உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لوک سبھا انتخابات 2024 کی تیاریوں میں بی جے پی مصروف، بوتھ سطح کے کارکنان کو مضبوط کرنے کی پالیسی

    لوک سبھا انتخابات 2024 کی تیاریوں میں بی جے پی ابھی سے مصروف ہوگئی ہے۔

    لوک سبھا انتخابات 2024 کی تیاریوں میں بی جے پی ابھی سے مصروف ہوگئی ہے۔

    لوک سبھا الیکشن میں ابھی دو سال سے بھی زیادہ کا وقت ہے اور بی جے پی ابھی سے 2024 کی تیاری میں مصروف ہوگئی ہے۔ اس کے لئے بی جے پی بوتھ سطح تک تیاری کر رہی ہے۔ سال 2014 اور 2019 کے ووٹنگ پیٹرن کی بنیاد پر بی جے پی نے ملک بھر میں 73000 کمزور بوتھ کی نشاندہی کی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: لوک سبھا الیکشن (Lok Sabha Election) میں ابھی دو سال سے بھی زیادہ کا وقت ہے اور بی جے پی (BJP) ابھی سے 2024 کی تیاری میں مصروف ہوگئی ہے۔ اس کے لئے بی جے پی بوتھ سطح تک تیاری کر رہی ہے۔ سال 2014 اور 2019 کے ووٹنگ پیٹرن کی بنیاد پر بی جے پی نے ملک بھر میں 73000 کمزور بوتھ کی نشاندہی کی ہے۔ یہ کوشش ہے کہ سال 2024 کے لوک سبھا الیکشن سے پہلے پارٹی کا ہدف ان سبھی بوتھوں پر مضبوط کارکنان کو مقرر کرنے کا ہے اور اس کے لئے ان سبھی مقامات پر پارٹی کا دبدبہ کیسے مضبوط ہوسکے، اس کے لئے قواعد شروع کردی ہے۔ بی جے پی صدر جے پی نڈا اور پارٹی کی اعلیٰ قیادت نے اس کے لئے چار رکنی کمیٹی کی تشکیل کی ہے۔

      اس ٹیم کی قیادت بی جے پی میں وجینت جے پانڈا کو سونپی گئی ہے۔ پانڈا کے ساتھ ساتھ اس ٹیم میں کرناٹک سے رکن اسمبلی اور بی جے پی کے مہامنتری سی ٹی روی، لال سنگھ آریہ اور مغربی بنگال کے سابق صدر اور پارٹی کے موجودہ نائب صدر دلیپ گھوش شامل ہیں۔ اس ٹیم کو پورے ملک کے پارٹی کارکنان اور لیڈران سے پارٹی کے لحاظ سے کمزور بوتھ کی تعداد اور پارٹی کی کمزور کارکردگی کی وجہ جاننے کے لئے کہا گیا تھا۔ ابھی اس ٹیم نے پورے ملک کے 73000 بوتھ کی پہچان کی ہے، جہان بی جے پی کافی کمزور پوزیشن میں ہے۔ اس میں سے زیادہ تر جنوبی ہندوستان کی ریاستیں ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      سپریم کورٹ میں بنے گی تاریخ، اسی سال 3 ماہ کے وقفے میں ملک کو ملیں گے 3 چیف جسٹس

      جانکار ذرائع کے مطابق، کرناٹک میں پارٹی اہم پارٹی کے طور پر ہے اور وہاں کچھ بوتھ کو چھوڑ کر پارٹی کی پوزیشن ٹھیک ہے۔ اس ٹیم نے ایک ڈرافٹ تیار کیا ہے۔ اسے حتمی شکل دے کر جل ہی پارٹی صدر کو سونپ دیا جائے گا۔ اس کے بعد ان بوتھ پر پارٹی اپنا کام شروع کرے گی۔ ڈرافت کے مطابق، تلنگانہ میں ابھی تک بی جے پی کا وجود نہیں تھا، لیکن موجودہ صورتحال میں وہاں تھوڑی محنت کرکے پارٹی، بوتھ سطح پر مضبوط ہوسکتی ہے اور موجودہ ٹی آر ایس حکومت کے متبادل کے طور پر سامنے آسکتی ہے۔

      اس کے ساتھ تمل ناڈو میں ڈی ایم کے حکومت کے خلاف بی جے پی سرگرم ہے۔ اس کے کارکنان دھیرے دھیرے بوتھ سطح پر مضبوط ہو رہے ہیں۔ وہیں، کیرل کی ڈیمو گرافی کے حق میں نہیں ہے۔ ڈرافٹ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ ایک سال میں بی جے پی کے 25 کارکنان کا سیاسی قتل ہوا ہے۔ نئی ٹیم ملک میں بی جے پی کی تنظیم اور سبھی 73000 کمزور بوتھوں پر اپنی رپورٹ تیار کر رہی ہے۔ اس میں غوروخوض ہوگا کہ کیسے پارٹی کو مضبوط کیا جاسکتا ہے۔ رپورٹ میں کئی موضوع پر واضح رائے بھی رکھی جائے گی۔ اس ڈرافٹ کو پارٹی اعلیٰ کمان کو سونپا جائے گا۔ اس کے بعد پارٹی لیڈر پالیسی کے مطابق، منصوبہ بناکر پارٹی تنظیم کے لئے کام کریں گے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: