உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ’مضبوط سماجی-اقتصادی ترقی کے لئے Bangladesh ایک مضبوط تحریک بن کر ابھرا‘- خارجہ سکریٹری ہرش وردھن شرنگلا

    خارجہ سکریٹری شرنگلا نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے اپنے اندرون ملک آبی گزرگاہوں کے ذریعے رابطے بڑھانے میں قابل ذکر پیش رفت کی ہے۔ شرنگلا نے کہا کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے COVID-19 عالمی وبائی مرض کے دوران قریبی تعاون کیا اور وبائی امراض کی مختلف لہروں کے دوران ضروری ادویات کی فراہمی کے ذریعے ایک دوسرے کی مدد کی۔

    خارجہ سکریٹری شرنگلا نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے اپنے اندرون ملک آبی گزرگاہوں کے ذریعے رابطے بڑھانے میں قابل ذکر پیش رفت کی ہے۔ شرنگلا نے کہا کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے COVID-19 عالمی وبائی مرض کے دوران قریبی تعاون کیا اور وبائی امراض کی مختلف لہروں کے دوران ضروری ادویات کی فراہمی کے ذریعے ایک دوسرے کی مدد کی۔

    خارجہ سکریٹری شرنگلا نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے اپنے اندرون ملک آبی گزرگاہوں کے ذریعے رابطے بڑھانے میں قابل ذکر پیش رفت کی ہے۔ شرنگلا نے کہا کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے COVID-19 عالمی وبائی مرض کے دوران قریبی تعاون کیا اور وبائی امراض کی مختلف لہروں کے دوران ضروری ادویات کی فراہمی کے ذریعے ایک دوسرے کی مدد کی۔

    • Share this:
      نئی دہلی:خارجہ سکریٹری ہرش وردھن شرنگلا(Foreign Secretary Harsh Vardhan Shringla) نے پیر کو کہا کہ بنگلہ دیش(Bangladesh) مضبوط سماجی و اقتصادی ترقی کے لیے ایک تحریک کے طور پر ابھرا ہے اور اس کی ترقی صرف اس کے لوگوں کے لیے نہیں، بلکہ پورے خطے کے لیے یکساں طور پر فائدہ مند ہے۔ خارجہ سکریٹری شرنگلا نے ’انڈیا فاؤنڈیشن‘ کے زیر اہتمام 10ویں ہندوستان-بنگلہ دیش دوستی ڈائیلاگ میں بنگلہ دیش کے وزیر مملکت برائے امور خارجہ شہریار عالم سمیت بنگلہ دیشی وفد کے ساتھ بات چیت کے دوران کہا کہ ہندوستان-بنگلہ دیش سرحد کا موثر انتظام، اقتصادی تعلقات اور لوگوں کے درمیان آپسی رابطے(mutual contact) کو فروغ دینا ضروری ہے۔

      انہوں نے کہا کہ ہمیں سرحدی انفراسٹرکچر کو مضبوط بنانے کے لیے مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے تاکہ لوگوں اور سامان کی آسانی سے نقل و حرکت کو یقینی بنایا جا سکے۔ ساتھ ہی، ہمیں یہ بھی یقینی بنانا ہوگا کہ غیر قانونی سرگرمیوں پر قابو پایا جائے۔ سکریٹری خارجہ شرنگلا نے کہا کہ گزشتہ سال درحقیقت دونوں ممالک کے تعلقات کی تاریخ میں ایک سنگ میل تھا۔ انہوں نے کہا کہ صدر رام ناتھ کووند اور وزیر اعظم نریندر مودی نے 2021 میں بنگلہ دیش کا دورہ کیا تھا تاکہ وجئے دیوس، بنگلہ دیش کی آزادی کی تاریخی سالگرہ اور بنگ بندھو شیخ مجیب الرحمن کی صد سالہ پیدائش کی ’تروینی‘ منایا جا سکے۔

      انہوں نے کہا کہ جب بنگلہ دیش اپنی آزادی کے 50 سال منا رہا ہے، مجھے یہ بتاتے ہوئے خوشی ہو رہی ہے کہ اس کی ترقی نے اس کے مخالفین کو غلط ثابت کر دیا ہے۔ بنگلہ دیش مضبوط سماجی و اقتصادی ترقی کے لیے ایک تحریک بن کر ابھرا ہے۔ سیکرٹری خارجہ نے کہا کہ بنگلہ دیش کی ترقی نہ صرف بنگلہ دیش کے عوام کے مفاد میں ہے بلکہ یہ خطے اور اس سے باہر کے لیے بھی یکساں فائدہ مند ہے۔ شرنگلا نے کہا کہ ماضی قریب میں دونوں طرف تجارت میں اضافہ ہوا ہے اور بنگلہ دیش سے برآمدات پہلی بار اس سال 2 بلین ڈالر سے تجاوز کرنے کا امکان ہے۔ انہوں نے کہا کہ جامع اقتصادی تعاون کے معاہدے کے ابتدائی نتائج تجارت کی رفتار بڑھانے کے لیے اہم ہیں۔

      ’کنیکٹیویٹی پر دھیان دئیے جانے کی ضرورت‘
      انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ کنیکٹیویٹی پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ خارجہ سکریٹری شرنگلا نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے اپنے اندرون ملک آبی گزرگاہوں کے ذریعے رابطے بڑھانے میں قابل ذکر پیش رفت کی ہے۔ شرنگلا نے کہا کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش نے COVID-19 عالمی وبائی مرض کے دوران قریبی تعاون کیا اور وبائی امراض کی مختلف لہروں کے دوران ضروری ادویات کی فراہمی کے ذریعے ایک دوسرے کی مدد کی۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کثیر شعبہ جاتی تکنیکی اور اقتصادی تعاون کے لئے خلیج بنگال انیشیٹو فریم ورک کے تحت علاقائی تعاون کی رفتار کو تیز کرنے کے لئے پرعزم ہے۔ اس درمیان، امور خارجہ کی وزیر مملکت میناکشی لیکھی نے عالم سے بات چیت کی اور تعلقات کو مضبوط بنانے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: