اپنا ضلع منتخب کریں۔

    سی اوپی-27 مصر میں آج سے شروع، وزیرماحولیات بھوپیندر یادو کریں گے ہندوستانی وفد کی قیادت

    سی اوپی-27 مصر میں آج سے شروع، وزیرماحولیات بھوپیندر یادو کریں گے ہندوستانی وفد کی قیادت

    سی اوپی-27 مصر میں آج سے شروع، وزیرماحولیات بھوپیندر یادو کریں گے ہندوستانی وفد کی قیادت

    سی او پی میں کچھ ترقی یافتہ ممالک بھی ترقی پذیرممالک میں ماحولیاتی کارروائی کے لیے ہر سال 100 ارب امریکی ڈالر کے مدعے کو مضبوطی سے اٹھانے میں ہندوستان کا ساتھ دیں گے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • New Delhi, India
    • Share this:
      بین الاقوامی ماحولیاتی کانفرنس (سی او پی 27) کا 27واں سیشن آج اتوار سے شروع ہورہا ہے۔ مصر کے شرم الشیخ میں 6 سے 8 نومبر تک منعقد ہونے والے کانفرنس میں حصہ لینے کے لیے مرکزی وزیر بھوپیندر یادو پہنچ چکے ہیں۔ وہ ہندوستانی وفد کی قیادت کریں گے۔

      مرکزی وزیر ماحولیات بھوپیندر یادو نے کہا کہ ماحولیاتی تبدیلی (کلائمٹ چینج) کے خطرے سے مشترہک طور سے کس طرح سے نمٹا جائے اس کے لیے دنیا جمع ہوئی ہے۔ سی او پی 27 کو ’سی او پی آف ایکشن‘ ہونا چاہیے، جس میں موسمیاتی مالیات پر غور کرتے ہوئے، نقصان کے نتائج پر خصوصی توجہ دی جانی چاہئے۔

      ہندوستان نے جمعہ کو کہا کہ ترقی پذیر ملکوں کو ہر سال 100 ارب ڈالر موسمیاتی مالیات دینے کا وعدہ ترقی یافتہ ممالک پورا نہیں کر پا رہے ہیں۔ سی او پی میں کچھ ترقی یافتہ ممالک بھی ترقی پذیرممالک میں ماحولیاتی کارروائی کے لیے ہر سال 100 ارب امریکی ڈالر کے مدعے کو مضبوطی سے اٹھانے میں ہندوستان کا ساتھ دیں گے۔

      ہندوستان نے نئے ماحولیاتی اہداف کو حاصل کرنے کے لئے مناسب وسائل کی اپیل کی ہے۔ 6 سے 8 نومبر تک مصر کے شرم الشیخ میں ہونے والے مشترکہ قومی فریم ورک کنونشن (یو این ایف سی سی سی ) میں پارٹیوں کے کانفرنس (سی او پی) کے 27ویں سیشن میں مرکزی ماحولیات، جنگلات اور ماحولیاتی تبدیلی کے وزیر بھوپیندر یادو ہندوستانی وفد کی نمائندگی کریں گے۔ مالیات سے متعلق عبوری کمیٹی مختلف معاملات پر ایک رپورٹ پیش کرے گی۔ امید ہے کہ عام اتفاق پر پہنچنے کے لیے اس پر اچھی بحث ہوگی۔

      یہ بھی پڑھیں:
      ’جامعہ ملیہ اسلامیہ کے ہاسٹلس کو دوبارہ کھولا جائے‘ سیکڑوں طلبہ نے کیا جم کر مظاہرہ

      یہ بھی پڑھیں:
      جنوبی کشمیر کے پاناڈ پہاڑی علاقے میں گجر لڑکے طفیل نے IIT پاس کرکے علاقے میں قائم کی مثال

      اس اصطلاح کی تشریح کنونشن اور اس کے پیرس معاہدے کے لیے موسمیاتی مالیات سے متعلق ممالک کے وعدوں کے مطابق ہونی چاہیے۔ وزارت نے کہا کہ 2020 تک اور اس کے بعد 2025 تک سالانہ 100 بلین امریکی ڈالر کا کلائمیٹ فائنانس کا ہدف حاصل کرنا باقی ہے۔ عام فہم کی کمی کی وجہ سے، موسمیاتی مالیات کی شکل میں کیا ہوا ہے اس کے بہت سے تخمینے ہیں۔ جبکہ وعدہ کی گئی رقم کو جلد از جلد پورا کیا جائے۔ اب نئے مقداری ہدف کے تحت وسائل کے مناسب بہاؤ کو یقینی بنانے اور 2024 کے بعد خاطر خواہ اضافہ کرنے کی ضرورت ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: