ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش: اسپتال میں مریض کو رسی سے باندھنے کا معاملہ، شیو راج سنگھ چوہان نے دیا کارروائی کا حکم

مدھیہ پردیش کے شاجاپور کے ایک پرائیویٹ اسپتال میں مریض کے ذریعہ علاج کے پیسے ادا نہیں کئے جانے پر مریض کو پلنگ پر رسی سے باندھنے کے معاملے میں ریاستی انسانی حقوق کمیشن نے ضلع انتظامیہ کو نوٹس جاری کرتے ہوئے دو ہفتے میں رپورٹ طلب کی ہے۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش: اسپتال میں مریض کو رسی سے باندھنے کا معاملہ، شیو راج سنگھ چوہان نے دیا کارروائی کا حکم
مدھیہ پردیش: اسپتال میں مریض کو رسی سے باندھنے کا معاملہ، شیو راج سنگھ چوہان نے دیا کارروائی کا حکم

بھوپال: مدھیہ پردیش کے شاجاپور کے ایک پرائیویٹ اسپتال میں مریض کے ذریعہ علاج کے پیسے ادا نہیں کئے جانے پر مریض کو پلنگ پر رسی سے باندھنے کے معاملے میں ریاستی انسانی حقوق کمیشن نے ضلع انتظامیہ کو نوٹس جاری کرتے ہوئے دو ہفتے میں رپورٹ طلب کی ہے۔ واضح رہے کہ مدھیہ پردیش کے شاجا پور کے سٹی اسپتال میں لکشمی نارائن دانگی نامی بزرگ علاج کے لئے داخل ہوا تھا۔ لکشمی نارائن دانگی کا تعلق مدھیہ پردیش کے راج گڑھ ضلع کے رانارا گاؤں سے ہے۔ 80 سالہ لکشمی نارائن کا علاج پہلے مقامی اسپتال میں کرایا گیا، لیکن جب وہاں لکشمی نارائن کے پیٹ کا درد بند نہیں ہوا تو اسپتال کے ڈاکٹروں نے انہیں اندوریا اجین لے آنے کو کہا۔


لکشمی نارائن کی بیٹی کے پاس والد کے علاج کے لئے زیادہ پیسے نہیں تھے اس لئے وہ اپنے والد کو لے کر سٹی اسپتال آئی اور یہاں پر اس کا علاج شروع کیا گیا۔ لکشمی نارائن کی بیٹی شیلا دانگی کا کہنا ہے کہ اسپتال انتظامیہ نے اس سے علاج کے نام پر پہلے 6000 روپئے اور پھر 5000 روپئے جمع کروایا اور جب اس نے پیسے نہ ہونے کی وجہ سے اپنے والد کو لے جانے کی بات کہی، تو اسپتال انتظامیہ نے انہیں رسیوں سے پلنگ پر باندھ دیا۔ دوسری جانب اسپتال انتظامیہ رسیوں سے باندھنے کی بات کو پہلے تو بے بنیاد بتاتا رہا، لیکن جب سوشل میڈیا پر اس کا ویڈیو وائرل ہوا تو وزیراعلیٰ شیو راج سنگھ نے اسے سنجیدگی سے لیتے ہوئے اس پر فوری کارروائی کا حکم دیا۔

وزیراعلیٰ شیو راج سنگھ نے اس شرمناک واقعہ پر فوری کارروائی کا حکم تو دیا، لیکن ضلع انتظامیہ نے کارروائی کرنے میں پورے پانچ دن لگا دیئے۔ ضلع انتظامیہ نے اسپتال پرکارروائی کرتے ہوئے اسپتال کو سیل کرنے کے ساتھ سٹی اسپتال کے لائسنس کو کینسل کردیا ہے۔ یہی نہیں اسپتال منیجر نتیش شرما کے خلاف ایف آئی آر درج کرتے ہوئے ضلع کلکٹر دنیش جین نے اسپتال کے مریضوں کودوسرے اسپتال میں بھی شفٹ کرنے کا حکم دیدیا ہے۔


وزیراعلیٰ شیو راج سنگھ نے اس شرمناک واقعہ پر فوری کارروائی کا حکم تو دیا، لیکن ضلع انتظامیہ نے کارروائی کرنے میں پورے پانچ دن لگا دیئے۔
وزیراعلیٰ شیو راج سنگھ نے اس شرمناک واقعہ پر فوری کارروائی کا حکم تو دیا، لیکن ضلع انتظامیہ نے کارروائی کرنے میں پورے پانچ دن لگا دیئے۔


شاجا پور سٹی اسپتال کی کارروائی میں تاخیر اور صوبہ میں جرائم میں ہوئے اضافہ کو لیکر کانگریس نے شیوراج سنگھ حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔مدھیہ پردیش کانگریس میڈیا کوآرڈینیٹر ابھے دوبا کا کہنا ہے کہ شیوراج سنگھ سرکار میں جرائم پیشہ افراد کھلے گھوم رہے ہیں ۔ جرائم پیشہ عناصر کے ساتھ وزرا فوٹو کھنچواتے ہیں اور سالگرہ مناتے ہیں ۔ جب لاک ڈاؤن نہیں تھا جنوری سے مارچ تک کے جرائم کنٹرول میں تھا لیکن ڈاؤن میں جرائم میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے جبکہ لاک ڈاؤن میں پولیس سڑکوں پر مستعدی سے کھڑی رہتی ہے ۔شاجا پور میں شرمناک واقعہ پیش آتاہے اور اس پر بھی سی ایم کے ٹوئیٹ کے بعد پانچ دن میں کاروائی ہونا اس سے بھی زیادہ شرمناک ہے۔
وہیں بی جے پی نے کانگریس کے الزام پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کانگریس کے الزام کو بے بنیاد بتایا ہے۔ ایم پی بی جے پی نائب صدر رامیشور شرما کہتے ہیں بی جے پی حکومت میں کاروائی ہوتی ہے یہ کانگریس بھی مانتی ہے، لیکن کانگریس کے شاسن میں تو کاروائی ہی نہیں ہوتی تھی۔ سب کچھ مینج کیا جاتا تھا۔ سرکار نییم قانون سے چلتی ہے۔ شاجا پور کے معاملے میں سی ایم کےآدیش پر تتکال کاروائی کرتے ہوئے اسپتال کو سیل کیاگیا ہے۔ بزرگ کا علاج کروایا جا رہا ہے۔ کانگریس کے پیروں سے زمین کھسک گئی ہے تو وہ بے بنیاد الزام لگا کر سرخیوں میں رہنا چاہتی ہے۔ شاجا پور معاملے میں سیاسی پارٹیوں کے دعوے تو اپنی جگہ ہیں، لیکن انسانی حقوق کمیشن نے سخت رخ اختیار کرتے ہوئے ضلع انتظٓامیہ سے نہ صرف تفصیلی رپورٹ دو ہفتے میں مانگی ہے بلکہ مریض لکشمی نارائن دانگی کو دوائیں دی گئی ہیں علاج کے نام پر ان کے نام اور قمیت کی تفصیل بھی طلب کی ہے۔
First published: Jun 11, 2020 12:00 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading