உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بی جے پی ممبر پارلیمنٹ اور سابق مرکزی وزیر بابل سپریو نے سیاست سے ریٹائرمنٹ کا کیا اعلان، کہا : میں جارہا ہوں

    میں جارہا ہوں... ، بی جے پی لیڈر بابل سپریو نے سیاست سے ریٹائرمنٹ کا کیا اعلان

    سابق کابینی وزیر بابل سپریو (Babul Supriyo) نے اپنے استعفی کا اعلان سوشل میڈیا پر ایک کویتا کے ذریعہ کیا ۔ انہوں نے لکھا کہ اگر سماجی کام کرنا ہے تو وہ سیاست کے بغیر بھی ہوسکتا ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : بابل سپریو نے سیاست سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا ہے ۔ سپریو نے سوشل میڈیا کے ذریعہ ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا ۔ حالانکہ انہوں نے یہ واضح کیا کہ بی جے پی ہی ان کی پارٹی ہے ۔ بتادیں کہ وہ آسنسول سے بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ ہیں ۔ حال ہی میں وزیر اعظم مودی کی کابینہ میں ہوئے رد وبدل میں انہیں ہٹا دیا گیا تھا ۔

      انہوں نے سوشل میڈیا پر لکھا : سب کی باتیں سنی ، باپ ، ( ماں ) ، بیوی ، بیٹی ، دو پیارے دوستوں میں کسی اور پارٹی میں نہیں جارہا ۔ انہوں نے لکھا کہ مجھے کسی بھی پارٹی کی طرف سے فون نہیں آیا ہے ۔ میں ایک ٹیم کا کھلاڑی ہوں! ہمیشہ ایک ٹیم کی حمایت کی ہے ۔


      انہوں نے اپنے استعفی کا اعلان سوشل میڈیا پر ایک کویتا کے ذریعہ کیا ۔ انہوں نے لکھا کہ اگر سماجی کام کرنا ہے تو وہ سیاست کے بغیر بھی ہوسکتا ہے ۔

      بابل سپریو نے اپنے استعفی میں وزیر داخلہ امت شاہ اور بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ دونوں ہی لوگواں نے کئی معنوں میں مجھے انسپائر کیا ہے ۔ میں ان کے پیار کو کبھی نہیں بھولوں گا ۔ انہوں نے کہا کہ میں دعا کرتا ہوں کہ وہ مجھے غلط نہیں سمجھیں گے اور مجھے معاف کردیں گے ۔

      انہوں نے کہا کہ 2014 اور 2019 کے درمیان بہت بڑا فرق آچکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 2014 میں میں بی جے پی کے ٹکٹ سے اکیلا لڑا تھا ، لیکن بنگال میں آج بی جے پی اہم اپوزیشن پارٹی ہے ۔ آج پارٹی میں نئے چمکدار نوجوان لیڈران آچکے ہیں ۔ پارٹی میں اتنے ہی نوجوان لیڈران ہیں جتنے پرانے ہیں ۔ کہنے کی ضرورت نہیں کہ نوجوان لیڈران کی پارٹی ایک طویل سفر طے کرتی ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: