بڑی خبر:8 گھنٹے سے زائد وقفے تک کام کرنے والے سرکاری ملازمین کو اضافی معاوضہ دینے کا ممتا بنرجی کا اعلان

شمالی 24پرگنہ ضلع کے بشیر ہاٹ میں انتظامیہ کے ساتھ میٹنگ میں وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے اس کا اعلان کیا ہے۔

Nov 13, 2019 05:42 PM IST | Updated on: Nov 13, 2019 05:43 PM IST
بڑی خبر:8 گھنٹے سے زائد وقفے تک کام کرنے والے سرکاری ملازمین کو اضافی معاوضہ دینے کا ممتا بنرجی کا اعلان

وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی: فائل فوٹو

کلکتہ۔ ’’بلبل‘‘ طوفان متاثر ین تک راحت رسانی کو اپنی ترجیح بتاتے ہوئے وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے راحت رسانی مہم میں 8گھنٹے سے زائد وقفے تک کام کرنے والے سرکاری ملازمین کو اضافی معاوضہ دینے کا اعلان کیا ہے۔ شمالی 24پرگنہ ضلع کے بشیر ہاٹ میں انتظامیہ کے ساتھ میٹنگ میں وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے اس کا اعلان کیا ہے۔ وزیرا علیٰ نے میٹنگ کے بعد”بلبل“ طوفان سے متاثرہ علاقہ کا بھی دورہ کیا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ طوفان سے متاثر علاقے میں راحت بچاؤ میں مشغول سرکاری افسران 8گھنٹے سے زائد وقفے 12گھنٹے تک کام کررہے ہیں۔ حکومت ایسے ملازمین کو اضافی معاوضہ دے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم طوفان کی زد میں آئے لوگوں کے ساتھ ہیں۔

بشیر ہا ٹ کے علاقے میں بلبل طوفان سے پانچ افراد کی موت ہوگئی ہے۔ مہلوکین کے اہل خانہ کو2لاکھ روپئے بطور مدد دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ کلکتہ میں بیٹھ کر طوفان کی بربادی کا اندازہ نہیں لگایا جاسکتا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ریاست میں مجموعی طور پر ایک لاکھ ایکڑ زمین تباہ ہوگئی ہے۔ ایک ملین مکانات اور عمارتیں منہدم ہوئی ہیں۔ جلد سے جلد ان مکانات کی دوبارہ تعمیر کی کوشش کی جائے گی۔ کھیتوں میں جمع پانی نکالنے میں ریاستی حکومت کسانوں کی مدد کرے گی۔

موبائل ہیلتھ ٹیم کو وزیر اعلیٰ نے گاؤں کا دورہ کرنے کی ہدایت دی ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ایک لاکھ 8 ہزار افراد کو راحت کیمپ میں رکھا گیا ہے جو اپنے آپ میں بڑا کام ہے۔ انہیں گھر منتقل کرنے کیلئے تیزی سے کام ہو رہے ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے بلبل طوفان پر سیاست نہیں کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ وقت سیاست سے زیادہ متاثرین کی مدد کرنے اور ان تک ریلیف پہنچانے کا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے لوگوں سے اپیل کی کہ جن لوگوں کے مکانات منہدم ہو گئے ہیں انہیں اپنے گھروں میں پناہ دیں اور ان کی مدد کریں۔

Loading...

Loading...