تقسیم ہند کے باوجود قاضی نذرالاسلام اور رابندر ناتھ ٹیگور کی وراثت تقسیم نہیں ہوسکی: شیخ حسینہ

بنگلہ دیش کی وزیرا عظم شیخ حسینہ نے آج بنگلہ دیش کی آزادی میں ہندوستان کی حمایت و تعاون پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان نے ایک ایسے وقت میں بنگلہ دیش کے ساتھ تعاون و ہمدری کا معاملہ کیا جب بنگلہ دیش بحرانی دور سے گزررہا تھا۔

May 26, 2018 11:01 PM IST | Updated on: May 26, 2018 11:01 PM IST
تقسیم ہند کے باوجود قاضی نذرالاسلام اور رابندر ناتھ ٹیگور کی وراثت تقسیم نہیں ہوسکی: شیخ حسینہ

بنگلہ دیش کی وزیراعظم شیخ حسینہ : فائل فوٹو۔

بنگلہ دیش کی وزیرا عظم شیخ حسینہ نے آج بنگلہ دیش کی آزادی میں ہندوستان کی حمایت و تعاون پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان نے ایک ایسے وقت میں بنگلہ دیش کے ساتھ تعاون و ہمدری کا معاملہ کیا جب بنگلہ دیش بحرانی دور سے گزررہا تھا۔مغربی بردوان کے آسنسول میں قاضی نذرالاسلام یونیورسٹی میں کے ذریعہ ڈاکٹر آف لٹریچر (ڈی لیٹ )کے ڈگری سے نوازے جانے پر شیخ حسینہ نے ہندوستانی حکومت اور ہندوستانی عوام کا گرمجوشی اور والہانہ استقبال کرنے پر شکریہ ادا کیا ۔قاضی نذرالاسلام یونیورسٹی انتظامیہ نے سالانہ تقسیم اسناد میں شیخ حسینہ کو قاضی نذرالاسلام کے آئیڈیا اور نظریات کے مطابق سماج و معاشرہ اور ملک کی تعمیر میں اہم کردار ادا کرنے پر شیخ حسینہ کو اعزاز سے نوازا ہے۔

شیخ حسینہ کل ہندوستان کے دو روزہ دورے پر یہاں آئی تھی ۔قاضی نذرالاسلام یونیورسٹی کے وائس چانسلر سادھن چکرورتی نے شیخ حسینہ کو اعزازی ڈگری سپرد کیا اس موقع پر ریاستی وزیر تعلیم پارتھو چٹرجی بھی موجود تھے۔

اس تقریب میں یونیورسٹی کے چانسلر گورنر کیسری ناتھ ترپاٹھی موجود نہیں تھے ۔یونیورسٹی کے وائس چانسلر نے کہا کہ شیخ حسینہ نے بنگلہ دیش میں جمہوریت کو فروغ ، خواتین کے امپاورمنٹ اور سماجی و معاشی ترقی میں اہم کردار ادا کیا ہے اور قاضی نذراسلام کے کے نظریات و افکار کے مطابق وہ بنگلہ دیش کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا ہے۔

Loading...

Loading...