ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Nasal Vaccine For COVID-19:بھارت بائیوٹیک کابڑااعلان، نیسل ویکسین کےلیےفیز1ٹرائل جاری

بھارت بائیوٹیک (Bharat Biotech) کے ایم ڈی ڈاکٹر کرشنا ایلا (Dr Krishna Ella) نے کہا ’’نیسل ویکسینیں جاری ہیں۔ ہمارا فیز 1 ٹرائل چل رہا ہے۔ 8 مئی آخری تاریخ ہے۔ ہم (بھارت بائیوٹیک) ناک کی ویکسین لے کر آنے والے ہیں۔ جو کہ دنیا میں پہلی بار ہوگا۔

  • Share this:
Nasal Vaccine For COVID-19:بھارت بائیوٹیک کابڑااعلان، نیسل ویکسین کےلیےفیز1ٹرائل جاری
علامتی تصویر

بھارت بائیوٹیک (Bharat Biotech) کے ایم ڈی ڈاکٹر کرشنا ایلا (Dr Krishna Ella) نے  ایک نیوزچینل سے خاص بات کی جس میں کورونا کی نیسل ویکسین nasal vaccine (ناک کے ذریعہ دی جانے والی ویکسین) کے امکانات پر تفصیلی بات چیت کی گئی۔انھوں نے کہا ہے کہ ’’انجیکشن والی ویکسین نچلے پھیپھڑوں، اوپری پھیپھڑوں اور ناک کی حفاظت نہیں کرتی ہیں۔ ٹیکے لگائے گئے لوگوں کو انفیکشن لگ سکتا ہے۔ لیکن یہ نیسل ویکسین آپ کو اسپتال میں داخل ہونے سے بچائے گی۔ آپ کو دو تین دن بخار لگ سکتا ہے۔ لیکن اموات میں کمی ہوگی‘‘۔’’نیسل ویکسینیں جاری ہیں۔ ہمارا فیز 1 ٹرائل چل رہا ہے۔ 8 مئی آخری تاریخ ہے۔ ہم (بھارت بائیوٹیک) ناک کی ویکسین لے کر آنے والے ہیں۔ جو کہ دنیا میں پہلی بار ہوگا۔


علامتی تصویر
علامتی تصویر


ہم ناک کے اعداد و شمار کا انتظار کر رہے ہیں۔ ڈاکٹر کرشنا ایلا نے مزید کہا ’’ اگر ٹیکہ لگانے والے ریگولیٹرز مدد کرتے ہیں تو ہم سب سے پہلے ہوں گے حالانکہ ہمارا مقابلہ امریکہ اور چین سے ہے‘‘۔ناک کی ویکسین کے کام کے بارے میں انھوں نے کہا ’’اگر آپ ناک کی ویکسین کی ایک خوراک لیں تو آپ انفیکشن کو روک سکتے ہیں اور اس طرح ٹرانسمیشن چین کو روک سکتے ہیں‘‘۔’’یہ پولیو کی طرح صرف 4 قطرے ہے۔ ان میں سے قطرے ناک میں اور دو دوسری جگہ۔ اب عالمی ادارہ صحت جیسے عالمی ادارے دوسری نسل کے ویکسین کی حیثیت سے ناک کے بارے میں قائل ہو رہے ہیں۔ انجیکشن ویکسین ٹرانسمیشن بند نہیں کرتی ہیں۔ ہم عالمی سطح پر نیسل ویکسینوں پر پہل کر سکتے ہیں‘‘۔


 ویکسی نیشن پروگرام کی فائل فوٹو
ویکسی نیشن پروگرام کی فائل فوٹو


مرکزی وزیر صحت ڈاکٹر ہرش وردھن نے وضاحت کی کہ مقامی طور پر تیار کی جانے والی کوویکیسن N501Y Variant (برطانیہ کی مختلف حالت) اور حالیہ ڈبل میوٹیشن (ہندوستانی قسم) جیسی نئی قسموں کے خلاف کام کرنے کا زیادہ امکان ہے۔ اس میں شامل ہونے والے شرکاء کی عمریں 18تا 98 سال کے درمیان کے 2,433 افراد ہیں۔ جن میں 60 سال سے زیادہ کی عمرکے 4,500 افراد ہیں۔

مزید یہ کہ مرکز نے اب اپنے کوویکسین پروڈکشن کو بڑھاوا دینے کے لئے 1567.50 کروڑ روپئے کی منظوری دے دی ہے ، اس کے علاوہ اپنے نئے بنگلورو پلانٹ میں پیداواری صلاحیت بڑھانے کے لئے 65 کروڑ روپے کی گرانٹ کے علاوہ جولائی تک ماہانہ 6-7 کروڑ ویکسین کی خوراک پیدا کی جائے گی۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 25, 2021 10:35 AM IST