اجودھیا تنازع : خطبہ جمعہ میں لوگوں سے امن و امان برقرار رکھنے کی اپیل ، جذباتی نعروں سے اجتناب پر زور

دہلی سمیت ملک بھر کی تقریبا سبھی مساجد سے لوگوں سے امن و امان برقرار رکھنے کی اپیل کی گئی ۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کو تسلیم کرنے ، جشن اور دل آزار چیزوں سے احتیاط برتنے پر زور دیا گیا ۔

Nov 08, 2019 05:30 PM IST | Updated on: Nov 08, 2019 05:30 PM IST
اجودھیا تنازع : خطبہ جمعہ میں لوگوں سے امن و امان برقرار رکھنے کی اپیل ، جذباتی نعروں سے اجتناب پر زور

احمد آباد میں نیشنل شیعہ صوفی آرگنائزیشن کے اراکین اجودھیا تنازع کے فیصلہ کے پیش نظر ملک میں امن و امان کیلئے دعا کرتے ہوئے ۔ تصویر : یو این آئی ۔

رام مندر – بابری مسجد اراضی تنازع سے متعلق سپریم کورٹ کا فیصلہ جلد ہی آنے والا ہے ، جس کے پیش نظر امن و امان اور بھائی چارہ برقرار رکھنے کیلئے کوششیں کی جارہی ہیں ۔ جمعہ کو قومی راجدھانی دہلی سمیت ملک بھر کی سبھی مساجد سے لوگوں سے امن و امان برقرار رکھنے کی اپیل کی گئی ۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کو تسلیم کرنے ، جشن اور دل آزار چیزوں سے احتیاط برتنے پر زور دیا گیا ۔

خطبہ جمعہ میں ائمہ مساجد نے مسلمانوں سے سپریم کورٹ کے فیصلے کو تسلیم کرنے اور غم وغصہ اور منفی رد عمل ظاہر کر نے سے پرہیز کرنے کی تلقین کی ۔ علما کرام اور ائمہ مساجد نے اسلام کو امن کا مذہب  قرار دیتے مسلمانوں سے ہر حال میں امن اور بھائی چارہ کو برقرار رکھنے کیلئے کہا ۔ ساتھ ہی ساتھ فیصلہ کی حساسیت کے پیش نظر جشن اور جذباتی نعروں سے اجتناب پر زور دیا ۔

Loading...

اترپردیش میں سرکردہ شخصیات نے لوگوں سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی ۔ لکھنئو کی مختلف مساجد میں نماز جمعہ کے خطبوں میں لوگوں سے صبر و تحمل سے کام لینے کیلئے کہا گیا ۔ معروف عالم دین مولانا کلب جواد نے آصفی مسجد میں کہا کہ فیصلہ کچھ بھی آئے ، لوگ مشتعل نہ ہوں اور عدالت عظمی کے فیصلہ کا پورا احترام کریں ۔ مولانا خالد رشید فرنگی محلی نے بھی لوگوں کو صبرو تحمل سے کام لینے کی تلقین کرتے ہوئے کہا کہ امن وامان کو ہر قیمت پر برقرار رکھا جائے ۔ درگاہ شاہ مینا اور درگاہ دادا میاں کی مساجد سے بھی اخوات و بھائی چارہ پر زور دیا گیا۔

ممبئی و مضافات میں جمعہ کی نماز کے خطبے اور بیانات میں علما کرام نے بابری مسجد فیصلے کے متعلق سپریم کورٹ کے حتمی فیصلے کو ماننے اور صبر و تحمل کے مظاہرے کی عوام سے اپیل کی ۔ ممبئی و ریاست مہاراشٹر کی کئی مساجد میں ائمہ کرام نے بابری مسجد فیصلے کی حساسیت کوبیان کرتے عوام سے فیصلہ کو تسلیم کرنے اور جشن و جذباتی نعروں سے اجتناب کرنے پر زور دیا۔

ادھر حیدرآباد میں شاہی مسجد پبلک گارڈنز کے امام و خطیب مولانا احسن بن محمد الحمومی  نے جمعہ کے خطبہ میں لوگوں سے امن و امان قائم رکھنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اس کیس کا جو بھی فیصلہ آئے ، ہمیں منظور ہے ، فیصلہ کسی کے حق میں بھی آئے ، کوئی بھی جیتے ، ہمیں چاہئے کہ ہم دوسروں کا دل جیتیں ۔

Loading...