உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    راجستھان انتخابات میں آیا پاکستان سے فتویٰ، کسے دینا ہے ووٹ

    وائرل ہو رہے آڈیو میں مسلم ووٹرس سے 7 دسمبر کو ہونے والے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کے لئے ووٹ دینے کی اپیل کی گئی ہے

    وائرل ہو رہے آڈیو میں مسلم ووٹرس سے 7 دسمبر کو ہونے والے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کے لئے ووٹ دینے کی اپیل کی گئی ہے

    وائرل ہو رہے آڈیو میں مسلم ووٹرس سے 7 دسمبر کو ہونے والے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کے لئے ووٹ دینے کی اپیل کی گئی ہے

    • Share this:
      راجستھان میں اسمبلی انتخابات مہم زوروں پر ہے، لیکن اس بیچ یہاں کے انتخابات میں پاکستان کنیشکن بھی سامنے آئے ہیں۔ راجستھان کے انتخابات میں ان دنوں مغربی راجستھان خاص طور پر بین الاقوامی سرحدی علاقوں میں پاکستان کے ایک پیر کا آڈیو وائرل ہو رہا ہے۔ اس آڈیو کے ذریعہ یہ پیر مسلم ووٹرس کو 7 دسمبر کو ہونے والے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کے لئے ووٹ دینے کی اپیل کر رہے ہیں۔

      باڑمیر میں وائرل ہو رہے 24 منٹ کے اس آڈیو میں مبینہ طور پر پاکستانی مذہبی رہنما تاج حسین شاہ جیلانی کے پیروکار پیر علی حسین شاہ جیلانی بی جے پی کو حمایت دینے کی بات کہہ رہے ہیں۔ آڈیو کے مطابق جیلانی نے اپنے پیروکاروں سے شیو سیٹ سے کانگریس کے امیدوار امین خان کے خلاف ووٹ کرنے کی اپیل کی ہے۔ اس آڈیو میں جیلانی کو یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ کچھ لوگ یہ افواہ پھیلا رہے ہیں کہ بی جے پی نے مسلم برادری سے کنارہ کشی اختیار کر لی ہے۔

      وہ کہتے ہیں کہ ’وہ بی جے پی حکومت ہی تھی جس نے پاکستان کو سانگرا کے رہنے والے پیر سید تاج حسین شاہ جیلانی کو فروری 2015 میں جےپور  میں پیروکاروں سے ملنے میں مدد کی تھی۔ آڈیو میں مبینہ پیر اپنے پیروکاروں سے بول رہا ہے کہ بی جے پی کو ووٹ نہیں دیں گے تو وہ ان سے رشتہ ختم کر دےگا‘۔

      اس آڈیو کے وائرل ہونے کے بعد انتظامیہ اور پولیس نے احتیاط برتنا شروع کر دیا ہے۔ وہیں آڈیو متعدد واٹس ایپ گروپ پروائرل ہو رہا ہے۔ فی الحال اس بارے میں ابھی تک پولیس کی جانب سے کوئی ردعمل نہیں آیا ہے۔ باڑمیر ضلع کلیکٹر کا کہنا ہے کہ اس طریقہ کی آڈیو کے بارے میں میڈیا کے ذریعہ ہمیں پتہ چلا ہے اور پورے آڈیو کی پولیس تحقیقات کر رہی ہے۔
      First published: