جب ایک بڑا فیصلہ کیا گیا تب بھی میرا ذہن صاف تھا اور آج بھی صاف ہے ، ہمیں مل کر ایٹمی اسلحہ سے پاک دنیا کی تعمیر کرنی ہے ، ہم ایٹمی ہتھیاروں کو کام میں لائیں ، اس کا تو سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ، لیکن اس کیلئے دوستی کا ماحول چاہئے ۔
      First published: