உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جی ایس ٹی کے نفاذ سےعطر کی خوشبو پر مہنگائی کا اثر۔ دکانداروں کو خریدار کا انتظار

    عطر کی خوشبو کے شوقین لوگ اس سال عطر کے داموں میں اضافے سے پریشان ہیں ۔اس سال عطریات پر جی ایس ٹی لگنے کی وجہ سے اس کے داموں میں کافی اضافہ ہوا ہے

    عطر کی خوشبو کے شوقین لوگ اس سال عطر کے داموں میں اضافے سے پریشان ہیں ۔اس سال عطریات پر جی ایس ٹی لگنے کی وجہ سے اس کے داموں میں کافی اضافہ ہوا ہے

    عطر کی خوشبو کے شوقین لوگ اس سال عطر کے داموں میں اضافے سے پریشان ہیں ۔اس سال عطریات پر جی ایس ٹی لگنے کی وجہ سے اس کے داموں میں کافی اضافہ ہوا ہے

    • Share this:
      شہراحمدآباد میں ماہ مقدس رمضان المبارک کی مناسبت سے عطریات کی فروخت میں اضافہ ہواتو ضرور ہے ۔ لیکن عطر کی خوشبو کے شوقین لوگ اس سال عطر کے داموں میں اضافے سے پریشان ہیں ۔اس سال عطریات پر جی ایس ٹی لگنے کی وجہ سے اس کے داموں میں کافی اضافہ ہوا ہے جس کی وجہ سے ابھی تک عطر کے دکانداروں کو خریددار کا انتظار کرنا پڑتا ہے۔ ایسے میں اگر خریدارعطر خریدنے بھی آتے ہیں وہ مہنگائی کی شکایت کرتے ہیں۔

      احمدآباد کے بازاروں کے ساتھ ہی ساتھ مساجد کے قریب بھی عطر کی دکانات لگائی گئی ہیں جو یہاں سے گزرنے والوں کو اپنی جانب راغب کر رہی ہیں ۔ مساجد آنے والے مصلی ان دکانات سے عطریات کو خریدکر اپنے کپڑوں کو لگارہے ہیں۔ساتھ ہی ان کی خصوصیات کے بارے میں بھی معلومات حاصل کی جارہی ہیں۔ عطر کی ایک چھوٹی سی شیشی کی قیمت تقریباً100روپئے سے شروع ہوتی ہے جو کی ہزاوں تک جاتی ہے

      رمضان المبارک کا مہینہ ختم ہونے والاہے۔ایسے میں روزہ دار عید کی تیاری کررہاہے۔عید کے موقع پر مسلم برادری کے لوگ نئے کپڑے پہن کر عید کا جشن مناتے ہیں ایسے میں اگراچھی خوشبو کپڑوں میں رچ بس جاتی ہے تو وہ ذہنی سکون ساتھ ہی ساتھ ایک انوکھا احساس بھی دیتا ہے۔عطر بازار میں ابھی تک رونق نہیں دیکھ رہی لیکن دکاندارعید کے موقع پرعطرمارکٹ میں رونق ہونے کی توقع کررہے ہیں۔
      First published: