உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اعظم خان کے بیٹے عبداللہ اعظم کو سپریم کورٹ سے ملی راحت، جلد آئیں گے جیل سے باہر

    اعظم خان کے بیٹے عبداللہ اعظم کو سپریم کورٹ سے ملی راحت

    اعظم خان کے بیٹے عبداللہ اعظم کو سپریم کورٹ سے ملی راحت

    اترپردیش کے قدآور لیڈر اور رکن پارلیمنٹ اعظم خان اور ان کے بیٹے عبداللہ اعظم کو ضمانت مل گئی ہے۔ سپریم کورٹ نے دو پاسپورٹ معاملے میں دونوں کو ضمانت دے دی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: اترپردیش کے قدآور لیڈر اور رامپور سے رکن پارلیمنٹ اعظم خان کے بیٹے عبداللہ اعظم کو ضمانت مل گئی ہے۔ سپریم کورٹ نے دو پاسپورٹ معاملے میں دونوں کو ضمانت دے دی ہے۔ سپریم کورٹ سے راحت ملنے کے بعد اب عبداللہ اعظم جلد جیل سے باہر آسکتے ہیں۔ اس معاملے میں ضمانت ملنے کے بعد اب عبداللہ اعظم کو سبھی معاملوں میں ضمانت مل چکی ہے۔ وادی آکاش سکسینہ کا بیان ضلع عدالت کی اسپیشل کورٹ میں درج ہونے کے بعد ہ جیل سے باہر آسکتے ہیں۔ آکاش سکسینہ بی جے پی کے لیڈر ہیں۔ انہوں نے عبداللہ اعظم پر دو پاسپورٹ معاملے میں تحریر دی تھی۔

      واضح رہے کہ گزشتہ بار دو پین کارڈ معاملے میں اعظم خان اور عبداللہ اعظم کو عدالت سے ضمانت مل چکی ہے۔ اعظم خان اور ان کے بیٹے عبداللہ اعظم کئی معاملوں میں ملزم ہیں اور سیتا پور جیل میں بند ہیں۔ اعظم خان سماجوادی پارٹی کے بڑے لیڈر ہیں اور اترپردیش کے رامپور سے رکن پارلیمنٹ ہیں۔ اس سے قبل وہ رامپور سے رکن اسمبلی بھی رہ چکے ہیں۔

      اس معاملے میں ضمانت ملنے کے بعد اب عبداللہ اعظم کو سبھی معاملوں میں ضمانت مل چکی ہے۔
      اس معاملے میں ضمانت ملنے کے بعد اب عبداللہ اعظم کو سبھی معاملوں میں ضمانت مل چکی ہے۔


      اعظم خان سماجوادی پارٹی کی حکومت میں اہم وزارت پر فائز رہے ہیں۔ اعظم خان ملائم سنگھ یادو اور اکھلیش یادو دونوں کے کافی قریبی لیڈر مانے جاتے ہیں۔ واضح رہے کہ اعظم خان پر زمین ہتھیانے، ایکوائر کرنے اور دیگر کئی سنگین مجرمانہ معاملے درج ہیں۔ اعظم خان اپنے بیٹے کے ساتھ فروری 2020 سے ہی ضلع جیل سیتا پور میں بند ہیں۔ ان کی اہلیہ کو دسمبر 2020 میں عدالت نے ضمانت دے دی تھی۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: